ہومبریکنگ نیوزارریا نیوزجمعیت علماء جوکی ہاٹ کے زیراہتمام مقامی جمعیتوں کا تربیتی ورکشاپ اختتام...

جمعیت علماء جوکی ہاٹ کے زیراہتمام مقامی جمعیتوں کا تربیتی ورکشاپ اختتام پذیر

جمعیت علماء جوکی ہاٹ کے زیراہتمام مقامی جمعیتوں کا تربیتی ورکشاپ اختتام پذیر

ورکشاپ سے صدر جمعیت علماء بہار کا خطاب،فرمایا کہ جمعیت کا کام عبادت سمجھ کر انجام دیں!

پندرہ پنچایت کی جمعیتوں نے مشترکہ طور پر کہاکہ ہم جمعیت کی تحریک کو ایک ایک گھر تک لے کر جائیں گے

رپورٹ:محمد اطہر القاسمی
جنرل سکریٹری جمعیت علماء ارریہ،بہار۔
29/12/2022

مرکزی و صوبائی جمعیت کی ہدایت اور ضلعی جمعیت کی نگرانی میں جمعیت علماء بلاک جوکی ہاٹ کے زیراہتمام گذشتہ 18 ستمبر 2022 کو بلاک سطحی جمعیت کے جملہ اراکین کی موجودگی میں ادارہ امام الہند اکیڈمی بھبھڑا چوک جوکی ہاٹ میں باضابطہ پنچایت سطحی مقامی جمعیتوں کی تشکیل کا اعلان ہوا تھا۔تین ماہ کے اس عرصے میں تسلسل کے ساتھ مذکورہ بلاک کے 26 پنچایتوں میں سے اب تک کل 13 پنچایتوں کی مقامی یونٹوں کی تشکیل مکمل ہونے پر ان تمام نومنتخب مقامی کارکنان و رضاکاران کے لئے یہاں نیو دہلی پبلک اسکول اودا ہاٹ میں ایک مشاورتی و تربیتی ورکشاپ کا انعقاد ہوا،جس میں مذکورہ بلاک کے 13 پنچایتی یونٹوں کے ساتھ جمعیت علماء بلاک ارریہ کے دو منتخب پنچایتوں کے اراکین بھی شامل ہوئے۔اجلاس کے آغاز کے بعد باضابطہ ہر پنچایت یونٹ کی حاضری لی گئی،اچانک موسم کے بگڑ جانے اور سرد لہر کے باوجود مذکورہ بالا پنچایتوں کے تقریباً دو سو (200) سے زائد اراکین و رضاکاران شریک ہوئے۔
اجلاس کی صدارت بزرگ عالم دین جمعیت علماء بہار جوکی ہاٹکے صدر جناب مفتی جاوید اقبال صاحب قاسمی دامت برکاتہم اور نظامت کے فرائض بلاک سکریٹری مولانا کاشف نسیم اور مفتی جمشید جوہر قاسمی نے مشترکہ طور پر انجام دی۔
ورکشاپ کا آغاز حافظ عبد الواجد کی تلاوت قرآن جبکہ بلاک نائب صدر مولانا فیاض احمد راہی کی جمعیت علماء جوکی ہاٹ کے زیراہتمام مقامی جمعیتوں کا تربیتی ورکشاپ اختتام پذیرخوبصورت نعت رسول سے ہوا۔
ورکشاپ کے آغاز پر مولانا کاشف نسیم اور مفتی جمشید جوہر قاسمی نے اپنی تمہیدی گفتگو میں مہمانوں کا استقبال کرتے ہوئے مختصراً جمعیت کا تعارف کرایا جبکہ مولانا کاشف نسیم نے ورکشاپ کا چار نکاتی ایجنڈا پیش کیا:
پہلا ایجنڈا:اصلاح معاشرہ کے تحت جہیز و نشہ مخالف مہم
دوسرا ایجنڈا:دینی تعلیمی بورڈ کے تحت منظم مکاتب کا قیام
تیسرا ایجنڈا:مدارس کے طلبہ کے لئے جمعیت اوپن اسکول کا آغاز اور چوتھا ایجنڈا:مختلف فلاحی و تعمیری امور کی انجام دہی کے لئے ملت فنڈ کی ممبر سازی۔
پھر ان تمام ایجنڈے پر باری باری سے الگ الگ پنچایتوں کے صدور و سکریٹری صاحبان نے اراکین کے سامنے ضروری مواد پیش کئے گئے۔
اصلاح معاشرہ کے تحت جہیز و نشہ مخالف مہم کو پنچایت سطح پر مزید مضبوطی اور تسلسل کے ساتھ انجام دینے پر مفتی نظر الحق قاسمی جوائنٹ سکریٹری جمعیت علماء جوکی ہاٹ نے گفتگو کی،بلاک کے بقیہ 13 پنچایت یونٹوں کی تشکیل کے لئے مولانا محمد واصف قاسمی سکریٹری جمعیت علماء پنچایت مصوریہ چین پور نے لائحہ عمل پیش کیا اور تمام 13 منتخب یونٹوں نے اپنے قرب و جوار کے بقیہ 13 پنچایتوں کی تشکیل کی ذمےداریاں قبول کی،ینی تعلیمی بورڈ کے تحت منظم مکاتب کے قیام کے حوالے سے مولانا مختار احمد قاسمی سکریٹری جمعیت علماء پنچایت چلہنیاں نے گفتگو کی،طلبہ مدارس کے لئے جمعیت اوپن اسکول سے متعلق گفتگو مولانا سلمان کوثر نعمانی سکریٹری جمعیت علماء پنچایت ڈوبا نے کی اور ملت فنڈ کی ممبر سازی مہم کے حوالے سے ڈسٹرکٹ آرگنائزر جمعیت علماء ہند مولانا محمد آصف قاسمی نے اپنی باتیں رکھی۔
چاروں ایجنڈے پر گفتگو کے بعد اپنی تاثراتی گفتگو میں نائب صدر جمعیت علماء ارریہ مولانا فاروق مظہری نے اس تربیتی اجتماع کو پورے ضلع کے لئے رہنما و راہ عمل قرار دیتے ہوئے تمام منتخب پنچایتوں کی مقامی یونٹوں کو مبارکباد پیش کی۔نائب صدر جمعیت علماء ارریہ مولانا شاہد عادل قاسمی جمعیت علماء جوکی ہاٹ کے زیراہتمام مقامی جمعیتوں کا تربیتی ورکشاپ اختتام پذیرنے کہاکہ دنیا کی قومیں اپنے معاملات انتہائی خاموشی اور منظم انداز میں حل کررہی ہیں لیکن ہم مسلم قوم آپس میں ہی الجھے ہوئے ہیں،انہوں نے کہاکہ آپ خوش قسمت ہیں کہ جمعیت آپ کے پنچایت میں آکر آپ کے گھر گھر آپ کو دستک دے رہی ہے اس لئے اب مزید منظم انداز میں جمعیت کی تحریک سے مربوط ہوکر قوم وملت کے لئے میدان عمل میں آجائیں۔
بعد ازاں تمام نومنتخب پنچایت اراکین سے ہدایتی و تربیتی گفتگو احقر محمد اطہر القاسمی نے اور صدارتی خطاب جمعیت علماء بہار کے صدر محترم جناب مفتی جاوید اقبال صاحب قاسمی نے فرمائی۔
جبکہ جمعیت علماء ارریہ کے سرپرست الحاج بذل الرحمٰن،جمعیت علماء ارریہ کے صدر ڈاکٹر عابد حسین،جمعیت علماء بلاک جوکی ہاٹ کے صدر قاری امتیاز احمد جمعیت علماء جوکی ہاٹ کے زیراہتمام مقامی جمعیتوں کا تربیتی ورکشاپ اختتام پذیراور ایڈوکیٹ تبارک حسین کے ساتھ دیگر پنچایت کے ذمےداران نے اپنی تاثراتی گفتگو میں اس ورکشاپ کو تمام نومنتخب اراکین و ذمےداران کے لئے انتہائی مفید و موثر اور رہنما ہدایات قرار دیتے ہوئے سبھوں کو اسی نہج پر اپنے اپنے پنچایت میں پورے خلوص و لگن کے ساتھ کام کرنے کی تلقین کی۔
ورکشاپ کے جملہ شرکاء کے ہاتھوں میں سرخیل مجاہدین آزادی شیخ الاسلام حضرت مولانا سید حسین احمد مدنی نور اللہ مرقدہ سابق صدر جمعیت علماء ہند کا وہ انتہائی اہم مکتوب جو انہوں نے ملت اسلامیہ ہندیہ کے لئے تحریر فرمائی تھی،سپرد کیا گیا اور ساتھ ہی ضلع جنرل سکریٹری کے ذریعے چار نکاتی ایجنڈا کے تحت ترتیب دیا گیا پمفلٹ عزائم،منصوبے اور لائحہ عمل کے نام سے تمام رضاکاران میں تقسیم بھی کیا گیا۔
شرکاء اجلاس سے اپنی ہدایتی گفتگو نے عاجز محمد اطہر القاسمی نے کہاکہ ہم جمعیت کے ساتھ رہیں یا اکیلے زندگی بسر کریں،وراثت نبوی کی علمبرداری کا تقاضا یہی ہے کہ ملت اسلامیہ کے مفادات اور اس کی سماجی و معاشرتی تعمیر وترقی کے لئے اپنی مخلصانہ خدمات تو پیش کرنی ہوگی۔عاجز نے کہاکہ ہمارا سماج برائیوں اور جرائم کی آماجگاہ بن جائے اور ہم اپنی مسجد،مدرسہ،اسکول،کالج،تجارت اور سیاست کی دنیا میں مگن رہیں،یہ نہیں ہوسکتا۔جس طرح گھر میں آگ لگنے پر سارے لوگ مل جل کر آگ بجھاتے ہیں ہم تمام خدام و رضاکاران پر بھی واجب ہے کہ اپنی ذاتی ضروریات زندگی میں سے روزانہ کچھ وقت اپنے سماج و معاشرے کی تعمیر وترقی کے لئے نکالیں،یہی ہمارے زندہ قوم ہونے کی نشانی ہے۔اگر آپ دھرتی پر زندہ ہیں تو اپنی حساسیت و غیرت کے ساتھ اپنی زندہ دلی کا مظاہرہ کریں اور اچھائیوں کا ساتھ اور برائیوں سے لڑائی اس وقت تک لڑیں جب تک آپ کی آخری سانس باقی ہے۔
تمام نومنتخب اراکین مقامی جمعیت نے ہاتھ اٹھاکر یقین دلایا اور وعدہ کیا کہ انشاء اللہ جہیز و نشہ ہو یا دیگر سماجی معاشرتی برائیوں کا خاتمہ اس کا آغاز اپنے گھرانے سے کریں گے اور جمعیت علماء کی ہدایات پر اپنے اپنے پنچایت میں جاکر بھرپور کوششیں کریں گے۔
صدارتی گفتگو کرتے ہوئے مفتی جاوید اقبال صاحب قاسمی نے کہاکہ آپ سب قابل مبارکباد ہیں کہ اس شدید ترین ٹھنڈک میں سینکڑوں کی تعداد میں یہاں جمع ہوئے ہیں۔جمعیت علماء ارریہ مسلسل قوم وملت کی تعمیر وترقی اور سماجی و معاشرتی برائیوں کے خلاف میدان عمل میں ہے،مفتی محمد اطہر القاسمی جنرل سکریٹری جمعیت علماء ارریہ خصوصی مبارکباد کے مستحق ہیں کہ انہوں نے ریاست بہار میں جمعیت علماء ارریہ کو ایک الگ ہی پہچان دلائی ہے۔
صدر اجلاس نے جمعیت علماء ہند کی تاریخ اور اکابرین کی قربانیوں کا تذکرہ کرتے ہوئے شرکاء سے فرمایا کہ آپ فی الوقت کم از کم چار کام ضرور کرلیں۔اول یہ کہ مدارسِ اسلامیہ سے مربوط رہ کر ان کے شانہ بشانہ کھڑے ہوں،دوم یہ کہ دعوت وتبلیغ کے ہاتھوں کو مضبوط کریں،سوم یہ کہ سوسالہ تاریخ ساز ملی تنظیم جمعیت علماء ہند کے ہاتھوں کو مضبوط کریں اور اسے عبادت سمجھیں اور چوتھا یہ کہ اللہ رب العزت سے اپنا رشتہ مضبوط کرنے کے لئے خانقاہ اور ذکر و اذکار کی مجالس میں شریک ہوں۔حضرت مفتی صاحب نے فرمایا کہ لوگ اسی اور بیس کا فارمولہ پیش کررہے ہیں ظاہر سی بات ہے کہ ہم ان سے جنگ لڑکر تو مقابلہ نہیں کرسکتے،اس لئے ہمیں ان سے پیار ومحبت کے ساتھ اپنے ملک و ملت کی تعمیر کرنی ہے۔
درمیان میں سوال و جواب کا سیشن بھی چلا اور جن کے ذہن میں جو سوالات یا خدشات تھے بلاتکلف سبھوں نے پیش کیا اور صدر جمعیت کے علاوہ دیگر ذمےداران نے بھی بڑی خوبصورتی کے ساتھ سبھوں کے جوابات دیئے۔
مذکورہ بالا ذمےداران کے علاوہ شرکاء میں سے بطورِ خاص درج ذیل خدام و اراکین کے نام درج ذیل ہیں:
مولانا ارشد جمال سبیلی،مفتی ندیم اختر قاسمی،مفتی مبشر قاسمی،مفتی نظر الحق قاسمی ،مولانا مختار قاسمی ،مولانا عبد الواجد مظاہری ،مفتی ظفر ندوی،مولانا محمد عمر فاروق قاسمی،ماسٹر محمد شمشاد،حافظ صبا قمر ،مولانا نور الدین مظاہری،مولانا خورشید انور نعمانی ،مولانا نعیم الدین مظاہری ،مولانا اشتیاق ندوی ،مولانا زکریا مفتاحی ،مولانا محمد ابراہیم،مولانا غیاث الدین نعمانی، قاری محمد مدثر ،حافظ راغب نعمانی ،حافظ ابوذر غفاری ،مولانا ارقم رحمانی ،حافظ محمد شارب،ماسٹر خالد صبا ،ماسٹر عبد الباقی ،ماسٹر محمد عمر حسین،مکھیا وسیم الرحمن ،مکھیا افسر عالم ،مکھیا محبوب ،مکھیا محمد اختر،مکھیا محمد ساجد،سرپنج نسیم الدین ،چیرمین شمشاد احمد ،جناب فیضان احمد ،جناب نقی احمد،ڈاکٹر نسیم احمد،توصیف نعمانی،محمد زاہد،حافظ محمد شعیب وغیرہ ۔
نائب صدر جمعیت علماء ارریہ مولانا فاروق مظہری صاحب کی دعاء پر مجلس اختتام پذیر ہوئی ۔تمام مہمانان کرام ظہرانے کی ضیافت کے بعد نئے عزائم لےکر اپنے گھروں کو واپس لوٹ گئے۔
اسکول کے ڈائریکٹر ماسٹر نثار عالم نے تمام مہمانانِ کرام کا شکریہ ادا کیا۔

توحید عالم فیضی
توحید عالم فیضیhttps://www.nawaemillat.com
روزنامہ ’نوائے ملت‘ اپنے تمام قارئین کو اس بات کی دعوت دیتا ہے کہ وہ خود بھی مختلف مسائل پر اپنی رائے کا کھل کر اظہار کریں اور اس کے لیے ہر تحریر پر تبصرے کی سہولت فراہم کی گئی ہے۔ جو بھی ویب سائٹ پر لکھنے کا متمنی ہو، وہ روزنامہ ’نوائے ملت‘ کا مستقل رکن بن سکتے ہیں اور اپنی نگارشات شامل کرسکتے ہیں۔
کیا آپ اسے بھی پڑھنا پسند کریں گے!

جواب چھوڑ دیں

براہ مہربانی اپنی رائے درج کریں!
اپنا نام یہاں درج کریں

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.

- Advertisment -
- Advertisment -
- Advertisment -

مقبول خبریں

حالیہ تبصرے