یوم جمہوریہ کے موقع سے مدرسہ اصلاحیہ میں ثقافتی پروگرام کا انعقاد: بحیثیت مسلم ملک کی آئین میں دی گئی مراعات سے ہمیں خوب فائدہ اٹھانا چاہیے:دبیر احمد قاسمی

68

سیتامڑھی(عبدالخالق قاسمی)72 ویں یوم جمہوریہ کے موقع مدرسہ اصلاحیہ نسیم آباد پاکٹولہ میں تقابلی پروگرام کا انعقاد کیا گیا,پرچم کشائی جامعہ کے ناظم حافظ منظر عالم کے ہاتھوں ہوئی, اس پروگرام کی صدارت فاضل نوجوان حضرت مولانا دبیر احمد قاسمی استاذ ادب مدرسہ اسلامیہ شکرپور بھروارہ نے کی جبکہ نظامت کے فرائض جامعہ ھذا کے متحرک فعال ناظم تعلیمات مولانا اسرار احمد مظاہری نے بڑے اچھے انداز میں انجام دیں,پروگرام کا باضابطہ آغاز مدرسہ ھذا کے طالبعلم عزیزی محمد عادل نے تلاوت کلام اللہ سے کیا,نیز شان رسالت میں نعت پاک کا گلدستہ عزیزی محمد شفیع اللہ نے پیش کیا,قومی ترانہ سارے جہاں سے اچھا ہندوستان ہمارا,ادیبہ,مہجبیں اور سمیہ نے مشترکہ طور پر پڑھا,جس پر سامعین نے خوب دادو تحسین سے نوازہ,یوم آزادی میں علماء کرام کا اہم رول کے عنوان سے عزیزہ عفت جہاں نے تقریر پیش کیا جسے حاضرین نے خوب سراہا,مشفقہ ناز نے سورہ یس کی تلاوت کے بعد اس کا ترجمہ کیا جسے سن کر مندوبین عش عش کرنے لگے اور خوب جم کر تعریف کی,الغرض اس تقابلی پروگرام میں جامعہ اصلاحیہ کے طلباء و طالبات نے مختلف عناوین پر دلچسپ تقاریر,اور مکالمہ پیش کیا,اس تقابلی پروگرام کی صدارت کررہے فاضل نوجوان مولانا دبیر احمد قاسمی نے اپنے صدارتی بیان میں ملک کی آئین سے متعلق معلومات افزاء باتیں کیں,انہوں نے نوجوان نسل سے ملک کی آئین کا مطالعہ اور اس کو ذہن نشیں کرنے کا مشورہ دیا,انہوں نے کہا کہ ہمارے ملک میں مسلمانوں کا سب سے بڑا المیہ یہ ہیکہ وہ ملک کی آئین سے بے خبر ہیں انہیں یہ بھی پتہ نہیں کہ بحیثیت مسلمان ملک میں ہمارا کیا کیا حق ہے,دی گئی مراعات سے ہمیں کیا کیا فائدہ اٹھانی چاہیے, ضرورت اس بات کی ہیکہ ہم ملک کی آئین کا بنظر عمیق مطالعہ کریں,اور ناخواندہ لوگوں میں اس کی تحریک چلائیں, تبھی ہم اپنے حقوق کی لڑائی لڑ سکتے ہیں,مولانا عبدالخالق قاسمی نے اپنے خطاب میں کہا کہ آج ہمیں اپنے ان بزرگوں کی قربانیاں یاد آتی ہیں جنہوں نے اپنے ملک کی آزادی کی خاطر بیوی بچے مال و دولت سب کچھ تیاگ دیا تھا اور اپنے ملک کو انگریز کے ناپاک پنجے سے آزاد کیا تھا,اللہ تبارک وتعالی ہمارے اکابرین کو کروٹ کروٹ چین سکون نصیب فرمائے, اس موقع پر ملک کی خاطر اپنے جان کا نذرانہ پیش کرنے والے مجاہدین کو خراج عقیدت پیش کیا گیا,جبکہ پروگرام پیش کرنے والے طلباء و طالبات کو گرانقدر انعامات سے نوازہ گیا, پروگرام عزیزی حسان سلمہ کی تلاوت کلام سے اختتام پذیر ہوا,پروگرام کو کامیاب بنانے میں حافظ مبارک علی استاذ مدرسہ جامعہ ھذا حافظ دانش,محمد امداداللہ,حافظ نور محمد نے اہم رول ادا کیا,بحیثیت مہمان خصوصی سماجی کارکن محمد مشتاق,محمد کلیم اللہ,محمد مظفر سمیت دیگر معزز لوگوں نے شرکت کی