جمعرات, 6, اکتوبر, 2022
ہوماعلان واشتہاراتدینی،تعلیمی،اصلاحی دورہ

دینی،تعلیمی،اصلاحی دورہ

جامعہ مدنیہ سبل پورپٹنہ اوررابطہ مدارس اسلامیہ عربیہ بہارکا دینی،تعلیمی،اصلاحی دورہ اختتام پذیر، جامعہ مدنیہ کے شیدائیوں نے کیازبردست استقبال، مختلف مقامات میں وفد میں موجودعلماء کرام کے خطابات،جہیزاوردوسری سماجی برائیوں کو ختم کرنے کانوجوانوں نے لیاعہد،معاشرتی اصلاح کے نام پر کمیٹی کی بھی تشکیل۔

زیرقیادت: جناب مولانامرغوب الرحمن صاحب معاون مہتمم جامعہ وصدررابطہ مدارس اسلامیہ عربیہ بہار
شریک وفد:جناب مولانامحمدحارث بن مولانامحمدقاسم صاحبؒ مہتمم جامعہ مدنیہ سبل پور،پٹنہ
رپورٹ:-(مفتی)خالدانورپورنوی استاذ جامعہ،وجنرل سکریٹری رابطہ مدارس اسلامیہ عربیہ بہار

سب کو دینی تعلیم سے جوڑنے،مدارس ومکاتب کے نظام تعلیم وتربیت کو بہترسے بہتربنانے، معاشرتی، سماجی اصلاح کے ساتھ،جامعہ مدنیہ سبل پور،پٹنہ کی تعمیر وترقی کے لئے جناب مولانامرغوب الرحمن صاحب صدر رابطہ مدارس اسلامیہ عربیہ بہارومعاون مہتمم جامعہ مدنیہ سبل پور،پٹنہ کی قیادت میں جامعہ مدنیہ سے ایک وفد سیمانچل کے لئے روانہ ہوا،مورخہ12ستمبر،بروز اتوار،گیارہ بجے شب ،یہ قافلہ جامعہ طوبی للبنات ہریاباڑہ ارریہ پہونچا،وہاں کے مہتمم جناب مولاناوسیم اکرم ندوی،اور ناظم حافظ ارقم رحمانی نے اس وفدکاپرزوراستقبال کیا،بہترین ضیافت کی،اور خوشی کا اظہار کیا ، رات قیام کے بعد 13ستمبرکی صبح وہاں تعلیم حاصل کررہی بچیوں کے بیچ اس وفد کی قیادت کررہے جناب مولانامرغوب الرحمن صاحب صدر رابطہ مدارس اسلامیہ عربیہ بہار،احقر(خالدانورپورنوی جنرل سکریٹری رابطہ مدارس اسلامیہ عربیہ بہار) نے مختصرناصحانہ خطاب بھی کیا،جامعہ مدنیہ سبل پور،پٹنہ کے مہتمم جناب مولانامحمدحارث بن مولانامحمدقاسم صاحبؒ نے رقت آمیز دعاء فرمائی۔
مفتی تنظیم مظاہری،حافظ اویس صاحب جامعہ آمنہ للبنات ریہی ارریہ،جناب حاجی جاویدصاحب، مولاناساجدحسن قاسمی جامعہ جویرہ للبنات ریہی ارریہ،مولانا ہلال الدین نعمانی بھی اس وفد کے استقبال کے لئے ہریاباڑہ پہونچ گئے،جامعہ مدنیہ کے تئیں انہوں نے اطمینان کا اظہارکرتے ہوئے اس وفد کی آمدپر خوشی کا اظہارکیا،انہوںنے کہا:حضرت مولانا محمدقاسم صاحب ؒ جس طرح سیمانچل کے مختلف مقامات میں تشریف لاتے تھے،یہ سلسلہ جاری رہناچاہئیے!
رابطہ مدارس اسلامیہ عربیہ ضلع ارریہ کے جنرل سکریٹری سے ملاقات
ضلع ارریہ میں موجودرابطہ مدارس اسلامیہ عربیہ ارریہ کومتحرک وفعال بنانے اورمدارس اسلامیہ کے نظام تعلیم کاجائزہ لینے کی غرض سے جامعہ مدنیہ سبل پورپٹنہ کایہ وفددارالعلوم رحمانی زیرومائل ارریہ کیلئے روانہ ہوا،دارالعلوم ہذاکے ناظم اوررابطہ مدارس ضلع اریہ کے جنرل سکریٹری جناب مفتی علیم الدین صاحب نے اس وفدکاپرزوراستقبال کیا،اس موقع پررابطہ مدارس اسلامیہ کو متحرک بنانے کے ساتھ ضلع ارریہ کے تمام مربوط مدارس کی فہرست بنانے کے بارے میں اہم باتیں ہوئی،اس وفدمیں جناب مولانامرغوب الرحمن صاحب ،مولانامحمدحارث صاحب مہتمم جامعہ مدنیہ سبل پورپٹنہ، احقر (خالدانورپورنوی )حافظ ارقم رحمانی، حاجی جاویدعالم صاحب موجودتھے۔ناشتہ کے بعدیہ وفدیہاں سے مچھیلا ارریہ کے لئے روانہ ہوگیا۔
مکھیاکلام الدین مرحوم کے اہل خانہ سےاظہارتعزیت
جامعہ مدنیہ سبل پورپٹنہ کے بہت ہی مخیرجناب مکھیاکلام الدین مچھیلاارریہ گذشتہ کئی مہینے قبل انتقال فرماگئے تھے،ان کی تعزیت کیلئے جامعہ مدنیہ سبل پورپٹنہ کایہ وفدمچھیلاپہونچا،ان کے اہل خانہ بالخصوص جناب عبدالرافع سے مل کر اظہارتعزیت کیا،جامعہ مدنیہ سبل پورکے اس قافلہ کی آمد سے عبدالرافع صاحب اورجامعہ مدنیہ کے سابق طلبہ مولاناعامرکلام،حافظ سالم کلام اورمچھیلاکے لوگوں نے بہت ہی خوشی کااظہارکیا،جناب عبدالرافع صاحب نے پرتکلف ضیافت فرمائی۔
نمازعصرکے بعدجامع مسجدمچھیلامیں وفدکی قیادت کررہے جناب مولانامرغوب الرحمن صاحب نے اہم خطاب فرمایا۔جنت کے مناظرکوبہت خوبصورت اندازمیں پیش کیا۔آپ کی رقت آمیزدعاء پرمجلس اختتام پذیرہوئی۔
بعدنمازمغرب شریف والی مسجدمچھیلامیں جناب مولانامرغوب الرحمن صاحب نے اہم خطاب فرمایا،خطاب ودعاء کے بعدجناب مولاناغیاث صاحب نے چائے وغیرہ کے ذریعہ خوبصورت ضیافت فرمائی،اورپھریہ قافلہ یہاں سے روانہ ہوگیا،اس وفدمیں جناب مولانامرغوب الرحمن صاحب،مولانامحمدحارث صاحب،احقرکے علاوہ حافظ ارقم ،حاجی جاویدعالم بھی موجودتھے۔
ترکیلی میں حاضری،اور جامع مسجدترکیلی میں خطاب
جامعہ مدنیہ سبل پور،پٹنہ کا وفد ارریہ آیا،اور جمعیۃ علماء بہارکے نومنتخب نائب صدرجناب مفتی محمداطہرالقاسمی سے ملاقات نہ ہو یہ ممکن نہیں  ہے ، جب ہم لوگ مچھیلاسے نکلے،تو فوراہی جامعہ مدنیہ سبل پورپٹنہ کے سابق طالب علم حافظ محمدتوقیرعالم ترکیلی ارریہ کافون آگیا،ان کی دعوت پر یہ قافلہ مچھیلا سے روانہ ہوکر ترکیلی پہونچ گیا،جامعہ مدنیہ کے سابق استاذاورجمعیۃ علماء ضلع ارریہ کے جنرل سکریٹری جناب مفتی اطہرالقاسمی،مولاناخورشیدانورنعمانی مہتمم مدرسہ جامع العلوم ترکیلی،مولاناتوصیف نعمانی،حافظ راغب نعمانی،غضنفر،حافظ توقیرعالم نے بہت ہی پرتباک اندازمیں اس وفدکااستقبال کیا، مفتی محمداطہرالقاسمی کے گھر پر چائے ناشتہ کے بعدعشاء کی نمازکیلئے جامع مسجدپہونچا۔
نماز عشاء سے قبل جامع مسجدترکیلی ارریہ میں اس وفد میں موجود جناب مولاناغوب الرحمن صاحب،مولانامحمدحارث،احقر نے مختصر خطاب بھی کیا، واضح رہے کہ سب سے پہلے ،بہت ہی اچھے اورخوبصورت اندازمیں مفتی محمداطہرالقاسمی نے جامعہ مدنیہ کاتعارف کرایا،جامعہ مدنیہ کے تئیں اپنی محبت اورخلوص کااظہارکیا،جناب مولانامرغوب الرحمن صاحب اورحضرت مولانامحمدقاسم صاحب ؒکاصاحبزادہ مولانامحمدحارث کابھی تعارف کرایا،اس موقع پر بڑھتی ارتداداوردیگرسماجی ومعاشرتی برائیوں کے حوالہ سے سب سے پہلے جناب مولانامرغوب الرحمن صاحب پھراحقر،پھرمولانامحمدحارث کامختصر خطاب ہوا۔
نماز وخطاب کے بعد کثیرتعدادمیں موجود نوجوانوں کی موجودگی میں جناب مفتی محمداطہرالقاسمی صاحب کے جمعیۃ علماء بہارکے نائب صدرمنتخب کئے جانے پر اس وفد نے گلدستہ پیش کرکے مبارکبادی پیش کی،نیک خواہشات کا اظہارکیا،اورجامعہ مدنیہ آنے کی گذارش کی۔
ریہی ارریہ میں حاضری،اور جامعہ جویریہ للبنات میں خطاب
عشائیہ اوررات کے قیام کامکمل انتظام جناب حاجی جاویدعالم صاحب ریہی کے یہاں تھا،ماشاء اللہ انہوں نے بہت ہی خلوص ومحبت سے جامعہ مدنیہ کے اس وفدکااکرام کیا،اورپرتکلف ضیافت فرمائی،قیام جامعہ جویریہ للبنات ریہی میں تھا۔
واضح رہے کہ حاجی جاویدصاحب جامعہ مدنیہ کے لئے بہت ہی مخلص اور حضرت مولانامحمدقاسم صاحبؒ کے عقیدت مندوں میں سے ہیں،حضرت مولانامحمدقاسم صاحبؒ بھی ان سے بڑی محبت فرمایاکرتے تھے،ارریہ کاسفرہو،اور ان کے یہاں حضرت ؒنہ جائیں،یہ ممکن نہیں تھا۔
مورخہ 14ستمبربروزمنگل، کی صبح جامعہ جویریہ للبنات ریہی ارریہ کے طلبہ اورطالبات کے بیچ جناب مولانامرغوب الرحمن صاحب نے اہم خطاب فرمایا، تجویدکی اہمیت کی طرف توجہ دلائی،اس موقع پر جناب مولانامرغوب الرحمن کی کتاب انوارالتجویدبچوں وبچیوں کوشروع بھی کرایاگیا،احقرنے بھی مختصراخطاب کیا، اور جناب مولانامحمدحارث صاحب کی دعاء پرمجلس اختتام پذیرہوئی۔
جامعہ آمنہ للبنات روپیلی کی نئی عمارت کاافتتاح
اسی دن مورخہ14ستمبر2021 بروزمنگل،جامعہ آمنہ للبنات روپیلی کی نئی عمارت کے افتتاح کے موقع پر منعقدایک اجلاس عام میں جناب مولانا مرغوب الرحمن صاحب،احقر،مولانامحمدحارث،مفتی دلشادصاحب نعمانی جنرل سکریٹری جمعیۃ علماء رانی گنج بلاک ارریہ، اورحاجی محمدجاویدشریک ہوئے، احقر اور حضرت مولانامرغوب الرحمن صاحب نے خطاب بھی فرمایا،مولانامرغوب الرحمن صاحب کی رقت آمیزدعاء پراجلاس اختتام پذیرہوا۔
دوپہرکاکھاناجناب حافظ اویس صاحب ناظم مدرسہ آمنہ للبنات کے گھرپرہوا،پرتکلف ضیافت فرمائی۔ریہی ارریہ میں کچھ دیرقیلولہ کے بعدشام کو ڈومریا کیلئے روانہ ہوگئے۔
ڈومریا (رانی گنج )میں حاضری اوراہم خطاب
رانی گنج سے چندکیلومیٹرکے فاصلہ پرڈومریاگاوں کثیرمسلم آبادی پرمشتمل ہے،18مساجداس گاوں میں ہیں،حضرت مولاناحبیب الرحمن صاحب قاسمی استاذمدرسہ انوارالعلوم اسلام پورپورنیہ کی دعوت پرجامعہ مدنیہ کایہ وفدڈومریاپہونچا۔جناب مولاناارشدقاسمی ،اطہرحبیب متعلم دارالعلوم وقف دیوبند ودیگر علماء وحفاظ نے اس وفدکاپرزوراستقبال کیا،عشاء کی نمازکے بعدجامع مسجدابوبکرالصدیق میں سب سے پہلے احقرنے تعارفی خطاب کیا،پھرجناب مولانا مرغوب الرحمن صاحب نے سماجی معاشرتی برائیوں کے خاتمہ کیلئے اہم خطاب فرمایا،انہوں نے جامعہ مدنیہ کااچھے انداز میں تعارفی خاکہ بھی پیش کیا۔ مولاناحبیب الرحمن صاحب نے پرتکلف ضیافت فرمائی اوریہیں پررات کاقیام بھی ہوا۔
رحمانی مکتب ڈومریامیں اہم خطاب
چائے وغیرہ کے بعد یہ وفد رحمانی مکتب ڈومریا ارریہ پہونچا،صدر محترم جناب مولانا مرغوب الرحمن صاحب قاسمی نے تعلیم حاصل کررہے بچوں اور بچیوں کاتعلیمی جائزہ لیا،اور مختصر خطاب بھی کیا،انہوں نے کہا:قرآن کریم پر خصوصی توجہ دی جائے،اس موقع پر ایک اہم بات اپنے استاد محترم جناب حضرت مولانا خلیل الرحمن صاحب رحمۃ اللہ علیہ سابق صدرالمدرسین مدرسہ اعزازیہ پتھنہ بھاگلپورکے حوالہ سے یہ بتائی کہ حضرت فرماتے تھے:کم کم، کم دن میں،زیادہ زیادہ،زیادہ دن میںیعنی کم کم سبق لو،ازبر سبق یادکرو تاکہ بنیاد مضبوط ہوجائے،اور زیادہ سبق لینے سے یادمیں کمی رہ جاتی ہے جس کی وجہ سے آگے کی تعلیم کے لئے وقت زیادہ لگاناپڑجاتاہے۔
واضح رہے کہ رحمانی مکتب حضرت مولانامحمدعلی مونگیری ؒ کی یادگارمیں مسلمانوں کی کثیر آبادی پر مشتمل ڈومریا(ارریہ) میں قائم کیاگیاہے، حضرت مولاناحبیب الرحمن صاحب قاسمی استاذ مدرسہ انوارالعلوم اسلام پور،پورنیہ کی صحیح فکر،اور جدوجہد کانتیجہ ہے،اس کی نگرانی جناب مولاناارشد صاحب القاسمی،اس کے اساتذہ کرام میں بالخصوص محمداطہر حبیب کی محنت ولگن کی وجہ سے بہت ہی کم وقت میں تعلیمی اعتبارسے اپناایک نمایاں مقام حاصل کیاہے،اس وقت 110 طلبہ وطالبات علمی پیاس بجھارہی ہیں،سب سے بڑی بات یہ ہے کہ دینی تعلیم کے ساتھ،عصری تعلیم کابھی یہاں معقول انتظام ہے،ہر ہر گاؤں میں اس طرح کے مکاتب کے قیام کی ضرورت ہے ،صدرمحترم کی دعاء پر مجلس اختتام پذیرہوئی۔
دعاء کے بعدجناب مکھیاتوحیدعالم صاحب کے یہاں ناشتہ کیا،واضح ہوکہ مکھیاجی خانقاہ رحمانی کے بے پناہ عقیدت مندوں میں سے ہیں،اوراسی طرح جامعہ مدنیہ سبل پورپٹنہ سے بھی جڑے ہوئے ہیں،ایک دن قبل ہی انہوں نے ناشتہ کی دعوت کی تھی،پرتکلف ناشتہ کے بعدکئی اہم شخصیتوں سے جامعہ مدنیہ کے سلسلہ میں اس وفدکی ملاقات ہوئی۔
ظہرکی نمازجامع مسجد ڈومریامیں اداہوئی،نمازکے بعدجناب مولانامرغوب الرحمن صاحب نے اہم خطاب کیا،اورجناب جاویدعالم ڈومریاکے یہاں ظہرانہ ہوا،اورپھرقیلولہ کے بعدجامعہ مدنیہ کایہ وفدنکاح کی مجلس میں شرکت کیلئے سلطان گنج بھاگلپورکیلئے روانہ ہوگیا۔
کولگاواں سلطان گنج میں تقریب نکاح میں شرکت
رات کے گیارہ بجے جامعہ مدنیہ کایہ وفدکولگاواں سلطان گنج پہونچا،جناب اسلام الدین کی صاحبزادی کی تقریب نکاح میں شرکت کی،جناب مولانا مرغوب الرحمن صاحب نے نکاح پڑھایا۔واضح رہے کہ یہاں موجودلوگوں نے زبردست اندازمیں اس وفدکاوالہانہ استقبال کیا۔رات کا قیام اور صبح کے ناشتہ کے بعدیہاں سے یہ وفدروانہ ہوگیا،اس وفدمیں جناب مولانامرغوب الرحمن صاحب،جناب مولانامحمدحارث صاحب اور احقر موجود تھے ۔
گونڈوارہ ،کٹیہار میں حاضری اورجامع مسجدمیں خطاب
حضرت مولانامحمدقاسم صاحبؒ بانی جامعہ مدنیہ سبل پورپٹنہ سے بے پناہ محبت کرنے والے جناب مولاناصلاح الدین صاحب گونڈوارہ کی دعوت پریہ وفد گونڈوارہ کٹیہارپہونچا،ظہرکی نمازمسجدعائشہ گونڈوارہ میں اداکی،نمازکے بعدجناب مولانامرغوب الرحمن صاحب نے جامعہ مدنیہ کےاس اصلاحی اوردینی دورہ کاتعارف کراتے ہوئے بڑھتی سماجی برائیوں کے بارے میں اہم خطاب فرمایا۔لوگوں سے گذارش بھی کی کہ وہ جامعہ مدنیہ ضرورتشریف لائیں،جناب مولاناصلاح الدین قاسمی کے یہاں دوپہرکاکھاناکھایا،الحاج مصلح الدین سے ملاقات کے بعدیہ قافلہ رانی گنج ارریہ کیلئے روانہ ہوگیا ۔
مدرسہ ترتیل القرآن رانی گنج ارریہ میں اہم خطاب
مغرب کی نمازکے بعدجناب مفتی دلشادصاحب نعمانی جنرل سکریٹری جمعیۃ علماء رانی گنج بلاک کی ہدایت پرمدرسہ ترتیل القرآن رانی گنج میں سب سے پہلے احقرنے جامعہ مدنیہ کاتعارف کرایا،پھرجناب مولانامرغوب الرحمن صاحب نے قرآن کریم کی اہمیت ،ضرورت پراہم خطاب فرمایا، جناب مفتی دلشادصاحب کی جدوجہدسے رانی گنج میں جامعہ مدنیہ کے کئی مخیرین سے ملاقات ہوئی،اللہ تعالیٰ مفتی صاحب کو جزائے خیرعطافرمائے۔
جامع مسجدپلارجگتہ میں اہم اجلاس
جناب مفتی دلشادصاحب نعمانی جنرل سکریٹری جمعیۃ علماء رانی گنج کی نگرانی میں اورجناب مولانامرغوب الرحمن صاحب کی صدارت میں جامع مسجد پلار،جگتہ میں مورخہ15ستمبربروزجمعرات بوقت آٹھ بجے ایک اہم اجلاس کاانعقادہوا،جناب مولانامحمدحارث مہتمم جامعہ مدنیہ کی تلاوت سے پروگرام کاآغازہوا،مفتی دلشادصاحب نعمانی نے افتتاحی خطاب فرمایا،سماجی برائیوں بالخصوص جہیزکے خلاف اورنکاح کوآسان بنانے پر زورجیسے عناوین پراحقرنے آدھا گھنٹہ خطاب کیا، آخری اورتفصیلی وصدارتی خطاب جناب مولانامرغوب الرحمن صاحب کاہوا،اس خطاب سے ہزاروں آنکھیں آبدیدہ ہوگئیں۔آپ کی رقت آمیزدعاء پر اجلاس اختتام پذیرہوا۔
عشائیہ مکھیا فاروق صاحب کے یہاں ہوا،اورقیام جناب مولاناحبیب الرحمن صاحب قاسمی ڈومریاکے گھرپرہوا۔اللہ جزائے خیردے ۔ آمین
جامع مسجداحمدپورارریہ میں خطاب
مورخہ17ستمبربروزجمعہ کاپروگرام پہلے سے بیرنگربسہریاضلع ارریہ میں طے تھا،لیکن احمدپورمیں جناب حاجی جاویدصاحب ریہی کی بھانجی کے انتقال پرملال کی وجہ سے یہ قافلہ احمدپورکیلئے روانہ ہوگیا،احمدپورکی مرکزی مسجدمیں جناب مولانامرغوب الرحمن صاحب کااہم خطاب ہوا،جبکہ جامع مسجدمیں احقرنے خطاب کیا،اورجمعہ کی نمازپڑھائی،نمازکے بعدکھاناسے فارغ ہوئے اورجنازہ میں شرکت ہوئی۔جناب مولانامرغوب الرحمن صاحب نے جنازہ کی نمازپڑھائی،اورپھریہ قافلہ تعزیت مسنونہ پیش کرتاہوایہاں سے روانہ ہوگیا،گڈوبھائی سے ملاقات کے بعدیہ وفدکدوابھی پہونچا،پھردوبارہ احمدپورہوتے ہوئے مفتی اسلم صاحب سے ملاقات کرکے رانی گنج کیلئے روانہ ہوگیا۔
جامع مسجدپیک پار،گووندپورکے اجلاس عام سے خطاب
جناب مفتی دلشادصاحب نعمانی جنرل سکریٹری رانی گنج بلاک کی نگرانی میں مورخہ 17ستمبربروزجمعہ بعدنمازمغرب ،جامع مسجدپیک پار، گووند پور بھڑگاماں بلاک میں اجلاس عام کے انعقادکااعلان کیاگیا ،مقرررہ تاریخ اوروقت کے مطابق جامعہ مدنیہ سبل پورپٹنہ کایہ وفداجلاس میں شرکت کیلئے روانہ ہوا، منزل سے کئی کیلومیٹرپہلے ابھی بھرگامابلاک پہونچے ہی تھے کہ پچاسوں کی تعدادمیں نوجوان استقبال کیلئے پہونچ گئے،ماحول بڑاہی پرکشش اورجازب نظرتھا،اللہ ان کی اس محبت کوقبول فرمائے۔
جناب مولانامحمدحارث صاحب مہتمم جامعہ مدنیہ کی تلاوت سے پروگرام کاآغازہوا،مفتی دلشاد صاحب نعمانی نے افتتاحی خطاب کیا،پھر جہیز اور دوسری سماجی برائیوں پر احقرنےایک گھنٹہ خطاب کیا،دارالعلوم وقف دیوبندکے طالب علم محمداطہرحبیب نے بھی مختصر خطاب کیا،صدارتی خطاب حضرت مولانامرغوب الرحمن صاحب نے فرمایا۔ خطاب کے بعد21نوجوان پرمشتمل ایک اصلاح معاشرہ کمیٹی کی تشکیل دینے کافامولہ بھی صدرمحترم نے پیش کیا،جس پرنوجوانوں نے لبیک کہا،کمیٹی تشکیل دی گئی اورانہوں نے عہدلیاکہ نکاح کوآسان بنانے اورمعاشرتی برائیوں کومٹانے کی پرزورکوشش کریں گے۔نظامت کا فریضہ جناب مولاناعیسی صاحب ناظم جامعہ طاہرہ للبنات سرسیانےانجام دیا۔
جامعہ طاہرہ للبنات میں حاضری اورقیام
رات کاقیام جامعہ طاہرہ للبنات سرسیا ہنومان گنج ارریہ میں ہوا،اس کے ناظم جناب مولاناعیسیٰ صاحب نے اس وفدکاخیرمقدم کیا۔دوسرے دن مورخہ18ستمبربروزسنیچربعدنمازفجرجامع مسجدسرسیامیں جناب مولانامرغوب الرحمن صاحب نے اہم خطاب فرمایا،جبکہ احقرنے جامع مسجدپیریاہی ٹولہ سرسیامیں خطاب کیا،دونوں جگہوںپرمعاشرتی اصلاح کے حوالہ سے بہترگفتگوہوئی،نوجوانوں نے معاشرتی اصلاح کیلئے اپنے نام کو پیش کیا،اور کمیٹی بھی تشکیل دی گئی۔جامعہ طاہرہ للبنات میں ناشتہ کے بعدیہ قافلہ بیرنگر بسہریا کے لئےروانہ ہوگیا۔
بیرنگربسہریاارریہ میں حاضری،اور جامع مسجدمیں اہم خطاب
بیرنگربسہریاپہونچتے ہی الحاج محمد اسعد صاحب صدر جمعیۃ علماء بلاک بھرگاما،مولانا کامل صاحب القاسمی سکریٹری جمعیۃ علماء بلاک بھرگاما، ابوبکر صدیق رومی المدنی نے اس وفد کازورداراندازمیں خیرمقدم کیا۔نمازظہرکے بعدجامع مسجد چھرہ پٹی بیر نگر بسہریا ارریہ میں سماجی،معاشرتی برائیوں کے اسباب اور حل پر جناب مولانامرغوب الرحمن صاحب قاسمی نے اہم خطاب بھی فرمایا،جبکہ ابوبکر صدیق رومی المدنی نے بہت ہی اچھے انداز میں جامعہ مدنیہ سبل پور پٹنہ اور وہاں سے تشریف لائے ہوئے مہمانان کاتعارف کرایا۔
واضح رہے کہ بیرنگر مسلمانوں کی کثیر آبادی پر مشتمل ہے،جہاں الحاج محمد اسعد صاحب صدر جمعیۃ علماء بلاک بھرگاما،مولانا کامل صاحب القاسمی سکریٹری جمعیۃ علماء بلاک بھرگاما،ابوبکر صدیق رومی المدنی،محمد افتخار عالم ،ڈاکٹر سعد جیلانی ،ڈاکٹر محمد دلشاد،ڈاکٹر محمد امانت اللہ ،الحاج دبیر الدین صاحب ،محمد کامل اختر صاحب ،محمد خوش تر صاحب ،محمد مشتاق صاحب ،عادل جمال ودیگرعوام وخواص نے بہت زیادہ خوشی کااظہارکیا، الحاج محمد اسعد صاحب نے پرتکلف ضیافت کااہتمام کیا۔
شہریا،پورنیہ میں حاضری
ظہرانہ کے بعد یہ قافلہ رانی گنج ہوتے ہوئے شہریاپورنیہ کیلئے روانہ ہوگیا۔مغرب اورعشاء کی نمازجامع مسجدبیرگاچھی ارریہ میں اداکی،دارالعلوم بیرگاچھی ارریہ کے انتظامیہ اوراساتذہ سے ملاقات ہوئی،وہاں کے تعلیمی نظام کودیکھ کر بڑی خوشی محسوس ہوئی۔رات کے نوبجے یہ قافلہ احقرکےآبائی گاوں شہریاپہونچا،جناب مولانااسلام الدین صاحب قاسمی ،شیخ تنویرذکی مدنی،حافظ ثمرالحق نے پرتپاک خیرمقدم کیا،رات کاکھانااحقرکے گھرپرتھا، جبکہ قیام شیخ تنویرذکی مدنی کے یہاں۔
جامع مسجدشہریا،پورنیہ میں خطاب
فجرکی نماز ہم سب نے جامع مسجدشہریامیں اداکی،نماز کے بعد احقرنے مختصرتعارف کرایا،جناب مولانامرغوب الرحمن صاحب نے بہت ہی اہم خطاب فرمایا،خاص طورسے جنت کے مناظرکو بڑے اچھے اندازمیں پیش کیا،خطاب کے بعد آپ نے رقت آمیزدعاء فرمائی۔
جامعہ دارالقرآن للبنات شہریامیں حاضری
جناب حافظ ثمرالحق صاحب شہریاسابق طالب علم جامعہ مدنیہ سبل پور،پٹنہ کی نگرانی میں شہریامیں بہت ہی منظم اندازمیں بچیوں کے لئے جامعہ دارالقرآن للبنات قائم ہے،حضرت مولانامرغوب الرحمن صاحب،جناب مولانامحمدحارث وہاں بھی پہونچے،اور بچیوں کاتعلیمی جائزہ بھی لیا،یونیفارم میں خوشی کااظہارکیا۔
چائے اورمختصرناشتہ کے بعدالحاج اظہارآصفی صاحب ایم ایل اے کوچادھامن کی دعوت پریہ قافلہ ان کے دولت کدہ کٹھامٹھاپہونچا،انہوں نے اس وفدکاخیرمقدم کیا،اورخوشی کااظہارکرتے ہوئے کہاجامعہ مدنیہ جلدہی حاضری کاوعدہ کیا۔
مدرسہ عائشہ نسواں میں حاضری،اور بچیوں کاجائزہ
یہ وفد جناب حکیم غلام مصطفی صاحب کی دعوت پرمدرسہ عائشہ نسواں صحراٹولہ پہونچا،وہاں پرناظم مدرسہ حکیم صاحب کے علاوہ مولانا علاؤالدین صاحب مظاہری صدرمدرس مدرسہ نشیر الاسلام گھٹارو،الحاج ماسٹر محبوب عالم صاحب ،ڈاکٹر مجاہد عالم صاحب ،مولانا احتشام الحق صاحب، حافظ ومولانا مامون صاحب ،ڈاکٹر وماسٹر سالم ظفر صاحب نے زبردست اندازمیں استقبال کیا،جناب مولانامرغوب الرحمن صاحب نے کچھ بچوں،اور بچیوں کا جائزہ بھی لیا،مفیدمشورے سے نوازے۔آمین
الحیاۃ انٹرنیشنل اسکول میں حاضری اور خطاب
الحیاۃ انٹرنیشنل اسکول شہریاکے ڈائریکٹر جناب مولاناتنویرذکی مدنی کی دعوت پر یہ قافلہ یہاں سے روانہ ہوا،اور الحیاۃ انٹرنیشنل مدنی نگر شہریاپورنیہ پہونچا،اس موقع پر طلبہ،طالبات نے کئی موضوعات پر ثقافتی پروگرام بھی پیش کیا،اسے دیکھ کراورسن کر ہم سب دنگ رہ گئے،جو یقینا الحیاۃ انٹر نیشنل اسکول کی کامیابی کی سب سے بڑی ضمانت کہی جاسکتی ہے!
اس موقع پر جناب مولانامرغوب الرحمن صاحب،مولانامحمدحارث ،اوراحقر (خالدانور پورنوی)نے مختصر خطاب کیا،جنگل میں منگل منانے کی کامیاب کوشش پر اس کے بانی اور ڈائیریکٹر فضیلۃ الشیخ تنویر ذکی مدنی کو مبارکبادی پیش کی،اساتذہ کی محنت اور جدوجہد کو سراہتے ہوئے طلبہ کو تعلیم کی طرف مکمل طور پر توجہ دینے کی گذارش کی۔واضح رہے کہ سی بی ایس ای کے طرز پر الحیاۃ انٹر نیشنل اسکول کامنصوبہ بنایاگیاہے، اللہ تعالی مولانا تنویرذکی المدنی کو سوفیصد کامیابی نصیب فرمائےآمین
جامعہ مدنیہ سبل پور،پٹنہ کے لئے یہ قافلہ روانہ
مورخہ 19 ستمبر،بروز اتوار ،دن کے ایک بجے،احقر کے گھرپر ماحضر تناول فرمانے کے بعد،جناب مولانامرغوب الرحمن صاحب معاون مہتمم،اور جناب مولانامحمدحارث شہریاسے ،پٹنہ کے لئے روانہ ہوگئے،حالانکہ پورنیہ،کشن گنج کا ابھی دورہ باقی تھا،مگر جامعہ مدنیہ میں ضروری درپیش مسائل کی وجہ سے دیگراسفارکویہیں تک موقوف کردیاگیا۔
جامعہ سیدناعمرفاروق رضی اللہ عنہ،اورا نندیاںمیں حاضری
اس وفد کے روانہ ہونے کے بعد،احقر(خالدانورپورنوی،جنرل سکریٹری رابطہ مدارس اسلامیہ عربیہ بہار)بعد نماز مغرب جناب مولاناحسن شاد مظاہری کی دعوت پرجامعہ سیدنا عمر فاروق نندنیاں اورا،نندنیاںحاضرہوا،واضح رہے سیدنا عمر فاروق نندنیاں اورا؛ایک دینی ،تعلیمی ادارہ ہے، جس کاقیام 2017میں جناب مولانانجم السحر اعظمی کے ذریعہ عمل میں آیاتھا،دینیات،حفظ،ناظرہ، کے ساتھ درجہ ایک سے پرائمری پنجم تک کی تعلیم ہوتی ہے،مدرسہ ہذاکے ناظم جناب مولانانجم السحر اعظمی اوربچوں سے ملاقات ہوئی،ان کا جائزہ بھی لیا،اور کئی مفیدمشورے بھی دئیے،اللہ ادارہ کو ترقیات سے نوازے۔آمین
اس دورہ سے جوبات سمجھ میں آئی
سماجی،معاشرتی برائیاں بہت زیادہ ہیں،خاص طورسے نکاح میں بے جارسومات اس قدرہیں،ناقابل بیان ہیں،اور یہ سب کام دین سمجھ کرکئے جارہے ہیں،جہیز نے غریب ماں باپ کو سڑک پر لاکھڑا کردیا ہے ، ضرورت ہے کہ اس کی طرھ توجہ دی جائے۔جب تک ہم میں سے ہرشخص ان برائیوں کے خلاف کھڑا نہیں ہوگا،حالات اچھے نہیں ہوں گے۔

روزنامہ نوائے ملت
روزنامہ نوائے ملتhttps://www.nawaemillat.com
روزنامہ ’نوائے ملت‘ اپنے تمام قارئین کو اس بات کی دعوت دیتا ہے کہ وہ خود بھی مختلف مسائل پر اپنی رائے کا کھل کر اظہار کریں اور اس کے لیے ہر تحریر پر تبصرے کی سہولت فراہم کی گئی ہے۔ جو بھی ویب سائٹ پر لکھنے کا متمنی ہو، وہ روزنامہ ’نوائے ملت‘ کا مستقل رکن بن سکتے ہیں اور اپنی نگارشات شامل کرسکتے ہیں۔
کیا آپ اسے بھی پڑھنا پسند کریں گے!

جواب چھوڑ دیں

براہ مہربانی اپنی رائے درج کریں!
اپنا نام یہاں درج کریں

- Advertisment -spot_img
- Advertisment -
- Advertisment -

مقبول خبریں

حالیہ تبصرے