سابق صدر جمہوریہ پرنب مکھرجی ابھی بھی کوما میں

42

نئی دہلی: سابق صدر جمہوریہ پرنب مکھرجی (Pranab Mukherjee) کی حالت اب بھی نازک بنی ہوئی ہے اور وہ لائف سپورٹ سسٹم (Life support system) پر ہیں۔ فوج کے ’ریسرچ اینڈ ریفرل’ اسپتال پیر کو یہ اطلاع دی۔ پرنب مکھرجی کا علاج کر رہے ڈاکٹروں نے بتایا کہ ان پر قریبی نظر رکھی جارہی ہے۔ پرنب مکھرجی (84) کو 10 اگست کو یہاں اسپتال میں داخل کرایا گیا تھا اور ان کے دماغ کی سرجری کی گئی تھی۔ تبھی سے وہ کوما میں ہیں اور ان کی حالت سنگین ہے۔ اس سے پہلے کووڈ-19 جانچ میں ان کے (Covid 19) میں ان کے انفیکشن ہونےکی بھی تصدیق ہوئی تھی۔

 

اسپتال نے ایک بیان میں کہا، ’پرنب مکھرجی کی حالت اب بھی سنگین بنی ہوئی ہے۔ حالانکہ ان کے سبھی اہم پیرا میٹر ٹھیک ہیں اور وہ لائف سپورٹ سسٹم پر ہیں اور ان پر قریب سے ان کی نگرانی کی جارہی ہے’۔ وہیں پرنب مکھرجی کی فیملی کے مطابق سرجری کےبعد سے ان کی حالت میں تھوڑی بہتری آئی ہے۔ پرنب مکھرجی 2012 سے 2017 تک صدر جمہوریہ رہے۔ وہ ملک کے 13 ویں صدر ہیں۔

پرنب مکھرجی نے 10 اگست کو ٹوئٹ کرکے خود کے کورونا سے متاثر ہونے کی اطلاع دی تھی۔ انہوں نے کہا تھا، ’دیگر وجوہات سے اسپتال گیا تھا، جہاں پر آج کووڈ-19 جانچ میں متاثر ہونے کی تصدیق ہوئی۔ میں گزارش کرتا ہوں کہ جو لوگ بھی گزشتہ ایک ہفتے میں میرے رابطے میں آئے ہوں، وہ خود آئیسولیشن میں چلے جائیں اور کووڈ-19 کی جانچ کرائیں۔