جمعرات, 29, ستمبر, 2022
ہوماعلان واشتہاراتجامعہ مدنیہ سبل پور،پٹنہ میں دعاء یونس کااہتمام

جامعہ مدنیہ سبل پور،پٹنہ میں دعاء یونس کااہتمام

 

جو بندہ اللہ سے دعاء نہ مانگے،اللہ اس سے ناراض ہوتاہے:مرغوب الرحمن

پریس ریلیز،مورخہ 19/اگست 

معمول کے مطابق آج بروز جمعرات،جامعہ مدنیہ سبل پور،پٹنہ کی وسیع وعریض مسجدمیں دعاء یونس کااہتمام ہوا،جس میں جامعہ ہذاکےمہتمم جناب مولانا محمد حارث بن مولانامحمدقاسم صاحبؒ،معاون مہتمم جناب مولانامرغوب الرحمن صاحب،اساتذہ وطلبہ شریک ہوئے،دعاء یونس لَا إِلَهَ إِلَّا أَنْتَ سُبْحَانَكَ إِنِّي كُنْتُ مِنَ الظَّالِمِينَ اور آیت کریمہ کاورد کیاگیا،قرآن کریم کی تلاوت اور نعت نبی ﷺ کے بعد ،جناب مولانامرغوب الرحمن صاحب قاسمی معاون مہتمم نے دعاء کی اہمیت وفضیلت کے عنوان پر،اساتذہ اور طلبہ کے بیچ، مختصرخطاب بھی کیا،انہوں نے کہا: ہمیں اللہ سے مانگناچاہئیے،اس لئے کہ وہی دینے والاہے،جبکہ احادیث میں دُعا نہ کرنے پر اللہ تعالیٰ کی ناراضگی کی وعید آئی ہے، حضرت ابوہریرہ رضی اللہ عنہ سے روایت ہے کہ رسول اللہ ﷺ نے ارشاد فرمایا: جوبندہ اللہ تعالیٰ سے نہ مانگے اس سے اللہ تعالیٰ ناراض ہوتا ہے۔دنیا میں ایسا کوئی نہیں ہے جو سوال نہ کرنے سے ناراض ہوتا ہو، حتی کہ والدین بھی اولاد کے ہروقت مانگنے اور سوال کرنے سے چڑھ جاتے ہیں، مگر اللہ تعالیٰ اتنا مہربان ہے کہ جوبندہ اس سے نہ مانگے وہ اس سے ناراض ہوتا ہے کیونکہ اللہ تعالیٰ سے دُعا نہ کرنا تکبر کی علامت ہے اور مانگنے پر اسے پیار آتا ہے۔انہوں نے کہا: یہ دعاء یونس ہے،جس کا آپ سب نے وردکیاہے، جامعہ مدنیہ سبل پور پٹنہ؛جوریاست بہار کامشہور ومعروف، دینی، علمی ،مرکزی ، اور اقامتی ادارہ ہے، 1989میں اس کاقیام عمل میں آیا،1990 میں بھاگلپور کے فساد زدہ مظلومین کے چار بچوں سے تعلیم کاآغاز وافتتاح ہوا،جامعہ میں اپنے قیام کے اول دن سے اس کے بانی حضرت مولانامحمدقاسم صاحب ؒ نے اس دعاء کا اہتمام کروایا،اس کی برکت سے جامعہ مدنیہ نے بہت ہی قلیل عرصہ میں ترقی حاصل کی،اور ملک وبیرون ملک میں اپناایک نمایاں مقام حاصل کیا،وہ سلسلہ الحمدللہ آج بھی جاری ہے،انہوں نے کہا:جب حضرت حضرت یونس علیہ السلام مچھلی کے پیٹ میں چلے گئے تو اس وقت یہی دعاء کی تھی، ’ لَّا إِلَـٰهَ إِلَّا أَنتَ ‘ یعنی،آپ کے سواکئی معبودنہیں،آپ ہی ہیں،سُبْحَانَكَ،آپ تو پاک ہیں، ’ إِنِّي كُنتُ مِنَ الظَّالِمِينَ، ’ بیشک میں اپنے نفس پر ظلم کرنے والوں میں سے ہوں ، اس جملے میں اِن باتوں کا اعتراف ہے کہ اے اللہ میں نے تیرے حکم کا انتظار نہ کرکے تیرا کچھ نہیں بگاڑ ا اور مجھے اس قید میں ڈال کر تو نے مجھ پر کویٴ ظلم نہیں کیا کیونکہ تو اس سے پاک ہے کہ کسی پر ظلم کرے‘ یہ تو ہم انسان ہی ہیں جو جلد باز ہیں، نا شکرے ہیں اور بے صبرے ہیں اور اپنے ہی جان پر ظلم کرنے والے ہیں۔تب ہمارے غفور الرحیم رب نے نہ صرف اپنے نبی کی دعا قبول کی اور انہیں غم (قید) سے نجات بخشی بلکہ یہ بھی فرما دیا کہ جو بھی مومن بندہ یہ دعا مانگے گا ‘ اُسے نجات ملے گی:جناب مولانامرغوب الرحمن صاحب نے طلبہ کو محنت ولگن اور شوق سے تعلیم وتربیت حاصل کی تلقین بھی کی،آپ کو بتادوں کہ الحمدللہ جامعہ مدنیہ سبل پور،پٹنہ میںآف لائن داخلہ جاری ہے،طلبہ کی آمدشروع ہوچکی ہے،آج کی دعائیہ مجلس میں شریک ہونے والوں میں ،مولانا منہاج الدین صاحب،مفتی خالدانورپورنوی،مفتی محمداکرم،مفتی احمدعلی،مولانانورالزماں،قاری محمدصالح، مولانا سہیل اخترمظفرپوری، مولانا امیر الہدی، حافظ نجم الہدی ، قاری محمددستگیر، مولانامحمداکبر، مولانامہجود،مولاناعمرفاروق اور مہمانوں میں،مفتی ابوالعاص کے نام خصوصی طورپرقابل ذکرہے،جناب مولانا مرغوب الرحمن صاحب کی رقت آمیزدعاء پر مجلس اختتام پذیرہوئی۔

روزنامہ نوائے ملت
روزنامہ نوائے ملتhttps://www.nawaemillat.com
روزنامہ ’نوائے ملت‘ اپنے تمام قارئین کو اس بات کی دعوت دیتا ہے کہ وہ خود بھی مختلف مسائل پر اپنی رائے کا کھل کر اظہار کریں اور اس کے لیے ہر تحریر پر تبصرے کی سہولت فراہم کی گئی ہے۔ جو بھی ویب سائٹ پر لکھنے کا متمنی ہو، وہ روزنامہ ’نوائے ملت‘ کا مستقل رکن بن سکتے ہیں اور اپنی نگارشات شامل کرسکتے ہیں۔
کیا آپ اسے بھی پڑھنا پسند کریں گے!

جواب چھوڑ دیں

براہ مہربانی اپنی رائے درج کریں!
اپنا نام یہاں درج کریں

- Advertisment -spot_img
- Advertisment -
- Advertisment -

مقبول خبریں

حالیہ تبصرے