مولانا نورالسلام ندوی کو ڈاکٹریٹ کی ڈگری ملنے پر اعزاز سے نوازا گیا

107

 

دربھنگہ:16نومبر
بہار کی علمی وادبی حلقوں میں اپنی نمایاں شناخت اور پہچان بنا چکے نوجوان صحافی و منصف مولانا نورالسلام ندوی کو پٹنہ یونیورسٹی، پٹنہ سے ڈاکٹریٹ کی ڈگری تفویض ہونے پر دربھنگہ شہر کے معہدالطیبات میں منقعدہ ایک اعزازی تقریب میں انہیں اعزاز سے نوازا گیا-
اس موقع پر استاذ شاعر و ادبی تنظیم بزم رہبر دربھنگہ کےصدر ڈاکٹر منور راہی نے کہاکہ متھلانچل کی سرزمیں نے ہردور میں ایسے افراد تیارکئے ہیں جس میں ملک و ملت کی بھرپور رہنمائی کی صلاحیت ہوتی ہے نئی نسل میں نورالسلام ندوی کا نام بھی اس فہرست شامل ہے، انہوں نے اپنی علمی صلاحیتوں سے یہ ثابت کیاہے کہ وہ اس اعزاز کے حقیقی حقدار ہیں، وژن انٹرنیشنل اسکول سہرسہ کے ڈائریکٹر شاہنوازبدرقاسمی نے

IMG 20201116 WA0000 1

کہاکہ نورالسلام ندوی موجودہ دور کے نوجوانوں کیلئے ایک آئیڈیل ہیں انہوں نے کم عمری جو مقبولیت اور محبوبیت حاصل کی وہ ایک قابل ستائش ہے، نورالسلام ایک اصول پسندی اور منصوبہ بندی کے ساتھ زندگی جینے والے انسان ہیں، سادگی اور حقیقت پسندی ان کی اصل شناخت ہے، انہوں نے بہت خاموشی کے ساتھ افراد سازی پر جو محنت کی ہے وہ یقیناً قابل ستائش ہے_
بصیرت آن لائن کے چیف ایڈیٹر مولانا غفران ساجد نے اپنے صدارتی خطاب میں کہا کہ مجھے اس بات کی بیحد خوشی ہے کہ نورالسلام ندوی کا شمار ان کے ہم عصروں میں بھی ایک معتبر اور سنجیدہ شخصیت کی ہے جو اپنے آپ میں کمال ہے،یہ شروع سے ہی ذہین اور محنتی رہے ہیں لکھنے کا ذوق بچپن سے ہی تھا،انہوں نے مبارک باد پیش کرتے ہوئے روشن مستقبل کی دعائیں دیں، ای ٹی وی بھارت سے وابستہ سیمانچل کے مشہور صحافی عارف اقبال نے بھی نورالسلام ندوی کو ڈاکٹریٹ کی ڈگری ملنے پر خوشی کا اظہار کرتے ہوئے مبارکباد پیش کی اور کہاکہ ندوی صاحب ہمارے محسنوں میں ہیں، اصول پسندی کے ساتھ تعلقات نبھانا انہیں خوب آتا ہے،ان کی رہنمائی بھی قابل تعریف ہوتی، ان کے علاوہ نوجوان قلمکار و روزنامہ انقلاب کے نمائندہ احتشام الحق نے نیک خواہشات پیش کرتے ہوئے کہا کہ یہ ان کی آخری منزل نہیں ہے، ہماری دعا ہے کہ وہ اور بلندیوں پر پہنچیں اور اپنے مقاصد میں کامیاب ہوں،بصیرت آن لائن سے وابستہ اور معروف صحافی مولانا نازش ہما قاسمی نے انہیں مبارکباد دیتے ہوئے کہا کہ مولانا نورالسلام ندوی صلاحیت اورصالحیت کے جامع ہیں،مولانا آفتاب غازی قاسمی بانی وناظم معہد الطیبات نے اپنی تقریر میں کہا کہ جب میں نےادارہ قائم کیا تھا اس وقت شہر کے لوگوں سے وعدہ کیا تھا کہ میں علمی وادبی شخصیات سے شہر والوں کوروبرو کرانے کا ذریعہ بنوں گا،الحمدللہ معہد الطیبات میں علماء، دانشور، صحافی وادیب حضرات کی آمد اور ان سے استفادہ کا سلسلہ جاری رہتا ہے، یہ اسی سلسلہ کی ایک کڑی ہے،معہد الطیبات میں دربھنگہ شہر کی جانب سے مولانا نورالسلام ندوی صاحب کا استقبال ہے،گرچہ یہ اسی ضلع کے ہیں لیکن ان کا علمی وادبی ذوق شوق اور صلاحیت و قابلیت ہم تمام لوگوں کے لیے قابل رشک ہے، اللہ تعالیٰ تعالی انہیں مزیر علمی وعملی ترقیات سے نوازے،
اس موقع پر صحافی وسماجی کارکن شاہنوازبدرقاسمی کو بھی حالیہ اسمبلی انتخابات میں ووٹروں کے درمیان بیداری پیدا کرنے اور مسلمانوں کی رہنمائی کرنے کے لیے مومنٹو سے نوازا گیا، اس اعزازی تقریب میں شہر کے دیگر معزز حضرات بھی موجود تھے_