جمعرات, 6, اکتوبر, 2022
ہوماعلان واشتہاراتفتنہ جہیز اور نشہ سے پاک سماج کی تشکیل کے لئے جمعیت...

فتنہ جہیز اور نشہ سے پاک سماج کی تشکیل کے لئے جمعیت علماء ارریہ کی مہم زوروں پر

رپورٹ:محمداطہرالقاسمی
13/ دسمبر 2021
_________
بیٹیوں کو رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم نے رحمت قرار دیا تھا مگر ہم نے انہیں سامان زحمت بناڈالا،بیٹیاں سماج کی شفقتوں کی محتاج تھیں مگر سماج آج ایسا سفاک و ظالم بن کر کھڑا ہوگیا ہے کہ بیٹیاں آج مرتد ہو رہی ہیں،نکاح کے نام پر سماج کاروباری بن چکا ہے اور موٹی موٹی رقمیں،مہنگی مہنگی گاڑیاں،لمبی چوڑی بارات،خوبصورت شادی کارڈز،رنگ برنگے شامیانے،انواع و اقسام کے فرمائشی کھانے اور ان ان سب پر دولہے بابو اور ان کے باپ اور بہونئ کے ناز نخرے سے ایسا لگتاہے کہ بیٹی والے ان سبھوں کے قرض دار ہیں۔
یہ باتیں جمعیت علماء ہند و جمعیت علماء بہار کی ہدایت پر جمعیت علماء ارریہ کے زیراہتمام نشہ مخالف اور آسان و مسنون نکاح مہم کے تحت جمعیت علماء بلاک رانی گنج کی ایک ٹیم کے ساتھ بلاک کے شکریلی گاؤں میں کل گذشتہ شب منعقد اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے احقر محمد اطہر القاسمی نے کہیں۔
احقر نے اپنے خطاب میں مسلمانوں کے ایک جم غفیر سے کہا کہ آپ آج نکاح کے نام پر سماج کی بیٹیوں کے آگے بھیک کے دامن پھیلا رہے ہیں یاد رکھئےکل آپ کے دروازے پر بھی کوئی بندہ آپ کی بیٹی کو قبول کرنے کے لئے بھیک مانگے گا اور آپ بھی مندر و مسجد کی چوکھٹوں پر بیٹی کی شادی کے لئے دامن پھیلانے پر مجبور ہوں گے۔انہوں نے کہاکہ آج فتنہ جہیز کے نام پر سماج میں آگ لگی ہوئی ہے اور آپ ٹکٹکی باندھے ہاتھ پر ہاتھ دھرے اس لئے کھڑے ہیں کہ یہ میرا نہیں کسی دوسرے کا مسئلہ ہے؛لیکن آگ جب لگتی ہے تو تیرے میرے کے فرق کو مٹاتے ہوئے پورے گاؤں کو جلاکر خاکستر کردیتی ہے۔
احقر نے کہاکہ سماج کے امراء و رؤساء طبقےکو آسان و مسنون نکاح کی مہم کو کامیاب بنانےکے لئے آگے آنا ہوگا پھر متوسط اور غریب طبقہ خود بخود اس جنجال سے باہر نکل جائے گا۔
بندہ نے اپنے ڈیڑھ گھنٹے کی گفتگو میں ایک ایک فرد سے عہد لیا کہ آج سے نشہ سے پاک سماج کی تشکیل کے ساتھ روپے پیسے کے لین دین اور شادی کے دیگر تمام تر لوازمات و فضولیات سے پاک اپنے نکاح کو آسان و مسنون بنائیں گے اور جمعیت علماء کی تحریک کو کامیاب بنائیں گے۔
اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے رانی گنج بلاک کے سیکریٹری مفتی دلشاد احمد نعمانی نے کہا کہ آج ملک کا ایک بڑا طبقہ نشہ اور نکاح کی فضول خرچیوں میں مبتلا ہے؛جمعیت علماء ہند نے بروقت قدم اٹھایا اور پورے ملک میں اس کے خلاف مہم چلانے کا فیصلہ لیا،آپ موہنی پنچایت کے شکریلی گاؤں والے خوش نصیب ہیں کہ جمعیت علماء ارریہ کی پوری ٹیم آپ کے یہاں حاضر ہے اور آپ کے شانہ بشانہ چل کر ان بیماریوں سے سماج کو پاک کرنے میں اپنی قربانی پیش کررہی ہے۔
بلاک کے نائب سکریٹری مولانا محمد ساجد حسین ندوی نے کہا کہ ہم نے اپنی قیمت کو نہیں پہچانا،ہمارا کام تو یہ تھا کہ ہم دوسروں کو دعوت دیتے لیکن افسوس کہ ہم اپنے ہی بھائیوں کو اپنی اصلاح کے دعوت دینے پر مجبور ہو گئے ہیں،کاش اس دعوت کو بھی آپ قبول کرلیتے تو یہ بھی ہماری کامیابی ہوتی۔

فتنہ جہیز اور نشہ سے پاک سماج کی تشکیل کے لئے جمعیت علماء ارریہ کی مہم زوروں پر

رانی گنج بلاک کے صدر بزرگ عالم دین مفتی نعیم الدین ندوی نے کہا کہ خطۂ سیمانچل کے انتہائی فعال بےلوث جفاکش اور سرگرم عمل عالم دین مفتی محمد اطہر القاسمی نائب صدر جمعیت علماء بہار کی قیادت میں ہم لوگ مسلسل یہ مہم چلارہے ہیں اور اپنے ذاتی اخراجات پر گاؤں گاؤں اور علاقہ علاقہ وفود کے ساتھ حاضر ہوکر سماج سے دست بستہ درخواست کررہےہیں کہ خدا را اب جب کہ ہمارا سماج نشہ اور رسم جہیز کے شکنجے میں بری طرح پھنس چکا ہے؛اگر اب بھی ہم ان معاشرتی جرائم سے سماج کو پاک نہیں کرپائے تو یاد رکھئے کہ آگے مزید خطرات منہ کھولے کھڑے ہیں۔
انہوں نے کہا کہ لوگ ایک ایک جلسے کے لئے لاکھوں لاکھ خرچ کرکے باہر سے علماء کو مدعو کرتے ہیں مگر یہاں ریاستی سطح سے لے کر ضلع اور بلاک سطحی جمعیت کے ذمےدارن آسان و مسنون نکاح مہم اور نشہ سے پاک معاشرے کی تشکیل کے لئے جمع ہیں۔امید ہے کہ آپ سب یہاں سے مفتی صاحب سے جو معاہدہ کیا ہے اس پر دل جمعی کے ساتھ قائم و دائم رہیں گے۔
جمعیت علماء کی اس مہم کے بعد گاؤں کی نئی تعمیر ہونے والی مسجد کے لئے چندہ بھی اکٹھا کیا گیا جس میں لوگوں نے چھت تک کے تمام اخراجات کی رقمیں پیش کیں۔
اجلاس سے مولانا سعد النجیب صاحب،مولانا عبدالصمد ندوی اور مولانا دلاور لطیفی نے بھی خطاب کیا۔
اجلاس کے بعد پنچایت سطحی جمعیت کے قیام اور اسی کے تحت اصلاح معاشرہ کمیٹی کی تشکیل کے لئے ایک ٹیم بھی بنائی گئی۔
اجلاس کو کامیاب بنانے میں جمعیت علماء بلاک رانی گنج کے نائب صدر مولانا محمد ارشاد قاسمی شکریلی،نائب سیکریٹری مولانا محمد آصف قاسمی ہرپور،مولانا محمد اخلاق نعمانی شکریلی،مولانا محمد توصیف قاسمی شکریلی،مولانا عبد الجبار ناظم مدرسہ عثمانیہ شکریلی،ڈاکٹر اعجاز احمد،محمد شارق،محمد راغب و محمد بابل وغیرہ نے خصوصی تعاون پیش کیا۔
اجلاس کا آغاز قاری عبد الرحمٰن ہرپوری کی تلاوتِ قرآن اور مشہور شاعر قاری قمر الزماں نعمانی جھوا پلاسی کی پرسوز نعت و منقبت سے اور اختتام مولانا سعد النجیب صاحب کی دعاء سے ہوا۔

روزنامہ نوائے ملت
روزنامہ نوائے ملتhttps://www.nawaemillat.com
روزنامہ ’نوائے ملت‘ اپنے تمام قارئین کو اس بات کی دعوت دیتا ہے کہ وہ خود بھی مختلف مسائل پر اپنی رائے کا کھل کر اظہار کریں اور اس کے لیے ہر تحریر پر تبصرے کی سہولت فراہم کی گئی ہے۔ جو بھی ویب سائٹ پر لکھنے کا متمنی ہو، وہ روزنامہ ’نوائے ملت‘ کا مستقل رکن بن سکتے ہیں اور اپنی نگارشات شامل کرسکتے ہیں۔
کیا آپ اسے بھی پڑھنا پسند کریں گے!

جواب چھوڑ دیں

براہ مہربانی اپنی رائے درج کریں!
اپنا نام یہاں درج کریں

- Advertisment -spot_img
- Advertisment -
- Advertisment -

مقبول خبریں

حالیہ تبصرے