جمعیۃ علماء ہند دہلی فساد متاثرین کی بازآبادکاری میں سرگرم عمل

19

نئی دہلی ۔ 23 جون 2020 (پریس ریلیز)
شمال مشرقی دہلی میں ہوئے فساد کو چار ماہ گزرگئے ہیں لیکن متاثرہ علاقوں کی خستہ حالی کااب بھی مشاہدہ کیا جاسکتاہے، جمعیۃ علماء ہند صوبہ دہلی کی ریلیف ٹیم مولانا ارشد مدنی صدر جمعیۃ علماء ہند کی ہدایت پر بے گھر ہوئے متاثرین کی بازآبادکاری میں مسلسل سرگرم عمل ہے ۔

لوک ڈاؤن کے دوران تعمیری اور بازآبادکاری کا کام اگرچہ موقوف کردیا گیا تھا لیکن ریلیف کے کام کو وسیع پیمانہ پردہلی واطراف دہلی میں انجام دیا جارہا تھا، جمعیۃ علماء صوبہ دہلی کی ریلیف ٹیم مرکزی جمعیۃ علماء ہندکی نگرانی میں بلا تفریق مذہب وملت ہزاروں خاندانوں تک راشن ونقدی کی شکل میں ایک خطیر رقم ضرورتمندوں تک پہنچاچکی ہے۔

جمعیۃ علماء ہند صوبہ دہلی کی ریلیف ٹیم مفتی عبدالرازق مظاہری ناظم اعلیٰ جمعیۃ علماء صوبہ دہلی کی سربراہی پہلے ہی دن سے پوری تندہی سے انجام دے رہی ہیں، پہلے سے طے شدہ سروے کہ مطابق اب متاثرہ علاقوں میں بے گھرہوئے لوگوں کی بازآبادکاری کے کام کوپائے تکمیل تک پہنچایا جارہاہے۔

نذر آتش کئے گئے مکانات،دوکانیں اور مساجد کی مرمت وتعمیر کا کام بڑے پیمانہ پر انجام دیا جارہا ہے،پہلے مرحلہ کہ طور کچھ مکانات کی تعمیر کا کام مکمل بھی ہوگیا ہے جبکہ بڑے پیمانے پر تعمیراتی کام چل رہاہے کھجوری خاص کی فاطمہ مسجد کا کام بھی آخری مرحلے میں ہے اور یہاں پر مخدوش مکانات کی تعمیر کا کام بھی جنگی پیمانے پر چل رہا ہے جو ان شاء اللہ برسات کا موسم شروع ہونے سے پہلے پہلے متاثرین کے حوالہ کردیا جائیگا ۔

جمعیۃ علماء صوبہ دہلی متاثرین کو قانونی مدد بھی فراہم کررہی ہے تاکہ فساد میں ملوث گنہگاروں کو کیفرکردار تک پہنچایا جاسکے اور بے قصور اور مظلوم لوگوں کو انصاف مل سکے، ریلیف ٹیم میں مفتی عبدالرازق ناظم اعلیٰ جمعیۃ علماء صوبہ دہلی کے علاوہ قاری محمد ساجد فیضی ناظم جمعیۃ علماء صوبہ دہلی، قاری دلشاد قمر مظاہری نائب صدر جمعیۃ علماء دہلی، قاری اسرار الحق قاسمی رکن عاملہ دہلی اور ڈاکٹر رضاء الدین شمس رکن ددہلی جمعیۃ شامل ہیں۔