مفتی حسین کی والدہ محترمہ حجن انوری، و مولانا سراج الدین مالپوری کی وفات سے علاقہ میوات میں غم کی لہر

94

نوائے ملت نیوز میوات ( مبارک میواتی آلی میو )
میوات کے نوجوان عالم دین مفتی حسین اندھولہ کی والدہ محترمہ بیگم 86 برس کی عمر میں انتقال کر گئیں، آج انہوں نے صبح آخری سانس لیا،آج عصر کی نماز کے بعد اسے اندھرولہ گاؤں کے قبرستان میں سپرد خاک سپرد خاک کردیا گیا انوری بیگم کے چار بیٹے، دو بیٹیاں تھیں، انوری کی پیدائش میوات کے ایک ایسے گھرانے میں ہوئی ہے جہاں قرآن پاک کی آواز آتی رہی ہے اور ہمیشہ ذکر واذکار کی مجلسیں لگی رہتی تھی، مولانا عبد اللہ مرحوم مالپوری کی صاحبزادی، مفتی عبدالرشید مرحوم اور مولانا انوار مالپوری کی بہن تھیں، جبکہ مفتی مسعود صاحب کی پھوپی تھی، انوری بیگم ہزاروں لڑکیوں کو قرآن پاک کی تعلیم دے چکی ہیں،قرآن مجید کی تلاوت خاص عادت تھی، وہ پڑوسیوں پر خرچ کرنے میں سرفہرست تھی، وہیں مولانا سراج الدین مالپوری کے انتقال پر میوات کے عظیم علمائے کرام نے غم کا اظہار کیا ہے انوری بیگم اور مولانا سراج الدین کی وفات سے میوات میں غم کی لہر دوڑ گئی ہے۔انکے لئے ایصال ثواب کا سلسلہ جاری ہے, میوات کے بزرگ عالم دین مولانا انوار مالپوری نے کہا انوری بہن صوم وصلاۃ کی ہمیشہ پابند رہیں اور پڑوسیوں کا برابر خیال رکھتی تھی، انکے انتقال پر قاری محمد ہاشم مہتمم دار العلوم عبدیہ ہتھین، مولانا عمران گھسینگا ناظم تعلیمات دار العلوم مہتابیہ نگینہ، میوات لیٹیسٹ گروپ، میواتی تہذیب و ثقافت گروپ، مولانا حکیم الدین اشرف اٹاوڑی نائب صدر جمعیت علماء متحدہ پنجاب،مولانا اسلم معینی آلی میو، مولانا سلمان مفتاحی آلی میو،مفتی محمد وسیم قاسمی آلی میو، سمیت دیگر سینکڑوں علماء کرام نے مولانا سراج الدین مرحوم مالپوری،حجن انوری بیگم کی وفات پر دکھ کا اظہار کیا اور ایصال ثواب بھی کیا سبھی نے کہا اللہ تعالیٰ مرحومین کی مغفرت فرمائے اور لواحقین کو صبر جمیل عطا فرمائے