سرکار کلاں ہاسپٹل کا قیام ،قوم و ملت کے لئے عظیم تحفہ ہے خانوادہ اشرفیہ نے فلاحی ورفاہی کاموں میں ہمیشہ بڑھ چڑھ کر حصہ لیا ہے : محمد شمیم اشرفی

67

سرکار کلاں ہاسپٹل کا قیام ،قوم و ملت کے لئے عظیم تحفہ ہے
خانوادہ اشرفیہ نے فلاحی ورفاہی کاموں میں ہمیشہ بڑھ چڑھ کر حصہ لیا ہے :
محمد شمیم اشرفی

کچھوچھہ شریف، امبیڈکر نگر

رپورٹ اخلاق احمد نظامی، سنت کبیر نگر
خانوادہ اشرف کی یہ روایت رہی ہے کہ انہوں نے ہمیشہ اپنے مریدین و متوسلین کو ایسے امور کی طرف راغب کیا ہے۔ جو قوم و ملت کے لئے بیش بہا تحفے کی شکل میں نمودار ہوئے ہیں۔ اور ان میں بالخصوص اعلیٰ حضرت اشرفی میاں قدس سرہ کے خانوادے نے کلیدی رول ادا کیا ہے۔ چنانچہ اس خانوادے سے منسلک افراد نے جہاں ملت اسلامیہ کو عظیم اسلامی و عصری ادارے دیئے ہیں۔ وہیں ان کے مریدین و متوسلین و خلفاء نے اپنے پیر خانے کے ایما پر فلاحی و رفاہی کاموں کی طرف بھی کارہائے نمایاں انجام دیئے ہیں۔ اسی ضمن میں خانوادہ اشرف کے عقیدت مندوں نے بڑا انوکھا کارنامہ انجام دیا ہے۔ اور وہ یہ ہے کہ مورخہ 23/فروری 2021 کو مبارکپور سکٹھی کی سر زمین پرالجامعۃ الاسلامیہ اشرفیہ کے ارکان خصوصاً ادارہ کے پرنسپل مولانا طفیل احمد مصباحی اشرفی اور ناظم اعلیٰ حاجی فیاض احمد صاحب اور مخلصین و محبین کی کاوشوں سے سرکارِکلاں ہاسپیٹل کا سنگ بنیاد رکھا گیا۔ جس کی بنیاد گلِ گلزارِ اشرفیت شہزادہ سرکارِ کلاں حضور سید شاہ سید علی میاں صاحب کچھوچھہ شریف اور جانشین امام الاولیاء حضور سیدشاہ غلام رسول صاحب سریا شریف وحضور محقق مسائل جدیدہ حضرت مولانا مفتی محمد نظام الدین رضوی صاحب قبلہ صدرالمدرسین و صدر شعبہ افتا الجامعۃ الاشرفیہ مبارکپور اور شیخ الحدیث مولانا مفتی صدرالوریٰ صاحب قبلہ استاذ الجامعة الاشرفیہ مبارکپور کے ہاتھوں رکھی گئی۔
اس میں کوئی شک نہیں کہ ہاسپٹل کا قیام بہت ہی عظیم کام ہے۔ کیونکہ اللہ تعالیٰ نے انسان کو جتنی بھی نعمتیں عطا کی ہیں۔ ان میں صحت بہت بڑی نعمت ہے۔ انسان کے پاس اگر صحت نہ ہو تو دنیا کی کوئی چیز اسے خوشی اور آرام نہیں دے سکتی۔ انسان کو اگر چھوٹی سی بیماری بھی ہوجائے تو اس کے لیے روز مرہ کے معمولات سر انجام دینا مشکل ہو جاتا ہے۔
جب کوئی شخص بیماری میں مبتلا ہوجاتا ہے تو اس کے لیے زندگی بڑی مشکل ہوجاتی ہے۔کبھی کبھی تو انسان جب خطرناک مرض میں مبتلا ہوجاتا ہے تو اس کی فیملی بھی اسے بوجھ سمجھنے لگتی ہے۔ لیکن ایک جگہ ایسی بھی ہے جہاں اس کے درد کو اپنا درد سمجھا جاتا ہے۔ چاہے وہ کسی بھی رنگ و نسل اور علاقے سے تعلق رکھتا ہو۔ اور وہ جگہ ہے ہسپتال جس کی ضرورت مبارک پور کے محبین سادات نے محسوس کی۔ اور سرکار کلاں ہسپتال کے قیام کا منصوبہ بنایا۔ یقیناً یہ وہ کارنامہ ہے جو سنہرے حرفوں میں لکھا جائے گا۔
آل انڈیا علماء و مشائخ بورڈ کے سرگرم رکن ماسٹر محمد شمیم اشرفی نے اس نیک کام پر اپنی بے پناہ خوشی کا اظہار کرتے ہوئے ان تمام افراد کو مبارک باد پیش کیا۔ جو اس کار خیر میں بڑھ چڑھ کر حصہ لے رہے ہیں۔ انھوں نے مزید کہا کہ ہم نے خانواده اشرف کو بہت قریب سے دیکھا۔ تو یہ محسوس کیا کہ ان کے دلوں میں قوم و ملت کا درد کوٹ کوٹ کر بھرا ہوا ہے۔ اور ہمیشہ قوم و ملت کی فلاح و بہبود کے لئے کوشاں رہتے ہیں۔ بھیاللہ رب العزت ہمیں اس خانوادے کا سچا اور مخلص دیوانہ بنائے اور ان کے جملہ کارہائے خیر میں بڑھ چڑھ کر حصہ لینے کی توفیق عطا فرمائے۔اَمِين يَا رَبَّ الْعَالَمِيْن