ہفتہ, 8, اکتوبر, 2022
ہوماسلامیاتگھروں کا ماحول اسلامی اور ایمانی بنایا جائے ۔ مولانا مشتاق احمد...

گھروں کا ماحول اسلامی اور ایمانی بنایا جائے ۔ مولانا مشتاق احمد قاسمی                                           

گھروں کا ماحول اسلامی اور ایمانی بنایا جائے ۔
مولانا مشتاق احمد قاسمی
پکھرایاں کانپور(شکیب الاسلام) 5/اگست بروز جمعہ بعد نماز مغرب مدرسہ عربیہ مدینتہ العلوم نور گنج پکھرایاں کانپور دیہات میں ایک روزہ عظیم الشان، اسوہ رسول صلی اللہ علیہ وسلم کانفرنس منعقد ہوئی، جس میں صدر جلسہ معروف عالم دین جناب حضرت مولانا مشتاق احمد صاحب قاسمی نے فرمایا، کہ ہمارے آقا پیغمبر اسلام جناب رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم نے بڑی قربانیوں سے ایسا معاشرہ تشکیل دیا جنکو دنیا صحابہ کرام کے نام سے جانتی ہے، جناب رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم کی بہت بڑی قربانی ہے جس سے فیض حاصل کرکے جس سے ادب و تہذیب سیکھ کر صحابہ کرام نے اپنے آپ کو ایسا بنایا کہ نبی کے بعد دنیا انکی نظیر نہیں پیش کرسکتی، حضرات صحابہ نبی سے بے انتہاء محبت کرنے والے تھے اور حال یہ تھا کہ رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم کے پاؤں میں کانٹا چپھنا بھی گوارہ نہیں فرماتے تھے، نبی پاک صلی اللہ علیہ وسلم نے ایسا معاشرہ بنایا اور ایسا اسلام کا تصور پیش کیا کہ اسلام کے جان مال اور ہر طرح کی قربانی دینا ان حضرات کے لئے آسان ہوگیا اور اسی کا نتیجہ تھا کہ بہت سے صحابہ راہ اسلام میں جام شہادت نوش کیا،
سیدنا حضرت عمر فاروق حضرت عثمان بن عفان اور حضرت علی رضی اللہ عنھم اجمعین نے جام شہادت نوش کیا اور انکے علاوہ میدان بدر و احد میں اور دیگر مواقع پر بہت سے صحابہ نے اپنی جانوں کو اللہ کی راہ میں قربان کیا اور شہید ہوئے اسی کا ثمرہ ہے کہ آج پوری دنیا میں اسلام کا چمن کھل رہا ہے اور لوگ اس شجر سایہ دار سے فائدہ حاصل کررہے ہیں، آج ضرورت ہے کہ ایمانی اور اسلامی ماحول بنایا جائے ضرورت ہے کہ ہر مسلمان نمازی ہو قرآن کی تلاوت کرنے والا ہو سنت رسول پر عمل کرنے والا ہو ضرورت ہے کہ اپنے گھروں سے جہالت کو نکالا جائے اور نور ایمان سے گھروں کو روشن کیا جائے ۔
جناب حضرت مولانا محمد نعمت اللہ صاحب قسمی راجپوری نے خطاب فرماتے ہوئے کہا،کہ شہید اور شاہد کا مطلب ہے گواہی دینا، شہادت بہت اونچا مقام ہے اللہ نے اس مقام کو اتنا بلند کیا ہے کہ شہید کو مردہ کہنے کی بھی اجازت نہیں دی قرآن کریم میں اللہ رب العالمین نے ارشاد میں جو اللہ کی راہ میں قتل کردیئے گئے مردہ مت کہو وہ زندہ ہیں لیکن تمہیں انکی زندگی کا شعور نہیں ہے شہید زندہ ہیں اور انکے لئے جنت کے کھانے اور پینے کا انتظام کیا جاتا ہے، آج جو کربلا کی تاریخ بتائی جاتی ہے اس میں بہت کچھ جھوٹ بھی ملادیا گیا ہے، ہمیں اور آپکو شہادت کا جو پیغام ہے اس پر عمل کرنا ہے اور اسلام کی سربلندی کے لئے کام کرنا ہے اس لئے ہمیں چاہئے کہ ہم اللہ کو راضی کرنے والے اعمال کریں ۔
جناب مولانا مفتی محمد شاہد قاسمی نے بھی خطاب کیا,
اس موقع پر خاص طور سے حافظ محمد نعیم صاحب حاجی محمد عقیل صاحب مولانا مبین صاحب قاسمی مولانا سلیم صاحب قاسمی مولانا صادر صاحب قاری بلال صاحب حافظ محمد شکیل صاحب حافظ محمد انعام اللہ صاحب حافظ محمد راشد صاحب حافظ محمد زاہد سیف الاسلام مدنی مولانا عبدالواجد صاحب قاسمی مولانا فضل رب صاحب قاسمی حافظ محمد احسان الحق صاحب مولانا خالد صاحب قاسمی حافظ محمد وسیم صاحب موجود رہے پر پروگرام کی نظامت مولانا عبدالماجد قاسمی نے انجام دئئے
مولانا محمد فضل رب قاسمی اور محمد ثانی سلمہ نے نعت پاک کا نذرانہ پیش کیا, اسکے علاوہ بڑی تعداد میں لوگوں نے شرکت کی اور پروگرام کو کامیاب بنایا!
توحید عالم فیضی
توحید عالم فیضیhttps://www.nawaemillat.com
روزنامہ ’نوائے ملت‘ اپنے تمام قارئین کو اس بات کی دعوت دیتا ہے کہ وہ خود بھی مختلف مسائل پر اپنی رائے کا کھل کر اظہار کریں اور اس کے لیے ہر تحریر پر تبصرے کی سہولت فراہم کی گئی ہے۔ جو بھی ویب سائٹ پر لکھنے کا متمنی ہو، وہ روزنامہ ’نوائے ملت‘ کا مستقل رکن بن سکتے ہیں اور اپنی نگارشات شامل کرسکتے ہیں۔
کیا آپ اسے بھی پڑھنا پسند کریں گے!

جواب چھوڑ دیں

براہ مہربانی اپنی رائے درج کریں!
اپنا نام یہاں درج کریں

- Advertisment -
- Advertisment -

مقبول خبریں

حالیہ تبصرے