سماج کو نیتا نہیں بیٹا کی ضرورت ہے

97

جیسا کے ہم سب کو معلوم ہے کہ ٢٠٢١ میں پنچایتی انتخابات ہونا ہے پنچایت سے لیکر وارڈ
میمبر تک کے امید وار اپنی اپنی محنت میں لگ گئے ہیں ۔ اور اپنی کامیابی کے لئے ہر طرح کی
پریشانی اٹھانے کو تیار ہے اور وہی پر
کرساکانٹابلوک کے ڈھواباڑی گائوں۔ کے ورڈ نبر ١۴ ۔۔چودہ
سے وارڈسدس کے امیدوار
نوجوانوں کے دلوں کی دھڑکن
غریب مجبور لاچار بیبس بیسہاروں کے سہارا دردمندوں کی دوا کمزوروں کی طاقت دبے
ہوئے لوگوں کی آواز ماں اور بہنوں کی شان بزرگوں کی خوشی بچوں کی مستقبل جناب مجاہد صاحب ۔نے کہا کہ جیسے ہی انتخابات کا وقت قریب آتا ہے ۔نیتا سب اپنے
گھر سے بہار نکلتے ہیں جیسے
پانی سے مینڈھک ۔اور جیت نے کے بعد وہی عوام سے جوعوام اپنا قیمتی ووٹ دیکر کرسی پر بیٹھا تی ہے اسی سے ۔سڑکیں نالی ۔راشن کارٹ ۔اندرآواس کے۔ نام پر غریب مجبور لاچار ماں اور بہنوں سے جھوٹ بول کر اس کا حق پانچ سالوں تک کھا تا ہے ۔اور وہی پر جناب بھائی مجاہد صاحب نے کہا کہ ۔اس بار ہم اپنے وارڈ چودہ سے
وارڈ میمبر کے امید وار ہوں اور
ہر لو گوں کی خاہش ہے کہ ۔ہم سب کا بیٹا جناب مجا ہد صاحب کو ضرور اس بار کامیاب بناکر وارڈ کے ذمہ دار بنا یں گے

محمد جعفر ارریاوی