جمعرات, 29, ستمبر, 2022
ہوممضامین ومقالاتدعاء مومن کاہتھیارہے،جامعہ مدنیہ سبل پور،پٹنہ میں دعاء یونس کااہتمام

دعاء مومن کاہتھیارہے،جامعہ مدنیہ سبل پور،پٹنہ میں دعاء یونس کااہتمام

 

دعاء مومن کاہتھیارہے،جامعہ مدنیہ سبل پور،پٹنہ میں دعاء یونس کااہتمام

شمیمہ خاتون مرحومہ کے انتقال پرجامعہ مدنیہ میں دعاء مغفرت کااہتمام

دعاء مومن کاہتھیارہے،جامعہ مدنیہ سبل پور،پٹنہ میں دعاء یونس کااہتمام

(پریس ریلیز،پٹنہ،30 دسمبر2021)
حضور اکرم ﷺ نے فرمایاہے:کہ دُعامؤمن کا ہتھیار ہے، جس طرح ہتھیار دشمن کے حملہ وغیرہ سے انسان بچ سکتاہے،اسی طرح دعا بھی آفات سے حفاظت کا ذریعہ ہے۔اسی طرح حضور اکرم ﷺ نے ارشاد فرمایا ہےکہ تمہارے پروردگار میں بدرجہ غایت حیا اور کرم کی صفت ہے، جب بندہ اس کے آگے مانگنے کے لئے ہاتھ پھیلاتا ہے تواس کوحیا آتی ہے کہ ان کوخالی ہاتھ واپس کردے، یعنی کچھ نہ کچھ عطا فرمانے کا فیصلہ ضرور فرماتا ہے۔جامعہ مدنیہ سبل پورپٹنہ میں دعاء یونس کے موقع پر خطاب کرتے ہوئے جناب مولانامرغوب الرحمن صاحب قاسمی معاون مہتمم جامعہ ہذانے یہ باتیں کہیں،انہوں نے کہا:اللہ سے مانگنے میں کنجوسی مت کرو،اس لئے کہ وہ ذات بڑی سخی ہے،وہ تو بن مانگے دیتاہے،اور جب تم مانگوگے تو وہ ضرور دے گا۔معمول کے مطابق آج بروز جمعرات جامعہ مدنیہ سبل پور،پٹنہ میں دس بجے دن دعاء یونس ”لَا إِلَهَ إِلَّا أَنْتَ سُبْحَانَكَ إِنِّي كُنْتُ مِنَ الظَّالِمِينَ”کااہتمام ہوا،آپ کو بتادیں کہ جامعہ مدنیہ سبل پور، پٹنہ؛ریاست بہارکا بہت ہی مشہورومعروف ادارہ ہے،اکابرواسلاف کے مشورہ سے،مدرسہ اسلامیہ شمس الہدیٰ پٹنہ کے سابق پرنسپل جناب مولانامحمدقاسم صاحبؒ نے 1989میں اس کو قائم کیا تھا، اور بھاگلپورکے فسادزدہ مظلومین کے چاربچوں سے تعلیم کا آغازوافتتاح کیاتھا،بانی جامعہ،اور اساتذہ جامعہ مدنیہ کی محنت سے ادارہ نے بہت ہی قلیل عرصہ میں ترقی کی،اور ایک مثالی ادارہ بن کرملک وقوم میں اپنانام روشن کیا،بانی جامعہ حضرت مولانامحمدقاسم صاحبؒ نے ہی اس کے قیام کے اول دن سے دعاء یونس کا آغازکیاتھا ،وہ سلسلہ آج بھی قائم ہے،ہرجمعرات کو دعاء یونس کا اہتمام ہوتاہے،جس میں تمام اساتذہ،طلبہ کے ساتھ،شہرکے معززحضرات شریک ہوتے ہیں،یاوہ دعاء کی گذارش کرتے ہیں،مرحومین کے لئے دعاء مغفرت،اور مریضوں کی صحت وشفایابی ودیگرمقاصد کے لئے دعائیں کی جاتی ہیں ، آج خصوصی طور پر جناب سیدحسنین صاحب(سبزی باغ) کی والدہ مرحومہ کے انتقال پر ملال پر ایصال ثواب کااہتمام کیاگیا،قرآن کریم کی آیتیں پڑھی گئیں،صلوٰۃ تنجیناکاوردبھی کیاگیا،واضح رہے کہ گذشتہ 28 دسمبرکو جناب سیدضیاحسین مرحوم کی اہلیہ اور سیدحسنین صاحب کی والدہ شمیمہ خاتون مرحومہ اس دنیائے فانی سے رحلت فرماگئیں،جامعہ مدنیہ سبل پور، پٹنہ کے مہتمم جناب مولانامحمدحارث بن مولانامحمدقاسم صاحبؒ ،جناب مولانامرغوب الرحمن صاحب،قاری ایازاحمد،مولانامنہاج الدین،مفتی خالدانور،قاری عبدالحسیب صاحب،مولاناعمرفاروق تجہیز وتکفین میں شریک بھی ہوئے،آج جامعہ مدنیہ سبل پور،پٹنہ میں دعاء مغفرت کااہتمام کیاگیا،جس میں جناب مولانامرغوب الرحمن صاحب،مفتی عبدالاحد صاحب،مولانامنہاج الدین صاحب،مفتی خالد انور پورنوی،مفتی احمدعلی، مولاناعبدالغنی،مولاناعبدالرحمن،حافظ نجم الہدی،مولاناسہیل اختر مظفر پور ی، قاری عبدالحسیب،مولانا امیرالہدی، مولانا نورالزماں،قاری محمدصالح استوی، مولانامحمداکبر،مولانامہجود شریک ہوئے،جامعہ مدنیہ کے معاون مہتمم اور صدرالمدرسین جناب مولانامرغوب الرحمن صاحب نے فرمایا:شمیمہ خاتون مرحومہ بہت ہی نیک،پارسا،اور علماء نواز تھیں،جامعہ مدنیہ سبل پور،پٹنہ کے بانی حضرت مولانا محمدقاسم صاحبؒ کے بہت زیادہ عقیدت مند تھیں،جامعہ مدنیہ سبل پور،پٹنہ کی بڑی معاون تھیں،اللہ ان کی مغفرت فرمائے،اورپسماندگان کو صبرجمیل کی دولت سے مالامال کرے، دیگرمرحومین ،بالخصوص جناب مشتاق صاحب عالم گنج کے لئے بھی دعاء مغفرت کی گئی۔جن مریضوں اور بیماروں کی خبرملی تھی،ان کی صحت یابی کے لئے دعاء کی گئی،جناب مولانامرغوب الرحمن صاحب کی رقت آمیز دعاء پر مجلس اختتام پذید ہوئی۔

روزنامہ نوائے ملت
روزنامہ نوائے ملتhttps://www.nawaemillat.com
روزنامہ ’نوائے ملت‘ اپنے تمام قارئین کو اس بات کی دعوت دیتا ہے کہ وہ خود بھی مختلف مسائل پر اپنی رائے کا کھل کر اظہار کریں اور اس کے لیے ہر تحریر پر تبصرے کی سہولت فراہم کی گئی ہے۔ جو بھی ویب سائٹ پر لکھنے کا متمنی ہو، وہ روزنامہ ’نوائے ملت‘ کا مستقل رکن بن سکتے ہیں اور اپنی نگارشات شامل کرسکتے ہیں۔
کیا آپ اسے بھی پڑھنا پسند کریں گے!

جواب چھوڑ دیں

براہ مہربانی اپنی رائے درج کریں!
اپنا نام یہاں درج کریں

- Advertisment -spot_img
- Advertisment -
- Advertisment -

مقبول خبریں

حالیہ تبصرے