بانئ جامعہ القاسم نہیں رہے

186

*بانئ جامعہ القاسم نہیں رہے*
ریاست بہار کے معروف عالم دین،جامعہ القاسم مدھوبنی (سپول)کےبانی وناظم حضرت مولانا مفتی محفوظ الرحمان عثمانی اللہ کوپیارے ہوگئے،انا للہ وانا الیہ راجعون
مفتی صاحب مرحوم کاوصال ریاست بہار کے لئے بالخصوص بڑاخسارہ ہے۔موصوف کی پوری زندگی مدارس ومکاتب کی آبیاری وعلمی خدمات سے عبارت اورہرلحظہ وہرآن ایک عالمانہ آن وبان وشان سے مزین رہی ہے۔ذہنی وفکری معیار بہت بلند رہاہے۔اکابرین علماء کرام کے آپ بڑے قدردان اوربہترین میزبان رہے ہیں۔ریاست بہار کی زبوں حالی بالخصوص خطہ سیمانچل کی علمی پسماندگی کولیکرہمہ وقت فکرمند رہے ہیں، اندرون وبیرون ممالک کے مخیر حضرات وعلم دوست احباب کی توجہات کواس علاقہ کی جانب مبذول کراتے رہے ہیں،باری تعالی اس کابہترین اجر عطاکرے،آمین
مفتی صاحب مرحوم کواللہ نے سیاسی بصیرت بھی عطا کی تھی،ہم اہالیان سیمانچل کو مستقبل میں موصوف کی ذات سے بڑی امیدیں وابستہ تھیں، افسوس کہ وقت اجل آپہونچااور آپ سفر آخرت کوروانہ ہوگئے۔
اس موقع سے ہم دعا گوہیں کہ
رب لم یزل ولایزال مرحوم ومغفور کی جملہ خدمات کو شرف قبولیت سے نواز دے،مفتی صاحب کےحق میں انہیں صدقہ جاریہ بنادے،جملہ پسماندگان کو صبر جمیل عطا کرے اور ہمیں نعم البدل نصیب کرے، آمین
ہمایوں اقبال ندوی
جنرل سکریٹری، تنظیم ابنائے ندوۃ ریاست بہار، پورنیہ کمشنری
23/5/2021