مرثیہ بر وفات حضرت مولانا الیاس صاحب لاڈلا کا میوات راجستھان الہند

46

( نوائے ملت نیوز میوات )
از قلم محمد عرفان قمر چیتوڑہ مقیم اکبرپور خادم مکتب دار ارقم اکبر پور میوات ہریانہ الہند
________
ہائے صد افسوس دنیا پھر ہوٸ اب سوگوار
رحلت الیاس نے ہم کو کیا ہے اشک بار

زہد و تقویٰ کے تھے پیکر اور بہت فیاض تھے
ہو گئے ہم سے جدا ایک شاعری کے شہسوار

خوب خصلت خوبصورت اور تھے عمدہ ذہین
ہو گئے ہم سے خفإ اک مدرسوں کے غمگسار

غمزدہ میوات سارا، لاڈلا کا ہی نہیں
غمزدہ سارے علماء ،اور ہے ان پڑھ گوار

حکمت و نبض شناسی میں بہت تھا تجربہ
حضرت الیاس میں خوبیاں تھیں بے شمار

قوم مسلم کو عطا کردے خدا نعم البدل
یا خدا قبر و حشر میں کر عطاان کو قرار

26 نو9 اور 2020 میں ان کا وصال
ہو گئے الیاس ہفتہ کو اجل کے ایک شکار

سن کرحضرت کی خبر سب کے جگر حیران ہیں
چشم نم عرفان کی ہیں اور جگر ہے بیقرار
_________
بمقام مکتب دار ارقم اکبرپور، پنگواں میوات ہریانہ
__________
مبارک میواتی آلی میو