مِرا جو بھی مسئلہ ہے اللہ جانتا ہے
اچھا ہے یا برا ہے اللہ جانتا ہے
مجھ پر میرے عزیزوں شک کی نظر نہ ڈالو
نہیں کوئ معاملہ ہے اللہ جانتا ہے
میری بات تیرے دل پر بڑی نا گوار گزری
تیرے حق میں یہ بھلا ہے اللہ جانتا ہے
میرے دل میں تو ہی تو ہے میرا دل دکھانے والے
کیا یہی میری سزا ہے اللہ جانتا ہے
مجھے لے گئ کہاں تک میرے دوستوں کی سازش
میرے راز سب عیاں ہے اللہ جانتا ہے
مجھ سے جدا ہوا تو میری جان لے گیا وہ
پھر بھی میری دعا ہے اللہ جانتا ہے
تمہیں خوش رکھے خدارا میرا دل جلانے والے
کیوں کہوں میں بے وفا ہے اللہ جانتا ہے
تیری بات تجھ سے حسؔرت تیرے یار کہہ نہ پائے
کس بات کا گلہ  ہے اللہ جانتا ہے
فرینک حسؔرت
نودر چندولی یو پی