مفتی جسیم اختر اور اُنکے ساتھیوں کی جانب سے غریبوں میں رمضان کٹ تقسیم کیا گیا۔

49

 

سیتا مڑھی محمّد سُلطان اختر

رمضان المبارک کے موقع پر غربا کے لئے رمضان کٹ تقسیمِ کیا گیا۔ سال گزشتہ کا رمضان شریف بھی لاک ڈاؤن کا نذر ہوگیا اور اس سال بھی کرونا کی دوسری لہر نے ہرشخص کو پریشان کردیا گذشتہ سال تو پسماندہ رقم لوگوں کے پاس تھی جس سے کسی حد تک لوگوں نے اسے برداشت کیا مگر اس مرتبہ کے کرونا نے انسان کو کہیں کا نہیں رکھا اور خاص کر رمضان شریف کے مقدس مہینہ میں جہاں مسلمانوں کے یومیہ اخراجات بھی بڑھ جاتے ہیں اور ساتھ ہی عید کی تیاری بھی کرنی پڑتی ہے۔ گزشتہ سالوں کی طرح اس سال بھی بحمدہ تعالیٰ حاجی غالب و حاجی آفتاب صاحب،مفتی جسیم اختر اور اُنکے ہمنوا کے توسط سے سیتا مڑھی کے فعال و متحرک غریب پرور مفتی جسیم اختر اور اُنکے والد محترم حاجی محمد مرتضیٰ صاحب نے اپنی دیرینہ روایات کو برقرار رکھتے ہوئے قریب 150 ا فطارکٹ غریبوں میں تقسیم کیا افطار کٹ میں خوردنی اشیاء دی گئیں۔ کرونا وائرس وبا کے وقت سے اب تک مسلسل ہرسال غریبوں،محتاجوں اور بیواؤں کے درمیان رمضان شریف کے مقدس مہینہ میں افطار کٹ،عیدی کٹ اور موسم سرما میں گرم کپڑے جیسے سوئٹر،کمبل اور گرم چادر مفتی جسیم اختر اور اُنکے ساتھیوں کی جانب سے تقسیم کئے جاتے ہیں جس میں خاص طور پر حاجی غالب صاحب،حاجی آفتاب صاحب، ماسٹر صابر مہاراشٹر،محمد محبوب بچھار پوری،مولانا شکیل احمد کا اہم رول رہتا ہے ۔اور آئندہ بھی ان شاءاللہ یہ سلسلہ جاری رہے گا ۔
اس بار ماشاءاللہ اِن لوگوں کی جانب سے 150 غریب مرد اور عورتوں خوردنی اشیاء دئیے جس کے لئے الحاج قاری سُلطان اختر اور الحاج ماسٹر محمّد مرتضیٰ صاحب نے سبھوں کا شکریہ ادا کیا ہے ۔ یہ رمضان کٹ حسن پور برہروا کے غریبِ و غربا سے لیکر مداری پور،مرزا پور،یحییٰ پور کے تمام غریبوں کہ خاص خیال رکھا گیا۔۔
اِس موقع پر تقسیم کار میں محمّد ریاض،محمد شمیم اختر،عبدالقدیر،الحاج ماسٹر محمّد مرتضیٰ صاحب موقع پر بذات خود موجود تھے اور اپنی نگرانی میں غربا تک خوردنی اشیاء تقسیم کروایا۔