بدھ, 30, نومبر, 2022
ہومبریکنگ نیوزارریا نیوزجمعیت_سدبھاؤنامنچ کے تحت ارریہ بہار میں سدبھاؤنا سنسد کا خوبصورت پروگرام

جمعیت_سدبھاؤنامنچ کے تحت ارریہ بہار میں سدبھاؤنا سنسد کا خوبصورت پروگرام

#جمعیت_سدبھاؤنامنچ کے تحت ارریہ بہار میں سدبھاؤنا سنسد کا خوبصورت پروگرام

#برادرانِ_وطن نے جمعیت کے اس اقدام کو سراہتے ہوئے کہا کہ ہم اس مشن کو ہر بلاک تک لے جائیں گے۔

رپورٹ:#محمداطہرالقاسمی
جنرل سکریٹری
جمعیت علماء ارریہ
24/ ستمبر 2022
_________________
آزادی وطن کے بعد ملک کے تمام شہریوں کے لئے جو سیکولر اور جمہوری دستور و آئین بنایا گیا آج فرقہ پرست طاقتیں اس کی دھجیاں اڑارہی ہیں اور ملک کی دوسری سب سے بڑی اکثریت مسلمانوں اور مظلوم طبقوں کو نشانہ بنائے ہوئے ہیں۔حد تو یہ ہے کہ مسلمانوں کی مساجد و مدارس کے ساتھ دنیا کی سب سے مقدس شخصیت حضرت محمد مصطفیٰ صلی اللہ علیہ وسلم کو بھی کھلم کھلا گالیاں دی جارہی ہیں اور انتہائی نفرت انگیز دھرم سنسدوں کے ذریعے مسلمانوں کے قتل عام کے لئے لوگوں کو اکسایا جارہاہے۔جس سے ملک کی امن و سلامتی اور یہاں کی صدیوں پرانی پیار ومحبت کی تہذیب کو شدید خطرہ لاحق ہوگیا ہے۔
ملک کے اس بدترین منافرتی ماحول میں یہاں کے ایک ایک وفادار اور امن پسند شہری کی ذمےداری ہے کہ وہ نفرت کی ان قوتوں کے خلاف امن و سلامتی اور آپسی پیار ومحبت کوفروغ دینے اور مل جل کر ایک ساتھ پہلے کی طرح رہنے کے لئے ماحول سازی میں اپنا موثر کردار ادا کریں!
قابل مبارکباد ہیں جمعیت علماء ہند کے صدر محترم حضرت مولانا سید محمود اسعد مدنی جنہوں نے بروقت یہ فیصلہ لیا کہ کثرت میں وحدت اور تمام مذاہب کے احترام کے ساتھ آپسی سدبھاؤ اور برادرانہ سلوک کے فروغ کے لئے ملک کی تمام ریاستوں اور ریاست کے تمام ضلعوں میں”جمعیت سدبھاؤنا منچ” کی تشکیل کی اور آج مرکزی دفتر جمعیت علماء ہند سمیت ملک کی متعدد ریاستوں میں مختلف مقامات پر سدبھاؤنا سنسد کا پروگرام منعقد ہوا۔
مرکزی و صوبائی جمعیت کی ہدایت کے مطابق الحمد للّٰہ آج ضلع ارریہ میں بھی جمعیت سدبھاؤنا منچ کے تحت سدبھاؤنا سنسد کا خوبصورت پروگرام منعقد ہوا۔عین وقت پر بارش ہوجانے کے باوجود جمعیت سدبھاؤنا منچ ضلع ارریہ کے بیشتر اراکین کے ساتھ دیگر معززین بھی شریک ہوئے۔
پروگرام کی صدارت جمعیت سدبھاؤنا منچ ارریہ کے صدر سابق آرمی جناب رنجیت سنگھ نے اور نظامت مشترکہ طور پر ضلعی جنرل سکریٹری( محمد اطہر القاسمی) اور منچ کے سکریٹری مولانا مصور عالم ندوی نے کی۔
اس موقع پر جمعیت سدبھاؤنا منچ ارریہ کے صدر جناب رنجیت سنگھ نے کہا کہ یہاں کے انصاف پسند تمام شہریوں کے دل میں یہ بات تھی کہ کوئی ایسا منچ بنے جس میں سینکڑوں سال پرانے آباء واجداد کی گنگا جمنی تہذیب اور اور آپسی پیار ومحبت کو پھر سے فروغ دیا جائے۔انہوں نے کہاکہ مٹھی بھر لوگ سیاسی مفاد کے لئے نفرت کی بیج بونے میں لگے ہیں لیکن ہمیں مل جل کر اس کھائی کو پاٹنا ہوگا۔انہوں نے جمعیت علماء ہند کو دل کی گہرائیوں سے مبارکباد پیش کی کہ انہوں نے بروقت یہ فیصلہ لیا اور سدبھاؤنا منچ کا قیام کیا،ہم لوگ مل کر اس منچ کو ضلع کے ہر بلاک تک لے جائیں گے۔
منچ کے سکریٹری مولانا مصور عالم ندوی نے اکابرین کی انسانیت نوازی کی مثالوں کے ذریعے سامعین کو اس منچ کی اہمیت سے آگاہ کیا۔
وہیں جمعیت علماء ارریہ کے صدر ڈاکٹر عابد حسین نے کہا کہ قربانیوں کے جذبے اور انسانیت کی خدمت کے شوقین جو لوگ ہیں آج اس منچ میں وہی لوگ ہیں کل ہم لوگوں کی محنت سے اور لوگ اسے ہاتھوں ہاتھ لیں گے۔
پروگرام میں نائب صدر،رامانند یادو،پربھاش کمار یادو اور جوائنٹ سیکرٹری منوج کمار سمن وغیرہ نے بھی اپنے خیالات کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ ہم سب ایک ہیں اور اس خوبصورت منچ سے اسی ایکتا کا پیغام دیتے رہیں گے۔کیونکہ اسی میں دل کا جمعیت_سدبھاؤنامنچ کے تحت ارریہ بہار میں سدبھاؤنا سنسد کا خوبصورت پروگرامسکون اور آتما کو شانتی ہے۔
آزاد اکیڈمی کے استاذ جناب ماسٹر ارشد انور الف نے کہاکہ ہم اسٹیج سے جو باتیں کہ رہے ہیں ہمیں عوامی تحریک میں بھی اسے پہنچانا چاہئے ورنہ لوگ اس سے مستفید نہیں ہوں گے۔
جوائنٹ سیکرٹری جناب اقبال علیگ بارش کی وجہ سے گرچہ حاضر نہیں ہوسکے مگر سبھوں کی آمد کو سراہتے ہوئے بےحد خوشی کا اظہار کیا۔
(نوٹ) کوئی صاحب اس رپورٹ کی ہندی بھی کردیں تو نوازش ہوگی!

توحید عالم فیضی
توحید عالم فیضیhttps://www.nawaemillat.com
روزنامہ ’نوائے ملت‘ اپنے تمام قارئین کو اس بات کی دعوت دیتا ہے کہ وہ خود بھی مختلف مسائل پر اپنی رائے کا کھل کر اظہار کریں اور اس کے لیے ہر تحریر پر تبصرے کی سہولت فراہم کی گئی ہے۔ جو بھی ویب سائٹ پر لکھنے کا متمنی ہو، وہ روزنامہ ’نوائے ملت‘ کا مستقل رکن بن سکتے ہیں اور اپنی نگارشات شامل کرسکتے ہیں۔
کیا آپ اسے بھی پڑھنا پسند کریں گے!

جواب چھوڑ دیں

براہ مہربانی اپنی رائے درج کریں!
اپنا نام یہاں درج کریں

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.

- Advertisment -
- Advertisment -
- Advertisment -

مقبول خبریں

حالیہ تبصرے