تلنگانہ کے سرکاری جونیئر کالجوں کے کنٹریکٹ لیکچررز کو اپنی پسند کے کالجوں میں کام کرنے کا موقع ملا

32

حیدرآباد: وزیر اعلی کے چندر شیکھر راؤ کنٹریکٹ لیکچررز کو خالی آسامیوں پر اپنی پسند کے گورنمنٹ جونیئر کالج میں کام کرنے کا موقع دینے کا فیصلہ کیا ہے۔ 

وزیراعلیٰ نے متعلقہ عہدیداروں کو ہدایت کی کہ وہ اس سلسلے میں ہدایات تیار کریں۔ وزیر تعلیم ، گورنمنٹ جونیئر کالجوں میں کام کرنے والے کنٹریکٹ لیکچررز کی مشکلات پر اتوار کے روز جائزہ اجلاس میں سبیٹھہ انڈریڈی اور رائٹھو بندھو سمیتی چیئرمین پلہ راجیشور ریڈی نے سرکاری جونیئر کالجوں میں کنٹریکٹ لیکچررز کو درپیش پریشانیوں کے بارے میں وزیراعلیٰ کے نوٹس میں لایا۔
وزیر اعلی نے کہا کہ ریاستی حکومت نے جونیئر کالج کے معاہدے کے لیکچررز کی فلاح و بہبود کے لئے متعدد اقدامات کیے ہیں۔ عدالت میں مقدمات کی وجہ سے ان کی خدمات کو باقاعدہ بنانے کی کوشش ناکام ہوگئ۔ حکومت نے ان کی ماہانہ تنخواہ دگنی کردی ہے۔ ماضی میں انہیں ایک سال میں 10 ماہ کی ادائیگی کی جاتی تھی۔ ریاستی حکومت نے پوری تنخواہ کے ساتھ اسے بڑھا کر 12 ماہ کردیا۔ حکومت انہیں خدمات کے فوائد بھی دے رہی ہے۔
"ہم نے ان کے پتے اور توسیع کی سہولیات جیسے آرام دہ اور پرسکون رخصت اور زچگی کی چھٹی میں اضافہ کیا ہے۔ حکومت قواعد و ضوابط کے دائرہ کار میں ان کی فلاح و بہبود کے لئے مزید اقدامات کرے گی۔
وزیراعلیٰ نے عہدیداروں کو ہدایت کی کہ وہ سرکاری جونیئر کالجوں کے کنٹریکٹ لیکچررز کی درخواست پر غور کریں کہ انہیں خالی آسامیوں پر اپنی پسند کے گورنمنٹ جونیئر کالج میں کام کرنے کا موقع فراہم کیا جائے۔
انہوں نے محکمہ تعلیم کے اعلی افسران کو بھی موجودہ قواعد و ضوابط کو مدنظر رکھتے ہوئے ہدایات تیار کرنے کی ہدایت کی۔