ہفتہ, 8, اکتوبر, 2022
ہوماعلان واشتہارات30ستمبرکو اراکین شوری کااجلاس وقت کااہم تقاضہ

30ستمبرکو اراکین شوری کااجلاس وقت کااہم تقاضہ

دربھنگہ ( پریس ریلیز)
امارت شرعیہ بہار اڈیسہ و جھارکھنڈ کا موجودہ قضیہ نامرضیہ نہایت ہی شرمناک الم ناک ہے۔۔اراکین شوری کا آپس ہی میں اس طرح نازیبا حرکتیں بیان بازیاں’طعن وتشنیع’انتخاب امیر کے لیے الگ الگ تاریخوں کا اعلان کردینا ۔۔۔۔یہ سب ایسی حرکتیں ہیں جس سے پوری قوم شرمندہ ہے ۔۔۔۔۔۔۔۔۔
ان تمام حالات کو سامنے رکھتے ہوئے نائب امیر شریعت حضرت مولانا محمد شمشاد قاسمی دامت برکاتہم العالیہ نے٣٠/ستمبر ٢٠٢١کو اہل شوری کی میٹینگ طلب کی ہے جو نہایت ہی اہمیت کے حامل اور یہ انکا دوراندیشانہ فیصلہ ہے یہ اجلاس آپسی اتحاد کوفروغ دینے ‘فتنہ کے دروازے کو بندکرنے ‘اور موجودہ اختلافات کو ختم کرنے کا ذریعہ بھی بنےگا
انشاءاللہ!…
اور جو لوگ اس مٹینگ کی مخالفت کررہے ہیں دراصل وہ حقائق کو پردہ میں رکھکر دھوکہ سے کام لینا چاہتے ہیں،اور نائب امیر شریعت کی نافرمانی کے مرتکب ہیں،
آخر اتنا اہم معاملہ’ایسے وقت میں تمام شوری کی مٹینگ نہیں ہوگی۔۔۔؟۔ تو کب ہوگی جب امارت ٹوٹ جائے گی تب ؟۔ ۔۔۔
مذکورہ باتیں حضرت مولانا محمد مفتی توحید مظاہری رکن شوری امارت شرعیہ حضرت مولانا مفتی محمد نظر الباری الندوی مولانا محمد عطاءاللہ مظاہری مفتی امیر الحق قاسمی مولانا صفدر علی مظاہری قاری حصین اشاعتی قاری رحمت اللہ رحمانی مولانا مسعود قاسمی وغیرہ نےاپنے ایک اخباری بیان میں مشترکہ طور پر کہیں ،ان علماء کرام نے زور دے کر کہا آخر بندکمروں میں جو لوگ فیصلہ لے رہے ہیں۔۔۔۔وہ میدان میں تمام اراکین کے سامنے آنے سے کیوں کترا رہے ہیں۔۔۔؟ وجہ کیا ہے ؟ امارت کسی کی جاگیر نہیں ہے۔تمام شوری آپس میں بیٹھ کر نائب امیر شریعت کی نگرانی میں جو بھی فیصلہ لینگے وہ مسلمانوں کو قابل قبول ہے بقیہ سب ردی کی ٹوکری میں شوری اسی لیے ہے’ تاکہ اہم معاملات میں ان کے مشورہ سےفیصلہ لیا جائے ان حضرات علمائے کرام نے نائب امیر شریعت کو مبارکباد دی اور کہا ان کا یہ قدم قابل داد وتحسین ہے۔
اللہ تعالیٰ امارت کی حفاظت فرمائے آمین یارب العالمین

توحید عالم فیضی
توحید عالم فیضیhttps://www.nawaemillat.com
روزنامہ ’نوائے ملت‘ اپنے تمام قارئین کو اس بات کی دعوت دیتا ہے کہ وہ خود بھی مختلف مسائل پر اپنی رائے کا کھل کر اظہار کریں اور اس کے لیے ہر تحریر پر تبصرے کی سہولت فراہم کی گئی ہے۔ جو بھی ویب سائٹ پر لکھنے کا متمنی ہو، وہ روزنامہ ’نوائے ملت‘ کا مستقل رکن بن سکتے ہیں اور اپنی نگارشات شامل کرسکتے ہیں۔
کیا آپ اسے بھی پڑھنا پسند کریں گے!

جواب چھوڑ دیں

براہ مہربانی اپنی رائے درج کریں!
اپنا نام یہاں درج کریں

- Advertisment -
- Advertisment -

مقبول خبریں

حالیہ تبصرے