دار العلوم دیوبند کی شان میں کلمات

46

روزنامہ نوائے ملت
_________:______________
جس پر ناز ہے ہمیں وہ ادارہ ہے دیو بند ہے
ہمارا محبوب سا آنکھوں کا تارا ہے دیو بند

جس سے طالب علموں کی روشن ہے زندگی ۔
ایسا خوشنما چمکتا ستارا ہے دیو بند ہے

لوگ تو بے وجہ بدگمانی سے ابر آلود ہیں ۔
ورنہ باہمی بھائی چارے کا پیغام ہے دیو بند

فرضی سند یافتہ کیا اسکی عظمت کو سمجھیں گے
صرف اداراہ نہیں ایک معیاری کا مرکز ہے دیو بند

جدھر وہ نفرتوں کے بیج پھیلا کر چل دئے
وہاں اب محبتوں کے گلشن اگائگا دیو بند ۔

کبھی یہ عیاری کے عینک ہٹا کر تو دیکھ لو۔
میرے اللہ کی رحمتوں کا دروازہ ہے دیو بند

_________________________
بقلم زکریا خان ساکرس ائر فورس
_________________________