کرناٹک وزیر اعلی کو بلیک میل کرنے والی سی ڈی کی وضاحت کریں ۔ عبدالحنان

39

بنگلور ۔( پریس ریلیز)۔ سوشیل ڈیموکریٹک پارٹی آف انڈیا ( ایس ڈی پی آئی ) کے ریاستی صدر عبدالحنان نے اپنے جاری کردہ اخباری اعلامیہ میں کہا ہے کہ گزشتہ کئی دنوں سے کرناٹک کی سیاست میں ایک خفیہ سی ڈی کے تعلق سے عوام بہت بے چین ہے ۔ سوال یہ پیدا ہوا ہے کہ یہ سی ڈی کس کے بارے میں ہے۔ ؟ ۔ کس کس کی سیاسی زندگی اس سی ڈی کے بلاک میل میں چھپی یے ؟ کس کس کی سیاسی زندگی اس سی ڈی کی وجہ سے ختم ہونے والی ہے ؟ اس سی ڈی میں کون شامل ہیں ۔ سی ڈی کو اب تک کیوں چھپایا گیا تھا ۔ اس سی ڈی کو اب واضح کرنے کا راز کیا ہے ۔ ریاست کرناٹک کے

کتنے وزرا اور سیاست دان اسی بلیک میل سیاست میں ملوث ہیں یہ تمام حقیقتیں عوام کے سامنے لانے کی ذمہ داری اچھے سیاستدانوں کی ،اچھی افسران کی ، اچھےمیڈیا کی اور ایجنسیوں کی ہے جو اب تک خاموش ہیں ۔ کرناٹک جو کوویڈ کے بعد معاشی بحران کا شکار ہے اسکول فیس کے لۓ والدین پریشان ہیں ۔ کسان ننگے بدن راستوں پر ہیں۔ نوجوان بیروزگار ہیں۔ ملازم لوگ اپنی نوکری کے لیے پریشان ہیں ۔

غیر قانونی طریقے سے معصوم نوجوانوں کو گرفتار کرکے ظلم ڈھایاجارہا ہے ۔ گاؤکشی قانون کو ترمیم کرکے غریبوں کے پیٹ پر لات مارا گیا ہے ۔ ایسے ماحول میں سرکار اور اپوزیشن دونوں بلیک میل اور اڈجسمنٹ کے ذریعے سے کرسیوں کی خریدوفروخت اور گندی سیاست سے عوام کو مایوس کر رہے ہیں۔ سوشیل ڈیمو کریٹک پارٹی آف انڈیا کے کرناٹک کے ریاستی صدر عبدالحنان نے عوام کو اس کے خلاف آواز بلند کرنے کی اپیل کی ۔