گلشن شیر شاہ آبادی کمیٹی کی جانب سے دوسرا عالمی آن لائن مشاعرہ 26 جنوری 2021 بروز منگل رات ساڑھے آٹھ بجے منعقد کیا گیا

53

السلام علیکم ورحمۃ اللہ وبرکاتہ
گلشن شیر شاہ آبادی کمیٹی کی جانب سے دوسرا عالمی آن لائن مشاعرہ 26 جنوری 2021 بروز منگل رات ساڑھے آٹھ بجے منعقد کیا گیا جس میں مجھ جیسے نوآموز کو بھی اپنا کلام پیش کرنے کا ایک حسین موقع ملا جس کے لیے ہم کمیٹی کا شکر گزار ہیں۔

یہ مشاعرہ بہت ہی تاریخی اور یاد گار رہا، سبھی شعراء نے معیاری کلام پیش کیا اور ان سب شعراء کے کلام میں چار چاند لگا رہی محترم سراج عالم زخمی صاحب کی نظامت لائق تحسین رہی یہ اور بات ہے کہ نیٹ ورک کی بے وفائی نے ان سے درمیان ہی میں ہماری جدائی کرادی جس وجہ سے ان کا کلام سننے سے محروم رہے لیکن ان کی کمی جناب بیلن بلرامپوری صاحب پوری کردیے ان کے برمحل اشعار نے تو محفل کو قہقہوں میں ڈبو دیا۔
اس پر مسرت موقع پر مشاعرہ کی زینت رہی ملک وملت کی مایہ ناز شخصیات میں سے فضیلتہ الشیخ صلاح الدین مقبول المدنی حفظہ اللہ ؛ ڈاکٹر شمس کمال انجم حفظہ اللہ ومحترم ثناء اللہ صادق ساگر تیمی حفظہ اللہ رہے
اسی طرح اس حسیں موقع پر گلشن شیرشاہ آبادی کمیٹی کی جانب سے فضیلۃ الشیخ صلاح الدین مقبول مدنی حفظہ اللہ کی علمی وادبی خدمات کے اعتراف میں “مبارک حسین شیر شاہ آبادی ” ایوارڈ سند و شال پوشی کے ذرہعہ شیخ محترم کی حوصلہ افزائی کی گئی

اس عظیم کارنامہ پر خاکسار ضیاء رشیدی خصوصا شیخ مطیع الرحمن سلفی حفظہ اللہ اور گلشن شیرشاہ آبادی کمیٹی کے تمام ممبران خصوصا محترم نصیرالدین سراجی صاحب کا اور ان تمام رفقاء کا جنہوں نے اس کار خیر میں پیش قدمی کا مظاہرہ کیا
محترم عالم فیضی صاحب
محترم صادق انور اثری صاحب
محترم جمال اجمل صاحب
محترم صادق جمیل تیمی صاحب
اور ان تمام صاحبان کا صمیم قلب سے شکریہ ادا کرتا ہوں جنہوں نے اس مشاعرہ کو کامیاب بنانے میں پوری کوششیں کیں۔ مشاعرے کا آغاز حافظ کلیم اللہ سلفی ممبئی کی تلاوت کلام اللہ سے ہوا بعدہ محترم امجد اثری صاحب نے حمد باری تعالی پیش کیا اس کے سبھی شعراء نے اپنے کلام پیش کئے

شعراء کے منتخب اشعار
حمد
امجد اثری مدھوبنی
تو خالق ہے تو مالک ہے توہی ہم سب کا داتا ہے
تو ہے روزی رساں سب کا توہی سب کو کھلاتا ہے

صلاح الدین مقبول مدنی
امیری ہے یہی شاہی یہی تاج سلیمانی
کیا کرتے تھے ذکرخیر جو بن بازوالبانی

ڈاکٹر شمس کمال انجم
کٹورے میں سجا کر گڑ کی میٹھی کھیر لائے ہیں
ہم اپنے پن ڈرائیو میں تری تصویر لائیں ہیں

ثناء اللہ صادق ساگر تیمی
مجھ سے اک صاحب ایمان نے مسجد میں کہا
مسئلہ جیسا بھی ہو حل تو یہیں ہوتا ہے

ہدایت اللہ شمسی
رات بھر چیختے منظر نہیں سونے دیتے
صبح اٹھتا ہوں تو اخبار سے ڈر لگتا ہے

جمال اجمل فیضی
حق مانگنے کا وقت نہیں احتجاج سے
لینا ہے چھین کر کے لو گر عزم ہے جواں

بیلن بلرامپوری
پوچھتے ہیں راز کیا ہے فٹ ہو بیلن اس قدر
دھو رہا ہوں گھر کے کپڑے ہورہی ورزشیں

نصیرالدین سراجی
دعاوں میں تمہیں پوری جماعت یاد کرتی ہے
“صلاح الدین مدنی”تم کو یہ الفت مبارک ہو

ضیاء رشیدی
نشانی اپنی یادکی دیا وہ مجھ کو اس طرح
کہ جاتے جاتے ہاتھ میں مرے گلاب دے گیا

عالم فیضی
شرح غم کرتے رہے جو زندگی کے باب کی
رفتہ رفتہ ان سے میری اب محبت ہوگئ

صادق انور اثری نذیری
دنیا کے رنگ و روپ کے چکّر میں ڈال کر
سب کو انوکھے خواب دکھاتی ہے زندگی

ان شعراء کے علاوہ بہت سارے لوگ شریک محفل رہے
اللہ رب العالمین انتظامیہ کمیٹی اور ا سکے ذمہ داران کو دن دگنی رات چوگنی ترقی عطا فرمائے اور اسی طرح انہیں علم و ادب کے میدان میں کارہائے خدمات انجام دینے کی توفیق عطا فرمائے۔

ضیاء رشیدی
سانڈا سانتھا سنت کبیر نگر یوپی
منجانب : گلشن شیرشاہ آبادی کمیٹی