ہفتہ, 8, اکتوبر, 2022
ہوماسلامیاتپڑوسیوں کے حقوق

پڑوسیوں کے حقوق

عَنْ أَبِي ذَرٍّ، قَالَ قَالَ رَسُولُ اللَّهِ صلى الله عليه وسلم ‏ "‏ لاَ يَحْقِرَنَّ أَحَدُكُمْ شَيْئًا مِنَ الْمَعْرُوفِ وَإِنْ لَمْ يَجِدْ فَلْيَلْقَ أَخَاهُ بِوَجْهٍ طَلِيقٍ وَإِنِ اشْتَرَيْتَ لَحْمًا أَوْ طَبَخْتَ قِدْرًا فَأَكْثِرْ مَرَقَتَهُ وَاغْرِفْ لِجَارِكَ مِنْهُ ‏”‏ ‏﴿سنن الترمذی 1833﴾​

ترجمہ:-حضرت ابوذررضی اللہ عنہ سے روایت ہے کہ رسول اللہ ﷺ نے ارشادفرمایا:تم میں سے کوئی شخص بھی تھوڑی سی نیکی کومعمولی نہ سمجھے،اگرنیکی کاکوئی موقع نہ ملے تو اپنے بھائی کے ساتھ خندہ پیشانی سے مل لیاکرو(یہ بھی نیکی ہے) اور جب تم (سالن پکانے کی غرض سے) گوشت خریدو،یاسالن کی ہانڈی پکاؤتو شوربہ بڑھادیاکرواوراس میں کچھ نکال کراپنے پڑوسی کو دے دیاکرو۔

روزنامہ نوائے ملت
روزنامہ نوائے ملتhttps://www.nawaemillat.com
روزنامہ ’نوائے ملت‘ اپنے تمام قارئین کو اس بات کی دعوت دیتا ہے کہ وہ خود بھی مختلف مسائل پر اپنی رائے کا کھل کر اظہار کریں اور اس کے لیے ہر تحریر پر تبصرے کی سہولت فراہم کی گئی ہے۔ جو بھی ویب سائٹ پر لکھنے کا متمنی ہو، وہ روزنامہ ’نوائے ملت‘ کا مستقل رکن بن سکتے ہیں اور اپنی نگارشات شامل کرسکتے ہیں۔
کیا آپ اسے بھی پڑھنا پسند کریں گے!

جواب چھوڑ دیں

براہ مہربانی اپنی رائے درج کریں!
اپنا نام یہاں درج کریں

- Advertisment -
- Advertisment -

مقبول خبریں

حالیہ تبصرے