عبدالستار صاحب کے انتقال پر مولانا نظر الہدی قاسمی کا اظہار تعزیت

100
مظفر پور ١٧/مئ (نوائے ملت)عبد الرحیم بڑھولیاوی
نوجوان عالم دین مولانا نظر الہدی قاسمی نے سعدپورہ، مظفرپور باشندہ عبدالستار کے انتقال پر گہرے رنج و غم کا اظہار کیا۔واضح رہے کہ گزشتہ 15 مئی کو عبدالستار صاحب کا مختصر علالت کے بعد انتقال ہو گیا۔ اتوار کو انہیں سپرد خاک کر دیا گیا۔ محمد عبدالستار ایل آئی سی میں انڈمنسٹریٹیو آفیسر تھے۔ انہیں اردو زبان و ادب سے گہرا لگاؤ تھا۔ ان کے کئی افسانے اور متعدد مضامین مختلف اخبارات و رسائل میں شائع ہوتے رہے۔ مولانا نظر الہدی قاسمی نے کہا کہ عبدالستار صاحب اردو کے خاموش خادم تھے۔ اردو کی ترویج و اشاعت کے لیے وہ ہمیشہ کوشاں رہتے تھے۔ انہوں نے کئی افسانے بھی لکھے لیکن ان کی کوئی تصنیف منظر عام پر نہیں آ سکی۔ اردو کے مختلف مسائل پر وہ تسلسل کے ساتھ لکھتے رہتے تھے۔ سوشل میڈیا پر بھی وہ ہمیشہ سرگرم رہے ۔ وہ بغیر کسی لاگ لپیٹ کی اپنی رائے پیش کرنے کے لیے مشہور تھے۔مولانا نظر الہدی قاسمی نے کہا کہ عبدالستار صاحب ذاتی طور پر بہت ہی مخلص اور ملنسار انسان تھے۔وہ جس سے ملتے تھے دل سے ملتے۔ کسی کی بات سے اتفاق نہیں ہوتا تو برملا اظہار کرنے سے بھی نہیں چوکتے۔محمد عبدالستار صاحب کے انتقال کو اپنا ذاتی نقصان قرار دیتے ہوئے مولانا نظر الہدی قاسمی نے کہا کہ اردو دنیا ایک اچھے انسان اور اردو کے بے لوث خادم سے محروم ہو گئی۔ اللہ مرحوم کی مغفرت فرمائے اور پسماندگان کو صبر جمیل کی توفیق دے۔