پنچایت انتخابات: گنتی معطل ہونے کی صورت میں بیلٹ پیپرز سیل کر دیے جائیں گے۔

46

کٹیہار: ریاستی الیکشن کمیشن کی ہدایات پر۔ پنچایت الیکشن۔ ووٹوں کی گنتی کا عمل پولنگ کے بعد دو دن کے وقفے سے شروع ہونا ہے۔ ہر مرحلے کے نتائج کا اعلان ووٹنگ کے ساتھ کیا جائے گا۔ ایسی صورت حال میں اگر ووٹوں کی گنتی کسی وجہ سے معطل کرنا پڑی تو بیلٹ پیپر اور پیپرز کو سیل کر دیا جائے گا۔ ریاستی الیکشن کمیشن نے پنچایت انتخابات کے حوالے سے ووٹوں کی گنتی کے حوالے سے ڈسٹرکٹ الیکشن آفیسر کم ڈسٹرکٹ مجسٹریٹ اودان مشرا کو بھی ہدایت دی ہے۔ ووٹوں کی گنتی ہر ممکن حد تک جاری رہے گی۔

اگر ووٹوں کی گنتی معطل کرنی ہے تو بیلٹ پیپر اور دیگر کاغذات کو سیل کر کے محفوظ رکھا جائے گا۔ اس دوران وہاں موجود امیدوار یا ان کے پولنگ ایجنٹ یا گنتی ایجنٹ اپنی مہریں اپنی مرضی سے لگائیں گے۔ جاری ہدایات میں کہا گیا ہے کہ الیکشن کے بعد ڈسٹرکٹ الیکشن آفیسر ووٹوں کی گنتی کے لیے تاریخ ، وقت اور جگہ کا فیصلہ کرے گا اور امیدوار اور اس کے پولنگ ایجنٹ کو آگاہ کرے گا۔ اس طرح کی گنتی کا نتیجہ مقررہ فارمیٹ میں کیا جائے گا۔ کمیشن کے مطابق امیدوار یا اس کی غیر موجودگی میں اس کا پولنگ ایجنٹ یا گنتی ایجنٹ بیلٹ پیپر کی دوبارہ گنتی کے لیے تحریری درخواست اپنی بنیاد کے ساتھ ریٹرننگ افسر یا اس کے مجاز افسر کو دے سکتا ہے۔ ضلع کے اہلکار پہلے ہی آزاد ہیں الیکشن میں ڈیوٹی سے۔ سیل میں درخواستیں آنا شروع ہو گئی ہیں۔ تاہم ایسے ملازمین کو انتخابی کام سے دور رکھا جائے گا ، جنہیں شدید بیماری ہو گی۔ ہیلتھ چیک اپ کے لیے میڈیکل ٹیم تشکیل دی گئی ہے۔