پیدائش سے پانچ سال تک

25

یہ مرحلہ مختلف حیثیتوں سے نہایت اہم ہے ۔ پانچ سال کی عمر تک بچے جو کچھ اپنی ماؤں کی گود یا گھریلو میں سیکھ لیتے ہیں۔ ان کی چھاپ ساری زندگی رہتی ہے۔

اس لیے اس مرحلہ کو بنیاد کی حیثیت حاصل ہے، کھانا، پینا، اٹھنا، بیٹھنا، چلنا، پھرنا، ملنا، جلنا، بولنا، چالنا، پہننا، اوڑھنا، بچے اسی مدت میں سیکھتے ہیں۔

محبت، نفرت، خوف وبے خوفی آزادی پابندی، ہمدردی و تعاون ایثار و قربانی، سردی گرمی، سختی، نرمی دکھ سکھ وغیرہ کا تجربہ و احساس اسی مرحلے میں ابھرتا ہے۔جسمانی لحاظ سے بھی یہ مرحلہ نہایت اہم ہے۔ پہلے دوسرے سال میں بعض ایسی جسمانی خامیاں پیدا ہوسکتی ہیں جن کی تلافی زندگی بھر ممکن نہیں ہے۔

خصوصاً دیکھنے سننے اور بولنے وغیرہ کی قوتوں میں مختلف نقایص جو نہ صرف جسم کو متاثر کر تے ہیں بلکہ ذہنی ارتقاء پر بھی بہت برا اثر ڈالتے ہیں

اس لیے اپنے بچوں کی صحیح تر بیت کیجیے۔

مدرسہ اصلاح المسلمین بھوراچپور سیوان۔