جمعیت علماء ارریہ کا انتخابی اجلاس اختتام پذیر!

86

جمعیت علماء ارریہ کا انتخابی اجلاس اختتام پذیر!


کثیر تعداد میں محبان جمعیت کی شرکت


نومنتخب عہدیداران کو مبارکبادیاں اور نیک خواہشات


نومنتخب عہدیداران کا نئے عزم و حوصلے کے ساتھ مل جل کر کام کرنےکاعزم!
رپورٹ:محمداطہرالقاسمی
05/03/2021


مرکزی و ریاستی جمعیت علماء کی ہدایات کی روشنی میں جمعیت علماء ارریہ کے بلاک سطحی انتخابات کے بعد جمعیت علماء ضلع ارریہ،بہار کا انتخابی اجلاس کل مورخہ 4/مارچ 2021 کو اختتام پذیر ہو گیا۔اجلاس میں ضلع کے تمام 9/ بلاکوں کے جملہ اراکین کے ساتھ ساتھ کثیر تعداد میں علماء،ائمہ،نظماء،اساتذہ،دانش وران اور سماجی کارکنان موجود تھے۔
اجلاس کی صدارت جمعیت علماء ارریہ کے صدر ڈاکٹر عابد حسین اور نظامت جنرل سکریٹری مفتی محمد اطہر القاسمی نے کی۔جبکہ بطورِ مشاہد جمعیت علماء بہار کے صدر جناب مفتی جاوید اقبال صاحب قاسمی دامت برکاتہم از اول تا اخیر اجلاس میں شریک رہے۔
اجلاس کا آغاز جمعیت علماء بلاک جوکی ہاٹ کے نومنتخب صدر قاری امتیاز احمد نے کیا اور گذشتہ ٹرم کی روداد و کارکردگی مفتی محمد اطہر القاسمی نے پیش کیا۔
انتخابی عمل سے پہلے مشاہد حضرت مفتی جاوید اقبال صاحب قاسمی نے اپنے قیمتی خطاب میں فرمایا:
جمعیت علماء ہند سوسالہ تنظیم ہے۔جمعیت کی سوسالہ قربانیاں سنہرے تاریخ میں درج ہیں۔جبکہ موجودہ وقت میں جمعیت علماء ہند کے قومی صدر امیر الہند حضرت مولانا قاری سید محمد عثمان صاحب منصور پوری صدر جمعیت علماء ہند اور ناظم عمومی حضرت مولانا سید محمود اسعد صاحب مدنی کی قیادت میں جمعیت متعدد شعبوں میں اپنی بےلوث خدمات پیش کررہی ہے۔انہوں نے تفصیل سے بتایا کہ کس طرح جمعیت علماء ہند بیک وقت ملکی پیمانے پر قومی یک جہتی پروگرام،مظلوموں کی رہائی و دادرسی،جمعیت یوتھ کلب،دینی تعلیمی بورڈ کے تحت منظم مکاتب،اصلاح معاشرہ اور جمعیت اوپن اسکول کے پروگرام کو تحریک کی شکل میں انجام دے رہی ہے۔
حضرت مفتی صاحب نے اجلاس میں موجود علماء،ائمہ،نظماء،دانش واران اور سماجی کارکنان کو مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ ملک کے موجودہ حالات کو یوں سمجھیں کہ ایک پگڈنڈی ہے،جس کے دونوں طرف خاردار جھاڑیاں ہیں مگر آپ کو اسی راہ سے گذرنا ہے تو لامحالہ راستہ پار کرنے کے لئے آپ کو انتہائی چوکس اور محتاط رہنا ہوگا۔تبھی آپ بحفاظت اپنی منزل کو پہنچ سکیں گے۔
صدر جمعیت علماء بہار نے اخیر میں جمعیت علماء ارریہ کی پوری ٹیم بطورخاص اس کے سکریٹری جنرل مفتی محمد اطہر القاسمی کی حسن کارکردگی کو سراہتے ہوئے کہا کہ میں چار سال سے لگاتار دیکھ رہا ہوں کہ جب کبھی ارریہ میں کوئی مرحلہ پیش آتا ہے تو جمعیت علماء ارریہ اور اس کے فعال سکریٹری اپنی بےلوث خدمات پیش کرتےہیں اور بروقت اپنی موجودگی درج کراکر اپنے احساس جواب دہی کا ثبوت پیش کرتے ہیں۔
صدر محترم کے خطاب کے بعد ترتیب وار 11/ اراکینِ عاملہ پر مشتمل نئی کمیٹی کی تشکیل عمل میں آئی۔صدر جمعیت علماء ارریہ ڈاکٹر عابد حسین اور جنرل سکریٹری مفتی محمد اطہر القاسمی کی حسن کارکردگی کو دیکھتے ہوئے انہیں دوبارہ اگلے ٹرم کے لئے منتخب کرلیاگیا۔جبکہ بقیہ 9/لوگوں میں سے 5/ نئے احباب کو جگہ دی گئی۔
تمام نومنتخب عہدیداران حسب ذیل ہیں:
صدر:
الحاج ڈاکٹر عابد حسین
جنرل سکریٹری:
مفتی محمداطہرالقاسمی
نائبین صدور:
مولانا شاہد عادل قاسمی
مولانا محمد فاروق مظہری
مولانا مصور عالم ندوی
مفتی ہمایوں اقبال ندوی
نائبین سکریٹری:
مولانا فیروز نعمانی
الحاج عابد حسین بھٹہ والے
مولانا اکبر صادق ندوی
جناب قمر الہدی رام پور
خازن:ماسٹر شاکر رضا
اخیر میں صدر مجلس اور نومنتخب صدر ڈاکٹر عابد حسین اور جنرل سکریٹری مفتی محمد اطہر القاسمی نے لوگوں کی بےپناہ محبتوں اور نیک خواہشات کا شکریہ ادا کرتے ہوئے ان کے نیک توقعات پر پورا اترنے کا عزم کیا اور کہا کہ پچھلی کارکردگی کے مقابلے میں جمعیت علماء کے اغراض و مقاصد اور اس کی تحریک کو بلاک کی جمعیت سے مل کر زیادہ بہتر طریقے سے گھر گھر پہونچائیں گے اور تمام کارکنان آپس میں مل جل کر جملہ ملی،سماجی و معاشرتی مسائل پر ایک منظم لائحہ عمل تیار کرکے اس پر عمل درآمد ہونے کی پوری کوشش کریں گے انشاءاللہ۔
جمعیت علماء بہار کے صدر محترم کی دعاء پر مجلس اختتام پذیر ہوئی اور بعد دعاء تمام شرکاء اجلاس نے نومنتخب صدر و سکریٹری اور دیگر تمام عہدیداران کے گلے مل کر انہیں مبارکباد پیش کی اور ان کے لئے نیک خواہشات کا اظہار کیا۔
بطورِ خاص شرکاء اجلاس میں سے الحاج بذل الرحمن،الحاج سید شمیم انور،ماسٹر بختیار ہاشمی،مولانا پروفیسر نعیم الدین شمسی،ماسٹر ارشد انور الف،مولانا آفتاب عالم مظاہری،مفتی راغب عالم قاسمی،مولانا عمر فاروق قاسمی،مفتی محمد خالد قاسمی،مولانا محمد سفیان قاسمی،مفتی ثاقب قاسمی،مولانا سرور ندوی،مولانا محمود الحسن مظاہری،مولانا خورشید انور نعمانی،مفتی نعیم الدین ندوی،مفتی دلشاد احمد نعمانی،مولانامحمد ساجد حسین ندوی،قاری شہنواز أحمد،حافظ غیاث الدین نعمانی،مولانا عبد الجبار ندوی،مفتی محمد یعقوب ندوی،قاری امتیاز احمد،حافظ کاشف نسیم،مولاناعبدالسلام عادل ندوی،مولانا عبد الوارث مظاہری،قاری توحید عالم فیضی،مولانا وثیق الرحمٰن بلچندہ،حافظ ہلال احمد،مفتی جاوید اختر مظاہری،قاری حسیب الرحمٰن رحمانی،الحاج محمد اسعد،مولاناافضل شمسی،قاری احتشام الحق،الحاج جاوید احمد وغیرہ کے نام قابلِ ذکر ہیں۔