سہرسہ،19نومبر:جمعیۃ علما ء ہند؛ایک قومی، ملی اوردینی جماعت کا نام ہے جو گذشتہ سو سالوں سے مسلسل ملک و ملت کی خدمت انجام دے رہی ہے۔جمعیۃ علماء ہند ایک دستوری تنظیم ہے جہاں ترمیم شدہ ضابطے کے مطابق ہر تین سال بعد ممبر سازی کے ذریعے تنظیم کی اکائیاں قائم ہوتی ہیں۔اس کے مد نظر مجلس عاملہ جمعیۃ علماء ہند (منعقدہ 2؍اگست2019 بمقام مدنی ہال صدر دفتر جمعیۃ علما ء ہند) آئندہ تین سالہ ٹرم کے لئے جدید ممبر سازی کا کام شروع ہے- جس کی آخری تارریخ 31؍ دسمبر 2020مقررکی گئی ہے۔اس مہم کو کامیاب بنانے کے لئے جمعیۃعلماء بہار کے جنرل سکریٹری جناب مولانا محمد ناظم صاحب،اور اس کے ناظم تنظیم وترقی خالدانورپورنوی اس وقت مدھے پورہ،سپول،سہرسہ کے طوفانی دورہ پر ہیں_اس سلسلہ میں آج مغرب کی نماز کے بعد جامع مسجد مبارک پورسہرسہ میں جمعیۃعلماء بہار کے جنرل سکریٹری جناب مولانا محمد ناظم صاحب مہتمم جامعہ مدنیہ سبل پور پٹنہ نے اہم خطاب فرمایا_ انہوں نے اپنے خطاب میں کہا:اللہ کی مددجماعت کے ساتھ ہوتی ہے_اس لئے ہمیں جماعت وجمعیت کو مضبوط کرناچاہئیے_انہوں نے جمعیۃعلماء ہند کے قیام وخدمات پر روشنی ڈالی_انہوں نے جمعیۃعلماء ہند کی ممبرسازی مہم میں بڑھ چڑھ کر حصہ لینے کی اپیل بھی کی_اس موقع پر جمعیۃ علماء سہرسہ کے صدر محترم جناب مولانا عبدالاحدصاحب قاسمی،جنرل سیکرٹری جناب مولاناانظر صاحب،معروف صحافی شاہنوازبدرقاسمی،حافظ ممتاز صاحب رحمانی، مولانامظاہرالحق، حافظ شکیل،ہارون رشید،فیروز احمد،ماسٹر منہاج ودیگر سرکردہ شخصیات سے ملاقات کرکے ممبر سازی مہم کوکامیاب بنانے کی اپیل بھی کی گئی_واضح رہے کہ جمعیۃ علماء ہند؛کا قیام 1919 میں عمل میں آیاتھا،ملک کی آزادی میں،اور آزادی کا نقشہ مرتب کرنے میں جمعیۃ علماء ہند کا اہم کردار رہاہے، ملک کی آزادی کے بعد بھی ملک وقوم پر جب بھی کوئی مسئلہ پیش آیا،جمعیۃ علماء ہندنے اس کے لئے عظیم قربانیاں پیش کیں،اور آ ج بھی مسلسل جدوجہدمیں مصروف عمل ہے،جمعیۃ علماء بہارکے صدر محترم نے مزید کہا: ہر جماعت اپنے ارکان کی زیادتی ان کے فکر و عمل کی پختگی اور جد و جہد کی اسپرٹ سے مضبوط ہوتی ہے ۔جمعیۃ علما ء ہند کو آپ اپنے ایثار اور جہد و عمل سے جتنا مضبوط بنائیں گے اتنا ہی مضبوطی کے ساتھ جمعیۃ علماء ہند مسلمانوں کے کاز کے لئے لڑ سکے ہے_معروف صحافی شاہنواز بدرقاسمی صاحب کی دعوت پر اپنے آبائی گاؤں چکمکہ سہرسہ پر جمعیۃ علماء بہار کے جنرل سکریٹری جناب مولانا محمد ناظم صاحب ،مفتی خالدانور پورنوی تشریف لائے_فجر کی نماز کے بعد جامع مسجد چکمکہ،رانی باغ جامع مسجد سمری بختیار پور میں اہم خطاب بھی فرمایا_اس موقع پر جناب مولانامحمدناظم صاحب نے اپنے ایک خاص انٹرویو میں ممبرسازی مہم کے حوالہ سے ریاست بہارمیں موجود تمام ضلعی جمعیۃ علماء کے ذمہ داران کی توجہ مبذول کراتے ہوئے کہا:آج مسلمان جس آز مائش کے دور سے گذر رہا ہے اس کا بھی یہی تقاضہ ہے کہ مسلمانوں کا ملی مر کز مضبوط سے مضبوط تر ہو ۔اس لئے اتحادمیں بڑی طاقت ہے،انہوں نے مزید کہا کہ اقلیتوں کو اپنے حقوق کی حصولیابی اور اپنے مسائل کےحل لئے تنظیم وجماعت کی بڑی ضرورت ہے کیونکہ اس کے بغیر وہ کسی بات کو مستحکم طریقے سے نہیں کہہ سکتے ۔با الخصوص جمہوری ملک میں جہاں سرگنے جاتے ہیں تنظیم کی طاقت اور اس میں افراد کی کثرت کو شمار کرائے بغیر کوئی بات موثر نہیں ہو سکتی ،ایسے میں ضروری ہے کہ زیادہ احباب کو جمعیۃ علماء سے جڑیں-