بدھ, 5, اکتوبر, 2022
ہوممضامین ومقالات*مولانا جلال الدین عمری اور نئی فکر*

*مولانا جلال الدین عمری اور نئی فکر*

*مولانا جلال الدین عمری اور نئی فکر*

ڈاکٹر محمد رضی الاسلام ندوی

سمیناروں میں صرف مدّاحی نہیں کی جاتی ، بلکہ مثبت تنقید بھی کی جاتی ہے اور اسے پسند کیا جاتا ہے _ مولانا سید جلال الدین عمری پر سمینار میں مقالہ نگاروں نے عموماً ان کی خدمات کو سراہا اور ان کی تحسین کی ، جب کہ بعض مقالہ نگاروں نے ان کی تصنیفات میں کچھ کمیوں کی نشان دہی کی _ اصحابِ مقالات کے علاوہ اجلاسوں کے صدور نے بھی اپنے خیالات کا اظہار کیا ، جن میں انھوں نے مولانا کی خدمات پر عمومی تبصرے کیے _ بعض حضرات نے صراحت سے کہا کہ مولانا عمری نے بہت لکھا ہے ، لیکن انھوں نے کوئی نئی فکر نہیں پیش کی _ اس پر سامعین میں سے بعض نوجوان یہ کہتے ہوئے سنے گئے کہ معاصرت بھی عجیب چیز ہے ، آسانی سے خوبیوں کا اعتراف نہیں کرنے دیتی _ میں یہ کہنے کی جرات نہیں رکھتا ، البتہ یہ ضرور کہوں گا کہ ان حضرات کو اپنی شدید مصروفیات کی بنا پر مولانا کی کتابوں کا ٹھہر کر اور غور سے مطالعہ کرنے کا موقع نہیں ملا _ مولانا کی متعدد کتابوں میں عصری مسائل سے بحث کی گئی ہے _ ان میں ان کی تحقیقی شان نمایاں ہوتی ہے اور ان کی ایسی آرا سامنے آتی ہیں جو فقہائے متقدّمین کے یہاں نہیں ملتیں _ مثال کے طور پر چند آرا پیش کی جاتی ہیں :
* غیر مسلموں کو سلام کیا جاسکتا ہے _
* عورت ، معاشی تنگی نہ ہو تب بھی ، معاشی آسودگی ، خدمت خلق یا خود کو مصروف رکھنے کے لیے ملازمت کرسکتی ہے _
* عورت کی صحت متاثر ہو یا چھوٹے بچوں کی پرورش میں دشواری ہو تو منع حمل کی تدابیر اختیار کی جاسکتی ہیں _
* کفو کو ذات برادری سے جوڑنا درست نہیں ، دین داری کو ترجیح دی جانی چاہیے _
* دار الاسلام اور دار الکفر کی اصطلاحات کی اب معنویت باقی نہیں رہ گئی ہے _
* علاج معالجہ میں وقتِ ضرورت مُحرّمات سے استفادہ کیا جاسکتا ہے _
وغیرہ

ایک مقالہ نگار نے فرمایا کہ مولانا عمری نے معاشیات کے موضوع پر کچھ نہیں لکھا ہے _ یہ بات شاید انھوں نے اس لیے کہی کہ معاشیات پر مولانا کے مضامین ان کی نظر سے نہیں گزرے _ یہ مضامین بہ عنوان : اسلام کا نظریہ مال ، ذرائع دولت ، دولت کا استعمال ، سامان تعیش اور اسلام ماہ نامہ زندگی رام پور میں شائع ہوئے ہیں _ انہیں کتابی صورت میں شائع کیا جاسکتا ہے _ اس کے علاوہ بیوی کا نفقہ ، مطلقہ کا نفقہ ، وراثت اور دیگر موضوعات پر ، جو اسلام کے معاشی نظام سے متعلق ہیں ، مولانا کے مضامین ہیں _

توحید عالم فیضی
توحید عالم فیضیhttps://www.nawaemillat.com
روزنامہ ’نوائے ملت‘ اپنے تمام قارئین کو اس بات کی دعوت دیتا ہے کہ وہ خود بھی مختلف مسائل پر اپنی رائے کا کھل کر اظہار کریں اور اس کے لیے ہر تحریر پر تبصرے کی سہولت فراہم کی گئی ہے۔ جو بھی ویب سائٹ پر لکھنے کا متمنی ہو، وہ روزنامہ ’نوائے ملت‘ کا مستقل رکن بن سکتے ہیں اور اپنی نگارشات شامل کرسکتے ہیں۔
کیا آپ اسے بھی پڑھنا پسند کریں گے!

جواب چھوڑ دیں

براہ مہربانی اپنی رائے درج کریں!
اپنا نام یہاں درج کریں

- Advertisment -spot_img
- Advertisment -
- Advertisment -

مقبول خبریں

حالیہ تبصرے