دل کا موتیا بند اوراس کا علاج

21

موتیابندایک پردہ ہے جو آنکھوں کے سامنے آجاتاہے ۔آنکھیں ٹھیک ہوتی ہیں مگرپردہ کی وجہ سےانسان کو نظرآنا بند ہوجاتاہے۔ اسی طرح دل پر بھی موتیا بند آجاتا ہے ۔جب گناہوں کی ظلمت چھاجائےیعنی موتیابند آجائے تو پھر انسان سارادن نمازیں قضاکرتارہتاہے۔ اس کی کوئی پرواہ نہیں ہوتی زبان سے چھوٹ بولتا ہے کوئی پرواہ نہیں ہوتی حالانکہ بعض احادیث میں فرمایا گیا جو انسان چھوٹ بولتا ہے اس کے منہ سے اتنی بدبو نکلتی ہے کہ فرشتےاس سے دومیل دور چلے جاتے ہیں اتنی بدبونکلتی ہے مگر انسان محسوس نہیں کرتا جسزمین پر انسان گناہ کر رہاہوتا ہے کتابوں میں لکھاہے کہ وہ زمین چیکھ رہی ہوتی ہے

اور پکار رہی ہوتی ہے ۔اےاللةمچھےاجازت دے میں تیرے اس نا فرمان بندےکو اپنے اندر دھنسالوں لیکن انسان گناہوں میں مصروف رہتا ہے وہ پرواہ نہیں کرتا جیسے آنکھ پر موتیابند آجائے تو انسان ڈاکٹروں کے پاس جاتاہے اور انکے پاس جا کر موتیابند کا علاج کروالیا جاتا ہے اسی طرح جب دل سخت ہو جائے تو انسان اللة والوں کی مجالس میں جائے
انکے پاس جانے سے دل کا موتیا


بند دورہو جایا کرتا ہے دل کی بنائی لوٹ آتی ہے دل پھر سے دیکھنا شروع کردیتا ہے
ایک ٹھوکر لکتی ہے اور پھر انسان کی زندگی میں انقلاب آجاتا ہے
ہم نے کتنے لوگوں کو دیکھا کہ اہل اللةکی صحبت سے ان کی زندگی میں انقلاب آگیا ۔۔
۔

کوئی اندازہ کرسکتاہے اسکے زور بازو کا ۔
نگاہیں مردمومن سے بدل جا تی ہے تقدیریں ۔

بعض اوقات اہل اللة کی صحبت میں بگڑے لوگ آتے ہیں اور ایک نظر پڑتی ہے تو ان کے دل کی دنیاں بدل جا تی ہے