ہفتہ, 8, اکتوبر, 2022
ہوممضامین ومقالاتگھر واپسی کانظریہ اکثریت کی خوش فہمی پر مبنی بھارت جیسے مختلف...

گھر واپسی کانظریہ اکثریت کی خوش فہمی پر مبنی بھارت جیسے مختلف مذاہب والے ملک میں ناممکن

گھر واپسی کا نظریہ اکثریت کی خوش فہمی پر مبنی ، بھارت جیسے مختلف مذاہبِ والے ملک میں ناممکن

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

 ھمارا ملک بھارت ایک حسین گلدستہ ھے ،ہندو ،مسلم ،سکھ اور عیسائی اس گلدستہ کے حسین پھول ہیں ، برسہا برس سے سب میل و محبت سے رھتے آئے ہیں ، تاریخ کے مطابق یہ ملک اقلیت اور اکثریت کی تفریق سے ھمیشہ دور رہا ،مگر موجودہ وقت میں کچھ غلط عناصر نے اکثریت اور اقلیت کا سوال کھڑا کرکے ملک میں نفرت کا ماحول پیدا کردیا ھے ، موجودہ وقت میں ملک جس دور سے گذر رھے ہیں ،یہ دور نہایت ھی خطرناک ھے ، اکثریت کے کچھ لوگ گھر واپسی اور قتل عام کی دھمکی دینے لگے ہیں ،اس طرح کی دھمکی باطل طاقتوں کی جانب سے ھمیشہ دی جاتی رہی ھے ،گذشتہ باطل امتوں کی تاریخ ہمیں یہی بتاتی ھے ،جب حق کے مقابلہ میں وہ ناکام ھوئے تو چونکہ وہ اکثریت میں تھے ، انہوں نے حق کو ماننے والے اقلیت کے لوگوں سے یہی کہا کہ تمہاری گھر واپسی ھوگی ،نہیں تو ھم تمہیں اپنے ملک سے نکال دینگے ، بس یہی موجودہ وقت میں ھے ،اس اقلیت اور اکثریت کے مسئلہ کو حل کرنے کے لئے حق پرستوں کو جو اقلیت میں تھے ،انہیں حکم دیا گیا کہ وہ صبر سے کام لیں ،استقامت اختیار کریں ،اور آئندہ اچھے حالات کے لئے تیاری کریں ، سیرت کی کتابوں کے مطالعہ سے یہ بات واضح ھوتی ھے کہ مدینہ میں بسنے والے یہودیوں اور مسلمانوں کے درمیاں مدینہ کی حفاظت کے لئے معاہدے ھوئے ، تاریخ سے ہمیں سبق ملتا ھے کہ حالات سے گھبرانا نہیں چاہئے ،حوصلہ سے کام لینا چاہئے ، اور اقلیت والوں کو چاہئے کہ اکثریت کے اچھے لوگوں کے ساتھ مل کر کام کریں ،اور آپسی اتحاد بنائیں اور اچھے ماحول کے لئے تیاری کرتے رہیں ،گھر واپسی کبھی نہیں ھوئی ھے ،تاریخ اس پر شاہد ھے ،چند لوگوں کو ملا کر دین سے برگشتہ کر دینا گھر واپسی نہیں ھے ،اور نہ کوئی اتنی بڑی اقلیت کو ملک بدر کر سکے گا ،ایسے موقع پر ھمیں حوصلہ اور حکمت عملی سے کام لینے کی ضرورت ھے ،اس کے لئے پھر برادران وطن میں سے جو اچھے ذہن کے لوگ ہیں ،ان کے ساتھ مل کر اتحاد بنائیں ،مسلم سماج کے لوگوں سے مایوسی دور کریں ،حوصلہ کی تلقین کریں ،اپس میں اتحاد کو مضبوط کریں ،جہاں دوسروں سے خطرہ ھے وہیں آپسی انتشار سے بھی زیادہ خطرہ ھے ،دوسروں سے زیادہ ھمیں ملک سے محبت ھے ،ملک کی سالمیت کے لئے قومی یکجہتی کو فروغ دینا بنیادی ضرورت ھے ،اللہ تعالی ھم سب کی حفاظت فرمائے

 ( مولانا ڈاکٹر ) ابوالکلام قاسمی شمسی

روزنامہ نوائے ملت
روزنامہ نوائے ملتhttps://www.nawaemillat.com
روزنامہ ’نوائے ملت‘ اپنے تمام قارئین کو اس بات کی دعوت دیتا ہے کہ وہ خود بھی مختلف مسائل پر اپنی رائے کا کھل کر اظہار کریں اور اس کے لیے ہر تحریر پر تبصرے کی سہولت فراہم کی گئی ہے۔ جو بھی ویب سائٹ پر لکھنے کا متمنی ہو، وہ روزنامہ ’نوائے ملت‘ کا مستقل رکن بن سکتے ہیں اور اپنی نگارشات شامل کرسکتے ہیں۔
کیا آپ اسے بھی پڑھنا پسند کریں گے!

جواب چھوڑ دیں

براہ مہربانی اپنی رائے درج کریں!
اپنا نام یہاں درج کریں

- Advertisment -
- Advertisment -

مقبول خبریں

حالیہ تبصرے