تعلق مع اللہ کی لذت ناقابل بیان ہے

83

جو مزا تعلق مع اللہ کے اس مقام پر ہے کہ ایک سانس بھی ہم ان کو ناراض نہ کریں اور ہر سانس اللہ پر فدا کر دیں تو زندگی کی اس لزت کا کیاکہوں
ساراعالم نہیں سمچھ سکتا کہ اس میں کیامزاہے جس کو زندگی فداکرنےکااس درجہ جزبہ حاصل ہو جائےکہاائےخدا ۔میریزندگی۔ کی ہر سانس آپ پر فداہواورہم ایک سانس بھی آپ کو ناراض کرنے سے آپکی پناہ چاہتےہیں بس یہ مقام اولیاے صدیقین کاہے ۔مسجدکے گوشہ میں یاروضہ مبارک پر یا بیت للة کے ملتزم پر ولی اللة بن جانا کمال نہیں ہے کمال یہ ہے کہ آپ حسینوں کے سامنے بھی ولی اللة رہیں
تب سمچھ لیں ۔شکر ہے درددل مستقل ہو گیا ۔
اب تو شاید میرادل بھی دل ہوگیا ۔ ملتزم پر تو فاسق وبدمعاش بھی رولیتا ہے اور یہ
رونا بھی اسکے لئے مبارک ہے کہ پچھلی کی تو گناہ معافی ہو گئ
لیکن اگلی کی بھی فکر کرو گڈرمیں گر گئے معافی کرلی لیکن آیندہ تونہ کرو ۔تویہ عرض کر رہا ہوں کہ جینے کامزا اور جینے کا لطف اسکو ہے ۔جس نے اللة کو خوش کر لیا جتناجو زمین پر اللة کوش رکھتا ہے ۔اتناہی اللة تعالا بھی اسکو خوش رکھتے ہیں میں نےایسےلوگوں کو بھی دیکھا ہے
کہ کباب اور بریانی اور بنک بیلینس ہے لیکن رات بھر چلارہے ہیں ۔ میں نے ایک صاحب سے پو چھا کہ یہ تو نواب صاحب کا گھر ہے کیوں چلا رہے ہیں
ہائے ہائے کی آواز کیوں آرہی ہے
انہونے فرما یا کہ انکے گردہ
میں درداٹھا ہوا ہے ۔کہاں گیا شامی کباب کی دھر گئ بریانی
کہا گئے نوٹوں کی گڈیاں اور دولت ۔اس لئےکہتا ہوں کہ کم سے کم سے اللة تعالا کو خوش رکھیئے ۔

مولانا عبدرزاق مظاہری