ہومبریکنگ نیوزہمارا مذہب گرنے والوں کو بچانے کی تعلیم دیتا ہے

ہمارا مذہب گرنے والوں کو بچانے کی تعلیم دیتا ہے

ہمارا مذہب گرنے والوں کو بچانے کی تعلیم دیتا ہے
بحمداللہ بحسن وخوبی پیام انسانیت کی سالانہ کارگزاریوں کا پروگرام آج بتاریخ ۳۰/اکتوبر ۲۰۲۲ اختتام پذیر ہوگیا،آخری خطاب ناظم ندوۃ العلماء حضرت مولانا سید محمد رابع حسنی مدظلہ العالی کا پہلے سے طے تھا، حضرت والا باوجود نقاہت وعلالت ک ےآخری خطاب ودعاء کےلیےمسجد تشریف لائے اور بہت ہی مختصر خطاب میں بڑی قیمتی باتیں فرمائیں،تلخیص حاضر خدمت ہے؛
"میں آپ لوگوں کا شکریہ ادا کرتا ہوں، آپ سفر کرکے یہاں آئے ہیں اور انسانیت کے عنوان پر جمع ہوئے ہیں،یہ اجرکا موجب ہے،اجر کا تعلق آخرت سے ہے،ان شاء اللہ العزیز آپ سبھی آخرت میں سرخرو ہوں گے، آپ نے بڑے اچھے کام کیے ہیں،اچھی نیت ہوتی ہے تو اچھے کاموں کا نتیجہ اچھا ظاہر ہوتا ہے، دنیا میں ہی برکتیں نصیب ہوتی ہیں، برکت کا تعلق دنیا سے ہی ہے۔
انسانیت کا پیغام انسانوں تک پہونچانا ہرباشعور انسان کا فرض منصبی ہے،اللہ نے انسان کو پیدا کیا ہے اور تمام مخلوقات میں افضل بنایا ہے، سوچنے سمجھنے کے لیے دماغ دیا ہے، سامنے اچھی بری دونوں چیزیں ہوتی ہیں، کیا اچھا ہے کیا برا ہے؟یہ بتانے کے لیے نبیوں کو بھیجا ہے، وہ اپنے وقت کے عظیم انسان ہوتے ہیں جو نبی والا کام کرتے ہیں، آپ یہ کام کررہے ہیں، آپ قابل مبارکباد ہیں،
انسان دماغ رکھتا ہے، اس لیے اس پر جبر نہیں کیا جاسکتا ہے، تحریک پیام انسانیت بھی یہی کہتی ہے۔
اس بات کوپوری فکرمندی اوردردمندی کے ساتھ اس وقت امت کےسامنے پیش کرنے کی ضرورت ہے کہ اللہ نے ہمیں کیوں پیدا کیا ہے اور انسان کیوں بنایا ہے؟
ایک انسان کو کسی زمانے میں بھی انسانی زندگی گزارنے میں کوئی رکاوٹ پیش نہیں آئی ہےاور نہ پیش آسکتی ہے ،وہ اس لیے کہ وہ ایک انسان ہے۔
تحریک پیام انسانیت جسکو مفکراسلام حضرت مولاناسیدابوالحسن علی میاں ندوی رحمۃ اللہ علیہ نے 1974میں پورےملک میں شروع کیااسمیں انسانیت کےتحفظ اوربقاکاسامان ہے،ایک موقع پرآپ کہیں تشریف لےجار ہےتھے،پلیٹ فارم پر کیلے کا چھلکاپڑادیکھا،مولانا علیہ الرحمہ نےاسے اٹھا کر کنارے ڈال دیا،محبین نےکہا: حضرت! آپ نے کیوں یہ زحمت کی، مولانا نے جواب دیا! زحمت نہیں کی بلکہ ایک انسان کو زحمت سے بچانے کی فکر کی ہے،کوئی گزرنے والا/راہگیر اگر پاؤں رکھتا تو گرجاتا ،ہمارا مذہب گرنے والوں کو بچانے کی تعلیم دیتا ہے۔
ایک واقعہ میونسپلٹی کےنل میں سے پانی گرنے کا بھی ہے،حضرت نے دیکھاکہ ٹونٹی چالوہے، پانی بیکار گر رہا ہے،خودجاکر اپنے ہاتھ سے بند کیا اور یہ فرمایا کہ:یہ نل کسی کا بھی ہو نقصان انسانیت کا ہورہا ہے۔
یہ تحریک پیام انسانیت دراصل انہی چیزوں کی طرف توجہ مبذول کرانے اور عملی طور پر کرنے کے لیے شروع کی گئی ہے،
اس مختصر خطاب کے بعد حضرت کی دعاءسے اس دو روزہ پروگرام کا اختتام ہوا،اللہ ہمیں عمل کی توفیق نصیب فرمائے۔

راقم الحروف
ہمایوں اقبال ندوی، ارریہ
۳۱/اکتوبر ۲۰۲۲ء

توحید عالم فیضی
توحید عالم فیضیhttps://www.nawaemillat.com
روزنامہ ’نوائے ملت‘ اپنے تمام قارئین کو اس بات کی دعوت دیتا ہے کہ وہ خود بھی مختلف مسائل پر اپنی رائے کا کھل کر اظہار کریں اور اس کے لیے ہر تحریر پر تبصرے کی سہولت فراہم کی گئی ہے۔ جو بھی ویب سائٹ پر لکھنے کا متمنی ہو، وہ روزنامہ ’نوائے ملت‘ کا مستقل رکن بن سکتے ہیں اور اپنی نگارشات شامل کرسکتے ہیں۔
کیا آپ اسے بھی پڑھنا پسند کریں گے!

جواب چھوڑ دیں

براہ مہربانی اپنی رائے درج کریں!
اپنا نام یہاں درج کریں

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.

- Advertisment -
- Advertisment -
- Advertisment -

مقبول خبریں

حالیہ تبصرے