مرشد عالم کے ٹکٹ پر خطرہ! گلشن آرا

35

ارریہ (معراج خالد) کل ہند مجلس اتحاد المسلمین یعنی اویسی کی پارٹی اس بار گرانڈ سیکولر الائنس کے ساتھ اوپیندر کشواہا کی قیادت میں بہار اسمبلی انخاب میں حصہ لے رہی ہے جس سے اس کے کھاتے میں سیمانچل کی چوبیس سیٹیں آئی، تمام سیٹوں پر امیدواروں کے نام کا اعلان بھی ہو چکا لیکن تنازع اس وقت کھڑا ہو گیا جب شہرت یافتہ مقرر و متوقع امیدوار عبداللہ سالم قمر کو جوکی ہاٹ اسمبلی حلقہ میں ٹکٹ نہ دیکر مرشد عالم کے نام کا اعلان کر دیا گیا اسدالدین اویسی کی ٹویٹ کے بعد عبداللہ سالم سمیت پارٹی میں کام کرنے والے دعویداروں نے بہار ریاستی صدر اخترالایمان اور یوتھ ریاستی صدر عادل حسن آزاد پر ٹکٹ بیچنے کا الزام لگا کر ویڈیو جاری کیا اور آناً فاناً اپنے حامیوں کی صبح آٹھ بجے میٹنگ بلائی معتبر ذرائع سے ملی خبر کے مطابق شام میں جوکی ہاٹ سے ایم آئی ایم کے امیدوار کے نام کا دوبارہ ہو سکتا ہے اعلان ٹکٹ کے اس دوڑ میں راجد کے رکن اسمبلی شہنواز عالم بھی شامل ہیں مبصرین کا ماننا ہے کہ اگر جوکی ہاٹ سے ایم آئی ایم شہنواز عالم کو امیدوار بناتی ہے تو جیت یقینی ہے بتاتے چلیں کہ شہنواز عالم راجد سے رکن اسمبلی تھے جن کی جگہ پر لالو یادو کی پارٹی نے ان کے بڑے بھائی سرفراز عالم پر امید کرتے ہوئے انہیں امیدوار بنایا ہے