حکومت کی شقی القلبی

حکومت کی شقی القلبی: عثمان واؔرد سہارنپوری :- حکومت ہند کی مظلومیت سے ہندوستان کا ہر طبقہ یکساں طور پر متاثر ہوا ہے چاہے وہ مذہبی لوگوں کی گرفتاری ہو یا کسانوں کا احتجاج این آر سی کا مسئلہ ہو یا سی اے اے پر رقص کاری غرض ہندوستان کی ملی جلی تہذیب کو اس سے کافی نقصان اٹھانا پڑا ہے

حکومت کی شقی القلبی

حکومت ہند کے کچھ افراد ہیں جو چند ایشوز کو ملک کی پر امن فضاؤں میں اچھال کر انسانیت کو دہشت زدہ کرنے اور حالات کو بگاڑ نے کی بے فضول کوششیں کر رہے ہیں اور یکجائیت کو ختم کرنے یہاں تک کہ ہندوستان کی ملی جلی تہذیب کو دو حصوں میں تقسیم کرنے کی فراق میں ہیں یہ کوئی بہتر کام نہیں ہورہا ہے لہذا اگر وہ ایسی اوچھی حرکتیں کرنے سے گریز نہیں کرتے ہیں تو حکومت کو چاہیے کہ وہ ان پر قانونی کاروائی کرے نہیں تو ان کی یہ کشیدگی حکومت ہند کی پیشانی پر ہمیشہ ہمیش کئے لئے وہ نشانات چھوڑے گی جنہیں چاہتے ہوئے بھی بھارتی جنتا پارٹی صاف نہیں کرسکے گی ۔

حکومت ہند کی مظلومیت سے ہندوستان کا ہر طبقہ یکساں طور پر متاثر ہوا ہے چاہے وہ مذہبی لوگوں کی گرفتاری ہو یا کسانوں کا احتجاج این آر سی کا مسئلہ ہو یا سی اے اے پر رقص کاری غرض ہندوستان کی ملی جلی تہذیب کو اس سے کافی نقصان اٹھانا پڑا ہے ،، حال ہی میں وزیراعظم کا عالمی سطح پر پیغام محبت لیکر پہنچنا قابل ستائش ہے لیکن یہی پیغام اگر وزیراعظم ہندوستان میں عملی طور پر انجام دے تو کیا ہی بہتر ہو

بہر کیف موجودہ حالات میں فہم و فراست سے کام لینے کی ضرورت ہے اور حکومت کے شرپسند افراد سے حساس رہنے کی ضرورت ہے انکی شرپسندی پر آپ کا ردعمل کیا ہونا چاہیے ؟ اسے بڑی باریک بینی سے سمجنے کی اشد ضرورت ہے لہذا اسے قانون کی آنکھ سے دیکھ کر آپ سراپا احتجاج بن نے کی کوشش کریں عالمی پیمانے پر اپنی آواز میں مزید طاقت پیدا کرنے کے لئے شوشل میڈیا کا استعمال مثبت انداز میں کریں چونکہ ذرائع ابلاغ واحد ایسا پلیٹ فارم ہے جس کے ذریعے سے آپ اپنی دبی کچلی آواز کو بلند کرسکتے ہیں ہم سب کو معلوم ہے کہ دور حاضر میں شوشل میڈیا کا استعمال ناجائز اور غیر قانونی طریقے سے کیا جارہا ہے لہذا آپ عوام کے سامنے اپنی مثبت فکر کا ثبوت پیش کریں آپ کا لہجہ احتجاجی نہ ہوتے ہوئے محبت و بھائی چارگی کا عکاس ہو کہیں ایسا نہ ہو کہ آپ کا کوئی لفظ کوئی جملہ کسی کی پریشانی میں مزید اضافہ کا باعث بنے اور ہاں ملی تنظیموں کو نشانہ بناکر اپنی بدکرداری او نا اہلی کا ثبوت ہر گز نہ دے۔