آج جامعہ جعفریہ مدنی نگر سرائے کوڑی کشن گنج حاضری کاموقع ملا

30

آج جامعہ جعفریہ مدنی نگر سرائے کوڑی کشن گنج حاضری کاموقع ملا،اس مدرسہ کے مہتمم اور بانی،ہمارے ہم نام جناب مولانامحمدخالدانورصاحب جنرل سکریٹری جمعیۃ علماء ضلع کشن گنج نے ہماراپرتپاک استقبال کیا،ٹھاکرگنج بلاک(کشن گنج) کے نائب صدرجناب مولانااخلاق صاحب،اور جنرل سکریٹری جناب مولاناصدام حسین صاحب قاسمی بھی موجودتھے،جمعیۃ علماء کشن گنج کے ساتھ، ملک وملت کے حوالہ سے بہت ہی تفصیلی بات، چیت ہوئی،یہ جان کربہت اچھالگاکہ جناب مولانا خالد انورصاحب کے ساتھ،مولاناصدام حسین قاسمی،اور مولانااخلاق صاحب بھی جمعیۃ علماء کی تعمیر و ترقی کے حوالہ سے بہت زیادہ فکرمند ہیں،اوراس لاک ڈاؤن میں لاکھوں روپئے کی اشیائے خوردنی ان لوگوں نے بانٹابھی،دل سے ان کے لئے مبارکبادیاں،اوردعائیں بھی۔
#اس علاقہ کی بہت ہی بزرگ شخصیت حضرت مولاناجعفرحسین صاحب کوئے مارویؒ کی یادگار میں قائم ادارہ:-"جامعہ جعفریہ” بہت ہی بہت ہی پرفضا،کشادہ زمین پر واقع ہے_صاف ستھرہ_ پھولوں اوردرختوں سے مزین ومعمور بہت ہی خوبصورت وپرکشش نظارہ پیش کرتاہے_جن چیزوں سے عام طورپر ہمارے مدرسے خالی ہیں اس ادارہ نے بہت ہی سلیقہ سے اسے سنبھال رکھاہے اور یہی اس کی خوبصورتی میں چار چاند لگاتی ہے_ پھولوں سے معمور ومزین اس ادارہ کو فوٹو میں ہم نے دیکھاتھا، لیکن حقیقت میں دیکھنے کے بعد واقعة اس سے بہتر پایا،ہم نے کہابھی کہ جس انداز سے "اس ادارہ” کو سجایا گیاہے_ یونیورسٹیوں کااندازہے_مدرسے عام طورپر ان چیزوں سے خالی ہیں_اللہ اس ادارہ کو اور زیادہ ترقی دے،اور اس کی حفاظت فرمائے_آمین
#جمعیۃ علماء بہارکے سابق صدرحضرت مولانا ادریس صاحب (نوکٹہ) کے ہاتھوں اس ادارہ کاقیام 17جون 2011 میں عمل میں آیاتھا،اس مختصر سی مدت میں تعلیمی،تعمیری اعتبارسے ادارہ نے جو ترقی کی ہے،وہ قابل تقلید ہے،اور قابل فخربھی،اس وقت پانچ سوسے زائد طلبہ علمی پیاس بجھارہے ہیں،جبکہ ساڑھے تین سو طلبہ ہاسٹل میں مقیم رہ کر تعلیم وتربیت حاصل کررہے ہیں، ْپندرہ مخلص ومحنتی اساتذہ کرام ان کی خدمات پر مامورہیں۔
#جامعہ کے تعلیمی وتربیتی نظام کے ساتھ_مستقبل کے عزائم ومنصوبوں پر بھی جناب مولاناخالدانور صاحب مہتممِ مدرسہ سے تفصیلی بات چیت ہوئی، یہ جان کراور دیکھ کربیحدخوشی ہوئی کہ جامعہ جعفریہ”سے متصل ایک وسیع وعریض زمین میں،نرسری سے ساتویں کلاس تک،لڑکیوں کی تعلیم کے لئے اورینٹ گرلس اسکول کاتعمیرکام چل رہاہے، ماہِ نومبر 2019میں بنیاد ڈالی گئی تھی،جو اب تکمیل کے قریب ہے،مقصدیہ ہے تاکہ قوم کی بچیاں دینی تعلیم کے ساتھ،عصری علوم سے اپنے مستقبل کو تابناک بناسکیں،کشن گنج جیسےتعلیمی اعتبار سے بدحال وپسماندہ علاقہ میں جناب مولاناخالدانورصاحب کی اس کوشش اور جذبہ کو ہم سلام کرتے ہیں_یقینااس کی وجہ سے مسلمانوں کی تعلیمی شرح میں اضافہ ہوگا_اللہ رب العزت اس طرح کے عزائم کی تکمیل فرمائے_آمین
کوئی بزم ہو کوئی انجمن یہ شعار اپنا قدیم ہے
جہاں روشنی کی کمی ملی