وزیرریل کے نام!

45

وزیرریل کے نام!
پٹنہ؛ریاستِ بہارکی راجدھانی ہے، پورنیہ، ارریہ، فاربس گنج،جوگبنی کے ہزاروں پڑھنے والے طلبہ یہاں رہ کر اپنی تعلیم حاصل کرتے ہیں،جبکہ پٹنہ بہارکی راجدھانی ہونے کی وجہ سے جوگبنی، ارریہ،اور پورنیہ سے ہردن لوگوں کی آمدورفت کا سلسلہ جاری رہتاہے،لیکن افسوس کی بات یہ ہے کہ پورنیہ،ارریہ،جوگبنی سے پٹنہ آنے اور جانے کےلئے سوائے بس کی سواری کے ان کے پاس کوئی انتظام نہیں ہے،حالانکہ بسوں میں حادثات کے امکانات بہت زیادہ ہیں،جس طرح پٹنہ سے دیگر اضلاع جانے کے لئے انٹرسیٹی کی سہولیات موجودہیں،اگر پٹنہ سے پورنیہ،ارریہ،جوگبنی اور،جوگبنی،ارریہ،پورنیہ سے پٹنہ تک انٹرسیٹی (ٹرین) کا انتظام ہوجائے تو نہ صرف ہزاروں، لاکھوں کی تعدادمیں یہاں تعلیم حاصل کررہے طلبہ کو آسانی ہوجائے گی،بلکہ روزمرہ دفتری کام کی غرض سے پٹنہ آنے والے ہزاروں لوگوں کے لئے سہولت ہوجائے گی،اور سرکارکے خزانہ میں بھی تعاون کی ایک بڑی شکل میہاہوجائے گی!
بھارت کے وزیرریل پیوش گویلPiyush Goyal@ جو ایک بھارتی سیاست داں بھی ہیں،ہم ان سے گذارش کرتے ہیں کہ اس جانب توجہ دیں،یہ صرف ہماری نہیں،بلکہ بہارکی راجدھانی پٹنہ میں تعلیم حاصل کررہے ہزاروں طلبہ،اساتذہ،اوردفتری کام کی غرض سے جوگبنی،ارریہ،پورنیہ سے آنے،جانے والے ہزاروں پریشان حال لوگوں کی آواز ہے،بہارکے مکھیہ منتری جناب نتیش کمار Chief Minister of Bihar سے بھی ہم اپیل کرتے ہیں کہ آپ اس جانب خاص توجہ فرمائیں،پورنیہ کے ایم پی جناب سنتوش کشواہا
،ارریہ کے ایم پی پردیپ کمارسنگھ سے بھی ہم یہی اپیل کرتے ہیں کہ آپ ہماری ان توجہات پر خاص دھیان دیں!
#خالدانورپورنوی