بدھ, 5, اکتوبر, 2022
ہوماعلان واشتہاراتحضرت مولانامحمدقاسم صاحبؒ نے جو چمن لگائے ہیں،وہ مرجھائے نہیں:پروفیسر شکیل احمدقاسمی

حضرت مولانامحمدقاسم صاحبؒ نے جو چمن لگائے ہیں،وہ مرجھائے نہیں:پروفیسر شکیل احمدقاسمی

علم کا مقصد،اللہ کی معرفت حاصل کرناہے:مفتی توقیرعالم قاسمی

حضرت مولانامحمدقاسم صاحبؒ نے جو چمن لگائے ہیں،وہ مرجھائے نہیں:پروفیسر شکیل احمدقاسمی

(پریس ریلیز)
آپ سب علم حاصل کرنے کے لئے یہاں آئے ہیں،تو پھر دنیاکمانے کی طرف توجہ مت دیجئے،علم کا مقصد اللہ کی معرفت حاصل کرناہے،جتنی زیادہ رب کی معرفت حاصل ہوگی،تقوی،للہیت پیدا ہوگی، جامعہ مدنیہ سبل پور،پٹنہ کے طلبہ سے خطاب کرتے ہوئے دارالعلوم دیوبندکے سابق معین المدرسین جناب مفتی توقیرعالم صاحب قاسمی،بانی ومہتمم سراج العلوم اورا،نندیاں،پورنیہ نے یہ باتیں کہیں،واضح رہے کہ جامعہ مدنیہ سبل پور،پٹنہ میں ،رابطہ مدارس اسلامیہ عربیہ بہارکی جانب سے منعقد میٹنگ میں شرکت کےلئے بہارکے مختلف اضلاع سے علماء کرام تشریف لائے تھے،اس موقع پرجناب مولاناغیاث الدین صاحب مہتمم جامعہ حسینیہ مدنی نگر کشن گنج،جناب مفتی جاویداقبال صاحب قاسمی صدرجمعیۃ علماء بہار،فاران فائونڈیشن انڈیا کے چیرمین پروفیسر مولانا شکیل احمد قاسمی پٹنہ،جناب مفتی توقیرعالم صاحب قاسمی ،جناب مولاناخالدانور صاحب جنرل سکریٹری جمعیۃ علماء کشن گنج، جناب مفتی مناظرنعمانی ترجمان جمعیۃ علماء کشن گنج ،جامعہ مدنیہ سبل پور،پٹنہ کی جانب سے منعقد دعائے یونس میں شریک ہوئے،اور یہ جان کر بیحد متاثرہوئے کہ جامعہ مدنیہ کے قیام کے اول دن سے یہ سلسلہ یہاں قائم ہے،اس موقع پردارالعلوم دیوبند کے سابق معین المدرسین جناب مفتی توقیرعالم صاحب قاسمی نے طلبہ کے بیچ مختصر خطاب بھی کیا، انہوںے کہا:بچو!جب آپ تعلیم حاصل کررہے ہیں،تو دنیاکی فکرسے اپنے آپ کو آزاد کرلیجئے، یکسوئی کے ساتھ ،محنت ولگن اورشوق سے پڑھئے،انہوں نے حضرت مولاناقاسم صاحب نانوتویؒ کا وہ قصہ بھی سنایاکہ ایک شخص ہیرے ، جواہرات کی تھیلی لے کرپہونچا،کہا:حضرت قبول کرلیجئے،آپ نے انکارکردیا،کچھ دیربعد حضرت ؒجانے لگے،اور جوتامیں پیررکھاتو دیکھاکہ ہیرے،جواہرات کی تھیلی تو اسی کے اندرہے،حضرت مولاناقاسم صاحب نانوتوی ؒ نے فرمایا:کہ جب دنیاسے بیزاری ہو تو دنیااسی طرح ملتی ہے،اس واقعہ کو سناکرمفتی صاحب نے طلبہ کی اس جانب توجہ مبذول کرائی کہ محنت ولگن سے پڑھئے، یہ مت سوچئے کہ کھائیں گےکیسے؟اللہ رزاق ہے،جو اللہ مدرسہ میں بغیرکسی وسائل کے اتنے سارے بچوں کو کھلاسکتاہے، تو وہی اللہ ہمیشہ کھلائے گا۔فاران فائونڈیشن انڈیا کے چیرمین پروفیسر مولانا شکیل احمد قاسمی پٹنہ نے بھی اہم خطاب فرمایا،انہوں نے کہا:بچو!تمہیں اچھادارہ ملاہے،اچھے اساتذہ ملے ہیں،اس لئے اس کی قدرکرو،اورمحنت سے پڑھو،انہوں نے کہا:یہاں کے اساتذہ جامعہ میں معتکف ہیں،جب بھی کوئی مسئلہ سمجھناچاہو، وہ تمہارے سامنے موجودہیں،اس سے بڑی آسانی اورکیاہوگی؟انہوں نے کہا:جامعہ مدنیہ سبل پور،پٹنہ اور اس کے بانی حضرت مولانامحمدقاسم صاحبؒ سے ہمارارشتہ بہت پراناہے،یہاں کے اساتذہ ایک چیلیج کے طورپرہیں،حضرت مولاناؒ کے بعد ادارہ مرجھائے نہیں،اس کی مکمل فکر،ان کی کرنی ہے۔وقت کی تنگی کی وجہ سے تمام مہمانان کی بات نہیں ہوسکی،جامعہ مدنیہ سبل پور،پٹنہ کے استاذ جناب مولانامنہاج الدین صاحب قاسمی نے مہمانوں کے سامنے جامعہ مدنیہ کا تعارف کرایا ، جامعہ مدنیہ کے مہتمم جناب مولانامحمدحارث بن مولانامحمدقاسم صاحبؒ،اور معاون مہتمم جناب مولانامرغوب الرحمن صاحب نے اچھے اندازمیں مہمانوں کا استقبال کیا، اور ضیافت فرمائی،حضرت مولاناغیاث الدین صاحب کی رقت آمیز دعاء پر مجلس اختتام پذیرہوئی۔

روزنامہ نوائے ملت
روزنامہ نوائے ملتhttps://www.nawaemillat.com
روزنامہ ’نوائے ملت‘ اپنے تمام قارئین کو اس بات کی دعوت دیتا ہے کہ وہ خود بھی مختلف مسائل پر اپنی رائے کا کھل کر اظہار کریں اور اس کے لیے ہر تحریر پر تبصرے کی سہولت فراہم کی گئی ہے۔ جو بھی ویب سائٹ پر لکھنے کا متمنی ہو، وہ روزنامہ ’نوائے ملت‘ کا مستقل رکن بن سکتے ہیں اور اپنی نگارشات شامل کرسکتے ہیں۔
کیا آپ اسے بھی پڑھنا پسند کریں گے!

جواب چھوڑ دیں

براہ مہربانی اپنی رائے درج کریں!
اپنا نام یہاں درج کریں

- Advertisment -spot_img
- Advertisment -
- Advertisment -

مقبول خبریں

حالیہ تبصرے