دھن گھٹا پولیس کی مدد سے گاؤں والوں نے کرایا عاشق جوڑے کا نکاح

21

دھن گھٹا تھانہ حلقہ واقع موضع مچھلی گاؤں (مخدوم پور) میں ایک طرف جہاں گزشتہ 10جولائی کو ایک خاتون نے اپنی 15سالہ بیٹی کو گاؤں ہی کے ایک شخص پر اغوا کرلئے جانے کا الزام تحریر دے کر لگایا تھا وہی حرکت میں آئی دھن گھٹا پولیس نے پانچ روز بعد گھر سے فرار لڑکی اور لڑکے کو آج برآمد کر لیا ہے۔

دھن گھٹا پولیس سے ملی اطلاع کے مطابق عبد الرحمان ابن ریاض الدین موضع مچھلی گاؤں (مخدوم پور)
گاؤں ہی کی ایک لڑکی سے گزشتہ سالوں سے عشق چلتا چلا آرہا تھا اس دوران جب عاشق اور معشوق کے درمیان عشق کافی حد تک بڑھا تو ساتھ میں جینے مرنے کی قسم کے ساتھ دونوں نے اپنے اپنے کنبہ والوں کو خیراباد کہتے ہوئے گھر سے نکل پڑے تھانہ انچارچ دھن گھٹا سوریندر شرما نے بتایا کہ گزشتہ 10جولائی کو دوشیزہ کی ماں قیصر جہاں زوجہ غیاث الدین نے اپنی نابا لغ بیٹی کے اغوا کر لئے جانے کی تحریر دی تھی جس کو سنجیدگی سے لیتے ہوئے آج دونوں کو برآمد کر لیا گیا ہے۔

دونوں عاشق اور معشوق کے گھر والوں نے آپسی گفتگو کرنے کے بعد دونوں کی آپس میں شادی کر نے کی کی بہتری سمجھی جس پر گاؤں والوں نے صوفی باصفا حافظ زبیر احمد ناون خرد اور حافظ بیت اللہ موضع کٹہا نے موقع پر پہونچ کر عاشق کا معشوقہ کے ہمراہ 7786روپیہ مہر کے ساتھ نکاح پڑھاکر ازدوج زندگی میں منسلک کردیا اس موقع پر اکبر علی ،فیروز احمد ،محمد یوسف عقیل احمد، محمد احمد ،صلاح الدین ،سمیت درجنوں سے زائد لوگوں نے نکاح کے پروگرام میں شرکت کی اور میاں بیوی کے لئے نیک خواہشات کا اظہارکیا۔