بہار انتخاب : بی جے پی کے لیے پہلے مہنگائی ‘ڈائن’ تھی، اب ‘بھوجائی’ بن گئی، تیجسوی کا طنز !

60

پٹنہ ۔ 31 اکتوبر 2020
بہار انتخاب میں اپوزیشن پارٹیوں کے مہاگٹھ بندھن کی طرف سے وزیر اعلیٰ امیدوار تیجسوی یادو نے جمعہ کو پیاز اور آلو کی قیمتوں میں ہوئے اضافہ کو لے کر بی جے پی پر زبردست سیاسی حملہ کیا۔ انھوں نے بی جے پی کے لیڈروں پر طنز کرتے ہوئے کہا کہ "مہنگائی پہلے ان کے لیے ‘ڈائن’ تھی، لیکن اب ‘بھوجائی’ بن گئی ہے۔”

تیجسوی یادو نے 30 اکتوبر کو اپنے ایک انتخابی جلسے میں پیاز کی قیمتوں میں ہوئے اضافہ کو لے کر بی جے پی اور جے ڈی یو کو گھیرنے کی کوشش کی۔ سمستی پور کے حسن پور میں ایک انتخابی جلسہ کو خطاب کرتے ہوئے انھوں نے کہا کہ پیاز کی قیمت اب سنچری لگا رہی ہے، جب کہ آلو نصف سنچری بنا چکا ہے۔ بی جے پی کے لوگ پہلے پیاز کی بڑھی قیمت پر پیاز کی مالہ پہن کر ‘مہنگائی ڈائن کھائے جات ہے’ گاتے تھے، لیکن اب لگتا ہے کہ مہنگائی ان کی ‘بھوجائی’ ہو گئی ہے۔

بہار اسمبلی میں اپوزیشن لیڈر تیجسوی یادو نے اپنے آفیشیل ٹوئٹر ہینڈل پر بھی مہنگائی کے تعلق سے تذکرہ کرتے ہوئے لکھا ہے "مہنگائی نے عام آدمی کا جینا محال کر دیا ہے۔ پیاز نے سنچری بنا دی ہے۔ بی جے پی والوں کے لیے پہلے مہنگائی ڈائن تھی، اب بھوجائی ہے۔ ڈبل انجن حکومت مہنگائی، بے روزگاری اور غریبی پر صلاح و مشورہ ہی نہیں کرنا چاہتی۔” تیجسوی لگاتار نتیش حکومت پر مختلف ایشوز کو لے کر نشانہ سادھ رہے ہیں۔