بدھ, 5, اکتوبر, 2022
ہوماعلان واشتہاراتمنظورکردہ تجویز(2)

منظورکردہ تجویز(2)

منظورکردہ تجاویز
بموقع اجلاس مجلس عمومی رابطہ مدارس اسلامیہ عربیہ بہار
شاخ:- کل ہند رابطہ مدارس اسلامیہ عربیہ دارالعلوم دیوبند
مہمان خصوصی: حضرت مولاناشوکت علی صاحب قاسمی،بستوی،دامت برکاتہم ناظم عمومی کل ہند رابطہ مدارس اسلامیہ عربیہ
زیرصدارت:جناب مولانامرغوب الرحمن صاحب قاسمی دامت برکاتہم ،صدررابطہ مدارس اسلامیہ عربیہ بہار
منعقدہ:مورخہ 19؍ربیع الثانی1443ھ مطابق 25؍نومبر2021 ،بروز جمعرات
بمقام:جامعہ مدنیہ سبل پورپٹنہ

(2) مدارس اسلامیہ کےنظام تعلیم وتربیت پرتجویز
مدارسِ اسلامیہ؛ حفاظت دین کے قلعے، اور علوم اسلامیہ کے سرچشمے ہیں،ان کا بنیادی مقصد ایسے افرادتیار کرناہے جو ایک طرف اسلامی علوم کے ماہرین ہوں، دینی کردار کے حامل، اور فکری اعتبار سے صراط مستقیم پر گامزن ہوں، تودوسری طرف وہ مسلمانوں کی دینی واجتماعی قیادت کی صلاحیت سے بہرہ ور ہوں، اس معیارکے باکردار افراد تیار کرنے کےلئے ضروری ہے کہ مدارس اسلامیہ کے نظام تعلیم وتربیت کو مزید فعال اور مستحکم بنایا جائے ، طلبہ کی تعلیم وتربیت ، اور استعداد سازی پر بھر پور توجہ مرکوز کی جائے ۔
اس کے لئے مندرجہ ذیل امور کا اہتمام کیاجائے۔
(الف) جہاں دارالعلوم دیوبند کا مکمل نصاب جاری نہیں ہوسکا ہے وہاں یہ نصاب جاری کیاجائے ۔
(ب) تعلیمی معیار بلند کرنے کےلئے مدرسین کی تدریسی تربیت اور تدریب کا انتظام کیاجائے، اس مقصد کے لئے صوبائی رابطہ کے ماتحت ہر علاقہ کے مرکزی مدارس میں تربیتی کیمپ منعقد کیے جائیں۔
(ج) نحو وصرف کی تعلیم اور تمرین عربی پر خاص توجہ دی جائے، ابتدائی کتب پختگی کے ساتھ یاد کرائی جائیں اور قواعد کے اجراء پر بطور خاص دھیان دیا جائے ۔
(د) سال سوم عربی تک پابندی سے ماہانہ امتحان کا نظام قائم کیاجائے ۔
(ھ) تعلیمی سال کے متعینہ اوقات میں اعتدال کے ساتھ مقررہ نصاب کی تکمیل کو لازم قرار دے کراس پر عمل کو یقینی بنایاجائے، دوران تدریس اختصار کے ساتھ کتاب کے حل وتفہیم پر توجہ دی جائے۔
(و) طلبہ کو مطالعہ وتکرار کا عادی بنایاجائے اور ان کو تکرار کا طریقہ سکھایاجائے ۔
(ز)تربیت کی عمدگی کے لئے دارالاقامہ کے نظام کو فعال ومتحرک بنایاجائے ، اس کے تحت طلبہ کی اسلامی وضع قطع اور دینی واخلاقی تربیت کا اہتمام کیاجائے، ان کی سخت نگرانی کی جائے اور خارج اوقات میں ان کی سرگرمیوں پر نظر رکھی جائے۔

روزنامہ نوائے ملت
روزنامہ نوائے ملتhttps://www.nawaemillat.com
روزنامہ ’نوائے ملت‘ اپنے تمام قارئین کو اس بات کی دعوت دیتا ہے کہ وہ خود بھی مختلف مسائل پر اپنی رائے کا کھل کر اظہار کریں اور اس کے لیے ہر تحریر پر تبصرے کی سہولت فراہم کی گئی ہے۔ جو بھی ویب سائٹ پر لکھنے کا متمنی ہو، وہ روزنامہ ’نوائے ملت‘ کا مستقل رکن بن سکتے ہیں اور اپنی نگارشات شامل کرسکتے ہیں۔
کیا آپ اسے بھی پڑھنا پسند کریں گے!

جواب چھوڑ دیں

براہ مہربانی اپنی رائے درج کریں!
اپنا نام یہاں درج کریں

- Advertisment -spot_img
- Advertisment -
- Advertisment -

مقبول خبریں

حالیہ تبصرے