نکاح کو آسان بنانے سے زنا مشکل ہوگا : محمد حسان ندوی

81

دھن گھٹا ( سنت کبیر نگر)
نکاح سنت نبوی ہے،جس طرح انسان کو کھانے پینے کی خواہشات ہوتی ہیں،اسی جنسی تقاضے ہوتے ہیں،بھوک اور پیاس کے وقت کھانا پینا مشروع ہے،ٹھیک اسی طرح نفسا نی خواہشات کی تکمیل کے لئے شریعت نے نکاح مشروع کیا ہے،نکاح جتنا آسان بنایا جائے گا،زنا اتنا ہی مشکل ہوجائے گا،لیکن نکاح کو مشکل بنادیا گیا تو زنا کا رواج ہوجائے گا اور زنا عام ہوجائے گا،مذکورہ خیالات کا اظہار مولانا محمد حسان ندوی ناظم مدرسہ عربیہ مصباح العلوم مہولی نے تحصیل دھن گھٹا حلقہ واقع موضع مہادیوا میں جنید احمد ابن سمیع اللہ ساکن مہولی کی تقریب نکاح میں خطبہ نکاح سے قبل لوگوں سے اپنے خطاب میں کیا،
مولانا نے کہا آج جو زنا اور جنسی زیادتیوں کی خبریں آرہی ہیں اور روزآنہ اخبارات میں اس طرح دو چار واقعات شائع ہوتے ہیں،اس کا واحد حل وقت سے بچے اور بچیوں کے نکاح سے حل ہوسکتا ہے،انہوں نے کہا اگر بچوں اور بچیوں کا نکاح بلوغت کے بعد والدین جلدی نہیں کررہے ہیں اور وہ بچے اور بچیاں غلط روش اختیار کررہی ہیں یا ان سے گناہ سرزد ہورہاہے تو اس کا وبال اور گناہ والدین کو بھی ملے گا،مولانا کہا قابل مبارکباد ہیں وہ لوگ جو وقت پر اپنے بچے اور بچیوں کا نکاح کردیتے ہیں،
اس موقع پر جنید احمد،نوشاد احمد،محمد اکرم،سمیع اللہ،آفتاب احمد،ابوسعد ابن رئیس احمد،فرحان ارشد،اشفاق احمد،سمیع اللہ،حفیظ اللہ،کلیم اللہ،سعید اللہ،عبد الرحمن پردھان،اور رضی احمد کے علاوہ کثیر تعداد میں لوگ شریک رہے
عقیل احمد خان