کریمہ بلوچ کی موت کوئی ‘مجرمانہ فعل’ کا نتیجہ نہیں: کینیڈا پولیس

94

کینیڈین پولیس نے دو روز قبل ٹورنٹو سے بلوچ سیاسی کارکن کریمہ بلوچ کی لاش برآمد ہونے کا معاملہ کیا تھا ، کسی جرم کے ارتکاب کی وجہ سے اس کا امکان ممکن نہیں تھا۔

ٹورنٹو پولیس کی بدعنوانی سے متعلق ایک بیان جاری ہے جس کی تحقیقات کے بعد پولیس افسران نے کہا کہ اس معاملے میں کسی جرم کا ارتکاب نہیں ہوا تھا اور نہ ہی کسی نے اور گڑبڑ کا نشانہ بنایا ہے۔

پولیس کے مطابق ابتدائی تحقیقات کے نتائج کریمہ بلوچوں کے اہل خانہ کو آگ آگاہ کیا۔

پولیس کا اس سے پہلے ایک بیان میں تھا

پاکستان کے صوبہ بلوچستان کے علاقوں سے تعلق رکھنے والا درد والی کریمہ بلوچ 2015 میں کینیڈا آئی کی زندگی۔

ان اہل اہل خانہ کے مطابق لاپتا افراد ، بلوچ جماعت اور طلبہ کے حقوق کے حصول کے لئے پاکستان میں رہائش پذیر کام کرنا مشکل تھا اور اہل خانہ اور ان کے اصرار پر کینیڈا میں رہائش پذیر کام کرنا تھا۔

پاکستان میں دہشت گردی کے واقعات میں بلوچ علیحدگی پسندوں کے تعلقات ختم کردیئے گئے ہیں

اہل خانہ کی بنیاد پر کریمہ کینیڈا میں رہائش پذیر سیاسی کارکنوں کی گمشدگیوں کا سلسلہ جاری ہے اور مظاہروں کی عمر اور اس آگ سے دیگر آگاہی پروگرام موجود تھے۔ ان کی بقول اس کے ساتھ ہی انہوں نے اپنی تعلیم میں بھی جاری رکھے ہوئے تھے۔

کریمہ کے شوہر ہمال حیدر نے میڈیا کو آگاہ کیا کہ وہ اتوار کو ٹورنٹو کے ایک پارک میں اقتدار کے بارے میں جانتے ہیں اور پھر ورور

ہم نے اس خبر کو ‘گارڈین’ کو کو انٹرویو میں بتایا ہے کہ “وہ یقین نہیں کرسکتا ہے۔ وہ ایک مضبوط عورت اور خوشگوار موڈ میں گھر سے نکلتی ہے۔”

کریمہ کی پراسرار واقعات کوئٹہ میں احتجاجی مظاہرے کرنے والے واقعات۔

 

کریمہ کی پراسرار واقعات کوئٹہ میں احتجاجی مظاہرے کرنے والے واقعات۔

حیدر کی بات تھی وہ کریمہ کے واقعات میں گڑبڑ کا امکان ممکن نہیں تھا۔

2015 اُنول اُن میں جب ان کے گھر سے کوئی گھر نہیں لیا گیا تو اس سے قبل ان دونوں لوگوں نے گھروں کو چھوڑا تھا۔

پاکستان کی سلامتی کے تحفظ پر بلوچستان میں انسانی حقوق کے خلاف ورزیوں اور جبری گمشدگیوں کو معطل کرنے کا عمل جاری ہے

البتہ پاکستانی فوج کا یہ مؤثر اقدام ہے کہ ہم سایہ ملک ہندوستان بلوچ علیحدگی پسندوں کی فن تعمیر کر رہے ہیں ہندوستان میں رہائش پذیر

کریمہ کی واقعہ کی خبروں کے بعد یہ قیاس آرائیاں شروع ہوجاتی ہیں کہ پاکستان کی سیکیورٹی کی حفاظت کے واقعات اگرچہ یہ واقعہ نہیں ہے تو پاکستانی شہری کو بدنام کرنے کے سازش کا معاہدہ کیا گیا تھا