گل ناز کے مقدمہ کی پیروی بھی امارت شرعیہ کرے گی/ محمدشبلی القاسمی

12

(پھلواری شریف پٹنہ۲دسمبر) گل ناز کو جس طرح موت کی نیند سلادیاگیا، وہ انتہائی افسوسناک اوردردناک معاملہ ہے، امارت شرعیہ بہار،اڈیشہ وجھارکھنڈ شروع دن سے ہی اس مسئلہ پر نگاہ رکھے ہوئے ہے اوراس نے وزیراعلیٰ اورسکریٹری اقلیتی فلاح کو خط لکھ کر گل ناز کے قاتلوں کو جلداز جلد سزادلانے کا مطالبہ کیاہے، اورگلناز کی والدہ اورافسران سے رابطہ میں ہے، اس سلسلے میں مقدمات کی پیروی اورگل ناز کے اہل خانہ سے متعلق دوسرے امور کے سلسلے میں امارت شرعیہ میں وکلاءاوردیگر سماجی کارکنوں کے ساتھ ایک میٹنگ یکم دسمبر بروز منگل ہوئی، جس میں گل ناز کی والدہ اوراس کے بھائی بھی شریک ہوئے، گلناز کی والدہ نے بتایاکہ ہمیں اب اپنی دوسری بچی کی جان کا شدید خطر ہے ،گذشتہ دنوں بڑی تعداد میں سماج دشمن عناصر میرے گھر پر آکرنعرہ بازی کرکے اور مجھے ڈرا دھمکاکر گئے ہیں، اس وقت بھی پولیس تماشائی بنی دیکھتی رہی۔ قائم مقام ناظم مولانا محمد شبلی القاسمی نے اس واقعہ پر سخت افسوس کا اظہار کیا، اورمجرمین کی فوری گرفتاری کے لئے مناسب اورموثر اقدام کا مطالبہ کیا، حضرت امیرشریعت مفکراسلام مولانامحمد ولی رحمانی دامت برکاتہم کے حکم پر بلائی گئی اس میٹنگ میں قائم مقام ناظم صاحب نے گل ناز کی والدہ کو تسلی دلائی اوریقین دلایاکہ ان کی لڑکی کے قاتلوں کو سزا ضرور ملے گی، اس مقدمہ کو دیکھ رہے جناب کاشف یونس نے مقدمہ کی تفصیلات سے شرکاءکو باخبرکیا اوربتایاکہ ابھی معاملہ ابتدائی مرحلہ میں ہے، ملزمین نے ریگولرضمانت کی درخواست دی ہے ، جس پر بحث ہونی ہے، ہم پوری مستعدی سے اس کام میں لگے ہوئے ہیں، اورہماری طرف سے کوئی کمی کوتاہی کسی مرحلہ میں نہیں ہوگی، اس کا میں یقین دلاتاہوں، شرکاءنے اس بات پر اتفاق کیاکہ بحیثیت وکیل کاشف یونس صاحب اور ندیم صاحب اس مقدمہ کو دیکھیں، امارت شرعیہ اس کی نگرانی کرے اورجس قسم کی ضرورت پیش آئے امارت شرعیہ اس میں ہرممکن تعاون دے، ان دونوں وکلاءکے علاوہ دوسرے ماہر وکیل کی بھی مدد لی جائے۔ حضرت امیر شریعت دامت برکاتہم کے حکم سے قائم مقام ناظم صاحب نے فرمایاکہ امارت شرعیہ ہرطرح سے تیارہے، جیسی ضرورت پڑے گی ہم اس میں کہیں سے پیچھے نہیں ہےں، قائم مقام ناظم صاحب نے فرمایاکہ اگر گلناز کی والدہ وہاں سے نقل مکانی کرنا چاہتی ہیں توامارت شرعیہ اس میں بھی اس کی مدد کرے گی، جس پر شرکاءنے اظہار پسندیدگی کیا۔ قائم مقام ناظم صاحب نے وزیراعلیٰ بہار سے اس معاملہ میں خصوصی مداخلت کرکے اہل خانہ کو انصاف دینے کا مطالبہ کیا ہے، انہوں نے کہاکہ بہارکی پرامن سرزمین پر اس قسم کے ظلم اورسفاکیت کو ہرگزنہیں برداشت کیاجاسکتا۔
میٹنگ میں حاجی پورسے مولاناقمرعالم ندوی ،ماسٹر عظیم الدین انصاری، جناب محمد اکبراورنصراحمد نے شرکت کی۔ان کے علاوہ گلناز کی والدہ کے خصوصی معاون گوہرعزیز، جناب ندیم احمد ،فیض احمد،پرویز صاحب، ندیم احمد خان،ایم کیو جوہر ،ندیم پھلواری شریف، انجینئرابوالکلام صاحب وغیرہ نے شرکت کی۔ امارت شرعیہ کے ذمہ داروں میں مفتی ثناءالہدیٰ قاسمی،مولانا سہیل احمد ندوی نائبین ناظم ،جناب جاویداقبال صاحب سنیئرایڈوکیٹ ہائی کورٹ پٹنہ،مفتی وصی احمد قاسمی نائب قاضی امارت شرعیہ اورجناب سمیع الحق صاحب نائب انچارج بیت المال ،مولانا ارشدرحمانی معاون ناظم امارت شرعیہ نے شرکت کی اورمفید مشوروں سے نوازا، میٹنگ کااختتام قائم مقام ناظم مولانامحمد شبلی القاسمی کی دعاپر ہوا۔