ہومبریکنگ نیوزارریا نیوزبیرنگر بسریا میں لاکھوں مسلمانوں کے اجتماع سے حضرت مدنی کا دردانگیز...

بیرنگر بسریا میں لاکھوں مسلمانوں کے اجتماع سے حضرت مدنی کا دردانگیز روحانی خطاب رپورٹ:محمد اطہر القاسمی

بیرنگر بسریا میں لاکھوں مسلمانوں کے اجتماع سے حضرت مدنی کا دردانگیز روحانی خطاب

رپورٹ:محمد اطہر القاسمی
جنرل سکریٹری جمعیت علماء ارریہ

ارریہ:4 دسمبر 2022 کی تاریخ سرزمین ارریہ و سیمانچل کے لئے تاریخ کا حصہ بن گئی۔
قائد جمعیت جانشین فدائے ملت میرکارواں حضرت مولانا سید محمود اسعد مدنی دامت برکاتہم صدر جمعیت علماء ہند اپنے وقت مقررہ پر کل گذشتہ 4 بجے شام کو کشن گنج کے اجلاس سے فارغ ہو کر جب یہاں ارریہ کے حدود میں داخل ہوئے تو کارکنان جمعیت علماء ارریہ اپنے محبوب قائد کے لئے سراپا استقبال بن گئے۔جوکی ہاٹ سے لےکر بیرنگر بسریا تک اپنے طے شدہ نظام العمل کے مطابق دس(10) مقامات پر کارکنان جمعیت اپنے ہاتھوں میں جمعیت کے جھنڈے لےکر استقبال کرتے ہوئے سینکڑوں گاڑیوں کے قافلے کے ساتھ جلسہ گاہ تک پہنچے۔
مغرب کی نماز مدرسہ تنظیم المسلمین رجوکھر بازار

بیرنگر بسریا میں لاکھوں مسلمانوں کے اجتماع سے حضرت مدنی کا دردانگیز روحانی خطاب رپورٹ:محمد اطہر القاسمی

 میں ادا کی گئی جہاں ادارہ کے ناظم اعلیٰ رفیق گرامی مفتی انعام الباری قاسمی کی خوبصورت استقبالیہ تقریب میں حضرت والا نے شرکت کی اور اپنی بشاشت سے دعاء کی اھمیت و ضرورت اور والدین کے حقوق پر نوجوانوں سے انتہائی جامع خطاب بھی فرمایا،پھر ضلع کے سرکردہ علماء کے ذریعے ان کی خدمت میں سپاس نامہ و گلدشتہ پیش کیا گیا اور شال پوشی بھی کی گئی۔اس تقریب میں بطورِ خاص مفتی عبد الوارث قاسمی جنرل سکریٹری جمعیت علماء ارریہ،مفتی رضوان عالم قاسمی استاذ مدرسہ رحمانیہ سوپول دربھنگہ،سماجی کارکن الحاج غلام سرور و نمائندہ روزنامہ دینک جاگرن جناب قمر معصوم،جناب مرشد عالم اور روزنامہ انقلاب ماسٹر عبد الغنی لبیب وغیرہ کے اسماء گرامی قابل ذکر ہیں۔
سینکڑوں گاڑیوں کے قافلہ کے ساتھ حضرت قائد محترم جب بیرنگر بسریا کی سرزمین میں داخل ہوئے تو علاقے کے نوجوان عقیدت ومحبت میں جذباتی بن گئے،سڑکوں کے کنارے مسلمان مردوں کے ساتھ ان کے چھوٹے چھوٹے بچے بھی اپنے اپنے دروازے پر کھڑے ہو کر استقبال کرتے رہے،حتی کہ غیرمسلم محلے کے برادران وطن کی مائیں اور بہنیں بھی اپنے گھروں کے دروازے پر کھڑی رہیں۔قافلہ کے آگے یہ مسلم نوجوان مسلسل جمعیت علماء ہند زندہ باد،قائد جمعیت زندہ باد کے نعرے لگاتے ہوئے مدرسہ امداد الغرباء کے صحن میں جمع ہوگئے۔پھر ہر کسی کی خواہش تھی کہ وہ دیر تک اپنے محبوب قائد کی زیارت کرتا رہے۔
الحاصل مجمع اتنا بڑھ گیا کہ کچھ دیر کے لئے افراتفری کا ماحول ہوگیا۔
صدر جمعیت علماء بہار مفتی جاوید اقبال صاحب قاسمی اور ناظم اعلیٰ جمعیت علماء بہار مولانا محمد ناظم صاحب قاسمی کے ساتھ تمام صوبائی و ضلعی مہمانانِ خصوصی نے حضرت والا کے ساتھ نماز عشاء ادا کی،عشائیہ کے بعد جامع مسجد چھرہ پٹی اور الحاج محمد اسعد صدر جمعیت علماء بھرگاما کے مکانپر سینکڑوں مسلمانوں نے بیعت کیا۔

بیرنگر بسریا میں لاکھوں مسلمانوں کے اجتماع سے حضرت مدنی کا دردانگیز روحانی خطاب رپورٹ:محمد اطہر القاسمی بیرنگر بسریا میں لاکھوں مسلمانوں کے اجتماع سے حضرت مدنی کا دردانگیز روحانی خطاب رپورٹ:محمد اطہر القاسمی

9 نو بجے حضرت والا اسٹیج پر تشریف لے آئے اور تاحد نگاہ مسلمانوں کے ٹھاٹھیں مارتے سمندر جیسے مجمع عام سے آدھے گھنٹہ کا جامع و پرمغز خطاب فرمایا۔
آپ نے امت مسلمہ سے فرمایا کہ جس طرح جسم کے بیمار ہوجانے پر علاج کے لئے جسمانی ڈاکٹر کے پاس جانا پڑتا ہے اسی طرح روح کے بیمار ہوجانے پر روحانی معالج کے پاس جانا چاہئے۔جسمانی بیماری سے انسان زیادہ سے زیادہ مر سکتاہے لیکن روحانی بیماریوں سے خطرہ یہ ہے کہ کہیں مرتے وقت کلمہ طیبہ نصیب نہ ہو۔انہوں نے افسوس کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ لیکن ہمارا مسئلہ یہ ہے کہ ہمیں نہ تو اس کی معلومات ہے اور نہ ہی ضرورت۔مہمان محترم نے بطورِ خاص تکبر اور حسد و جلن پر سخت نکیر کرتے ہوئے کہا کہ آج جو شخص جتنا بڑا ہے اس کے پیچھے اتنا بڑا شیطان لگاہوا ہے۔
حضرت مدنی نے مسلمانوں کو جھنجھوڑتے ہوئے فرمایا کہ سب کو معلوم ہے کہ ھمیں مرنا ہے،اس جیون کو چھوڑکر وہاں جانا ہے جہاں سے کبھی لوٹ کر نہیں آنا ہے۔لیکن ہمیں اس کی کوئی فکر نہیں۔
انہوں نے کہا کہ آج آدمی جسم پر تو محنت کررہا ہے آدمیت پر محنت نہیں کررہا۔آدمی کے دلوں پر شیطانوں نے قبضہ کرلیا ہے تو اس دل میں اللہ کہاں رہے گا؟اس کے لئے انہوں نے فرمایا کہ اپنے دلوں کی صفائی کرنی پڑے گی تاکہ اس میں اللہ کے لئے جگہ ہو۔آپ نے کہاکہ جس کے دل میں آپ سے حسد و جلن ہو آپ اس کے لئے دعائیں کریں،یہ ان کے لئے آپ کی خیرخواہی ہوگی۔خطاب کے بعد اسٹیج پر موجود ضلع کے DPO نے حضرت والا سے گفت و شنید بھی کی جسے آپ نے بڑی سنجیدگی سے سنا۔
خطاب کے بعد مدرسہ امداد الغرباء کے حفاظ کرام کے سروں پر اپنے دست مبارک سے دستار باندھی،ناظم اجلاس مولانا انوار الحق ندوی نے مولانا محمد کامل قاسمی سکریٹری جمعیت علماء بھرگاما و امام عیدین کو دعوت دی اور انہوں نے حضرت والا کی خدمت میں سپاس نامہ پیش کیا،اور اجلاس کے روح رواں مولانا محمد افضل شمسی پرنسپل مدرسہ امدا الغرباء بیرنگر بسریا و ماسٹر محمد قیصر سکریٹری مدرسہ ہٰذا نے اپنے مہمان محترم کا شکریہ ادا کیا،پھر حضرت والا اپنے رفقاء کے ہمراہ جلسہ گاہ سے ہی شہر ارریہ کے لئے نکل پڑے۔
حضرت والا کے خطاب کے بعد شری گوسوامی سوشیل مہاراج جی راشٹریہ ادھیکچھ بھارتیہ دھرم سنسد نئی دہلی اور دیگر علماء کرام کا خطاب ہوا اور تقریباً بارہ بجے شب اجلاس اختتام پذیر ہوگیا۔
حضرت مدنی اپنے خطاب کے بعد رات مدنی کالونی زیرومائل میں خازن جمعیت علماء ارریہ ماسٹر محمد شاکر کے گھر قیام فرمایا جہاں صوبائی صدر و سکریٹری کے علاوہ مولانا نوشاد عادل قاسمی آرگنائزر جمعیت علماء ہند،مفتی محمد مناظر نعمانی قاسمی سکریٹری جمعیت علماء کشن گنج،مولانا آصف جمیل قاسمی سکریٹری جمعیت علماء بہار،مولانا اظہار عالم قاسمی جنرل سکریٹری جمعیت علماء پٹنہ،مولانا سیف الاسلام قاسمی سوپول کے علاوہ جمعیت علماء مدھےپورہ کے ذمےداران اور ضلعی جمعیت کے سرپرست الحاج بذل الرحمٰن،صدر ڈاکٹر عابد حسین،مولانا محمد آصف قاسمی آرگنائزر جمعیت علماء ارریہ،بابو ابصار عالم اور بندہ عاجز محمد اطہر القاسمی بھی موجود تھے پھر علی الصباح فجر کی نماز کے معا بعد چائے پی کر کشن گنج ہوتے ہوئے باگ ڈوگرا کے لئے روانہ ہوگئے۔
خدا کرے کہ حضرت والا دامت برکاتہم کے ذریعے اس سرزمین پر جو ایمانی و انسانی پیغام دیا گیا ہم سب اس پر عمل پیرا ہوں اور حضرت قائد محترم کو رب کریم صحت و سلامتی کے ساتھ عمر خضر عطافرمائے کہ وہ بار بار ہمارے دیار تشریف لاتے رہیں۔
اس موقع پر ہم جمعیت علماء ارریہ کے خادم ہونے کی حیثیت سے اس اجلاس کے تمام منتظمین بیرنگر بسریا کے لئے نیک خواہشات پیش کرتے ہیں اور ساتھی ہی جمعیت علماء ارریہ کے تمام معزز اراکین و محبین کے ساتھ بلاک سطحی صدور و سکریٹری اور محبین جمعیت کی جانب سے اجلاس کو کامیاب بنانے اور خوب سے خوب تر کرنے کے لئے ان کی بےپناہ محبتوں اور کوششوں کو سلام پیش کرتے ہیں۔
بطورِ خاص ہمارے ہردالعزیز رفیق گرامی مولانا مشتاق احمد صدیقی صاحب نمائندہ مختلف اُردو اخبارات،جناب فیروز عالم کٹیہار اور عزیز گرامی بابو مفسر عالم اجھوا جوکی ہاٹ جامعہ میڈیا کے بھی مشکور ہیں جنہوں نے اجلاس کی رپوٹنگ کے لئے اتنے طویل سفر کو گوارہ کیا۔
جزاکم اللہ خیرا الجزاء

توحید عالم فیضی
توحید عالم فیضیhttps://www.nawaemillat.com
روزنامہ ’نوائے ملت‘ اپنے تمام قارئین کو اس بات کی دعوت دیتا ہے کہ وہ خود بھی مختلف مسائل پر اپنی رائے کا کھل کر اظہار کریں اور اس کے لیے ہر تحریر پر تبصرے کی سہولت فراہم کی گئی ہے۔ جو بھی ویب سائٹ پر لکھنے کا متمنی ہو، وہ روزنامہ ’نوائے ملت‘ کا مستقل رکن بن سکتے ہیں اور اپنی نگارشات شامل کرسکتے ہیں۔
کیا آپ اسے بھی پڑھنا پسند کریں گے!

جواب چھوڑ دیں

براہ مہربانی اپنی رائے درج کریں!
اپنا نام یہاں درج کریں

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.

- Advertisment -
- Advertisment -
- Advertisment -

مقبول خبریں

حالیہ تبصرے