آفتاب احمد آج آکیڑہ گاؤں سے کسانوں کے حقوق کے لئے یاترا شروع کریں گے

22

نوائے ملت نیوز میوات مبارک میواتی آلی میو
نوح کے ممبر اسمبلی و کانگریس پارٹی ہریانہ کے نائب رہنماں چودھری آفتاب احمد نے کسانوں کے حقوق کے لئے جدوجہد کرنے کا عزم کرلیا ہے۔ اس کے لئے وہ میوات سمیت متعدد اضلاع میں کسان اختیار یاترا کا آغاز کررہے ہیں، جو اتوار (آج) اتوار کو آکیڑہ گاؤں سے شروع ہورہی ہے، سی ایل پی کے نائب رہنما چودھری آفتاب احمد نے کہا کہ وہ کسان کے حالات سے پریشان ہیں کیونکہ نئے بل کسان مزدور کے لئے بہت نقصان دہ ثابت ہونگے، یہ بل پارلیمنٹ میں غلط طریقے سے منظور کیے گئے، یہاں تک کہ اس بل کی مخالفت کرنے والے اراکین پارلیمنٹ کو بھی باہر کردیا گیا۔
نوح کے ایم ایل اے آفتاب احمد کا کہنا ہے کہ کسان صنعت کاروں، سرمایہ داروں، بڑے تاجروں کے چنگل میں پھنسایا جارہا ہے، یہ بل کسان کے حق کو کمزور کردیں گے، بڑی کمپنیاں لائی جارہی ہیں، ان کی مداخلت میں اضافہ ہوگا، یہ کمپنیاں ذخیرہ کریں گی اور کسان پریشان ہوگا۔ نوح کے ایم ایل اے چودھری آفتاب احمد نے ہریانہ حکومت سے مطالبہ کیا ہے کہ اسمبلی اجلاس بلا کر تینوں بلوں کو مسترد کردیا جائے کیوں کہ پنجاب حکومت پہلے ہی کر چکی ہے۔سی ایل پی کے نائب رہنما آفتاب احمد نے کہا کہ وہ یہ کسان ادھیکار یاترا میوات اور ریاست کے کسانوں کے مطالبات حکومت سے حاصل کرنے کے لئے شروع کررہے ہیں۔ یہ سفر نہ صرف میوات میں بلکہ کئی دیگر اضلاع میں بھی چلے گا۔کانگریس کسانوں کی لڑائی کو اپنی لڑائی سمجھ رہی ہے،انہوں نے کہا کسانوں کا درد ہمارا درد ہے، نوح کے ایم ایل اے کا کہنا ہے کہ وزیر اعلی اور نائب وزیر اعلی دونوں کو چاہئے کہ وہ ان بلوں کی مخالفت کریں اور ان بلوں کو ودھان سبھا میں مسترد کریں۔پی سی سی ممبر چودھری مہتاب احمد، نے کہا کہ کسان سارا سال محنت کرتا ہے اور لوگوں کو کھلاتا ہے۔ بی جے پی کسانوں کے پیٹ پر لات مارنے کی پالیسی بنا رہی ہے، ہم کسان کے ساتھ ہیں اور ان بلوں کی واپسی تک احتجاج جاری رکھیں گے۔ ایک سوال کے جواب میں، انہوں نے کہا کہ کانگریس کی حکومت بنتے ہی بلوں کو خارج کردیا جائے گا