ہندوستان اور چین کے تعلقات خراب ہونے کے اثرات سے، بہار میں بی ایس این ایل 4 جی کی سروس ایک سال پیچھے ہوگئی ہے

112

ہندوستان اور چین کے درمیان بگڑتے ہوئے تعلقات نے ریاست میں 4 جی خدمات کو متاثر کیا ہے۔ چینی کمپنی زیڈ ٹی ای کی جانب سے ٹینڈر منسوخ ہونے کے بعد بی ایس این ایل کی فور جی سروس کو گرہن لگ گیا ہے۔ ٹینڈر منسوخ ہوئے دو ماہ ہوئے ہیں ، لیکن ابھی تک ٹینڈر کا عمل شروع نہیں ہوا ہے۔

اگر ٹینڈر کا عمل بھی شروع ہوجائے تو ، اس میں چھ ماہ لگیں گے۔ ڈیوائس کو انسٹال کرنے میں تین سے چار ماہ لگیں گے۔ یعنی ، ریاست میں فور جی خدمات ایک سال پیچھے چلی گئیں ، جبکہ چینی کمپنی 4 جی کے تمام سامان لائے تھے۔ جولائی میں ہی 1200 فور جی ٹاور لگائے جانے تھے اور 4 جی سروس بھی شروع کی جانی تھی۔ چین اور ہندوستان کے مابین بگڑتی ہوئی صورتحال کی وجہ سے ایک موقع پر ٹینڈر منسوخ کردیا گیا۔ اس کی وجہ سے فور جی سروس پھنس گئی ہے۔

ریاست میں اس وقت بی ایس این ایل کے چار ہزار ٹاورز ہیں۔ اس میں 1200 3G اور 1800 2G ٹاور ہیں۔ 320 3G ٹاور کو 4G میں تبدیل کردیا گیا ہے۔ اس کے تحت ، پٹنہ میں پہلی 4 جی سروس شروع کی جانی تھی۔ اس کے بعد بی ایس این ایل 4 جی مظفر پور ، بھاگل پور اور گیا میں شروع کی جانی تھی۔

بھارت نیٹ پروجیکٹ نے بھی بہت ساری جگہوں پر خلل ڈالا
بی ایس این ایل کا بھارت نیٹ منصوبہ بھی بہت ساری جگہوں پر درہم برہم ہے۔ بھارت نیٹ پروجیکٹ کے تحت 11 ہزار گرام پنچایتوں میں آپٹیکل فائبر کے ذریعے براڈبینڈ سروس فراہم کی جانی ہے۔ بی ایس این ایل کی جانب سے 5 ہزار 41 پنچایتوں میں آپٹیکل فائبر کیبل بچھائی گئی ہے۔ اس میں 5 ہزار 67 مقامات پر جانچ کا کام جاری ہے۔ انہوں نے بتایا کہ بھارت نیٹ اسکیم کے تحت دیہات میں رہنے والے افراد کو آپٹیکل فائبر سے 100 ایم بی پی ایس انٹرنیٹ اسپیڈ ملے گی۔

پنچایت میں رہنے والے افراد کو پنچایت میں ہی ای ایجوکیشن ، ای میڈیسن ، ای کامرس اور رائٹ ٹو سروس سروس ملے گی۔ اس کا مطلب ہے کہ ذاتوں کے سرٹیفکیٹ ، انکم سرٹیفکیٹ بنانے کے لئے شہروں کو بہانا نہیں ہوگا۔ ای چوپال بہتا اور علاوالپور میں لگائے جائیں گے۔ ریاست کی 11 ہزار پنچایتوں میں آپٹیکل فائبر بچھانا ہے۔ یہ دنیا کی سب سے بڑی اسکیم ہے۔ لوگوں تک آسان ذرائع سے پہونچ سکتے ہیں۔ اس اسکیم کے تحت ، ریل ٹیل ، بی ایس این ایل اور پاور گرڈ کارپوریشن انڈیا آپٹیکل فائبر سے گاؤں تک انٹرنیٹ سروس مہیا کرنے کے لئے کام کر رہا ہے۔