بدھ, 5, اکتوبر, 2022
ہوماعلان واشتہاراتمحبت واتحاد کے داعی مولانا کلیم صدیقی کی گرفتاری افسوس ناک:نائب امیرشریعت

محبت واتحاد کے داعی مولانا کلیم صدیقی کی گرفتاری افسوس ناک:نائب امیرشریعت

ملک کے مشہور عالم دین کی گرفتاری پر پورے ملک میں غم وغصہ ، نائب امیر شریعت نے جلد رہائی کا کیا مطالبہ

(پھلواری شریف ، 23 ستمبر : پریس ریلیز )ملک کے مشہور عالم دین اتحاد و محبت کے داعی مولانا محمد کلیم صدیقی کی اتر پردیش اے ٹی ایس کے ذریعہ گرفتاری اور ان کو عدالتی تحویل میں بھیجے جانے پر پورے ملک کی عوام میں غم و غصہ ہے۔ امارت شرعیہ بہار، اڈیشہ وجھارکھنڈ کے نائب امیر شریعت حضرت مولانا محمد شمشاد رحمانی صاحب نے اس گرفتاری پر سخت رد عمل کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ مولانا پر جبراً تبدیلیٔ مذہب کا الزام غلط ہے ، مولانا نے ہمیشہ محبت ،اتحاد اور بھائی چارے کی دعوت دی ہے ۔ ملک کے ہر طبقہ میں انہیں عزت و احترام کی نگاہ سے دیکھا جا تا ہے ۔ جن لوگوں نے اسلام قبول کیا ہے ، انہوں نے خود اپنی مرضی سے بلا کسی جبر و دباؤ اور لالچ کے اپنے ضمیر کی آواز پر، اسلامی تعلیمات اور مولانا کے اخلاق کریمانہ سے متاثر ہو کر اسلام کو اپنایا ہے ۔ اس لیے جبری تبدیلیٔ مذہب کا الزام لگا کر بی جے پی اتر پردیش کے انتخابی ماحول کو گرم کرنا اور سیاسی فائدہ حاصل کرنا چاہتی ہے ۔

واضح ہو کہ 21 ستمبر کو مولانا اپنے کچھ رفقاء کے ساتھ ایک نجی پروگرام میں میرٹھ آئے تھے ، وہیں سے واپسی پر انہیں اے ٹی ایس نے گرفتار کر لیا۔ پولیس کے ذریعہ عدالت میں ان کو ریمانڈ پر لینے کی درخواست کی گئی تھی ، جسے عدالت نے فی الحال مسترد کر دیا ہے اور انہیں چودہ دنوں کی عدالتی تحویل میں بھیج دیا ہے ۔

حضرت نائب امیر شریعت نے اپنے بیان میں کہا کہ ہندوستان کے آئین نے یہاں رہنے والے تمام شہریوں کو اپنے مذہب پر عمل پیرا ہونے اور اس کے تعلیمات کو عام کرنے کی اجازت دی ہے اور یہ کوئی قانونی جرم نہیں ہے ۔مولانا کلیم صدیقی نے ہمیشہ ہندو مسلم اتحادکی بات کی ہے، بین المذاہب دوریوں کو ختم کرنے میں مولانا کی کوششیں قابل ستائش ہیں ،سرکاری تفتیشی ایجنسیوں کا ناجائز استعمال کر کے ایسی شخصیتوں پرشکنجہ کسنا اتحاد اور بھائی چارے کی کوششوں کو بڑا نقصان پہونچانے والا عمل ہے ۔ حکومت کو اس سے باز رہنا چاہئے ۔انہوں نے عدالت سے اپیل کی کہ جلد از جلد مولانا کو رہا کرنے کا حکم دے اور غلط طریقہ سے مذہبی شخصیات کو پریشان کرنے کی روش اپنانے والی یوپی پولیس کی سخت سرزنش کرے ۔

روزنامہ نوائے ملت
روزنامہ نوائے ملتhttps://www.nawaemillat.com
روزنامہ ’نوائے ملت‘ اپنے تمام قارئین کو اس بات کی دعوت دیتا ہے کہ وہ خود بھی مختلف مسائل پر اپنی رائے کا کھل کر اظہار کریں اور اس کے لیے ہر تحریر پر تبصرے کی سہولت فراہم کی گئی ہے۔ جو بھی ویب سائٹ پر لکھنے کا متمنی ہو، وہ روزنامہ ’نوائے ملت‘ کا مستقل رکن بن سکتے ہیں اور اپنی نگارشات شامل کرسکتے ہیں۔
کیا آپ اسے بھی پڑھنا پسند کریں گے!

جواب چھوڑ دیں

براہ مہربانی اپنی رائے درج کریں!
اپنا نام یہاں درج کریں

- Advertisment -spot_img
- Advertisment -
- Advertisment -

مقبول خبریں

حالیہ تبصرے