ایشوز کی “ایشوریتا”

40

ہماری وزیر فینانس شریمتی نرملا سیتا رمن بڑی اچھی لیکن عجیب باتیں کرتی ہیں.. کبھی کبھی تو اپنے سپریمو مسٹر مودی سے بھی زیادہ عجیب.. ہاں ان کے تعلیم یافتہ اور کافی تعلیم یافتہ ہونے میں کوئی شک نہیں.. آپ مسٹر مودی یا شریمتی سمرتی ایرانی جی کی طرح ان سے ڈگری نہیں پوچھ سکتے، اور اگر آپ پوچھ ہی بیٹھے تو وہ شریمتی ایرانی کی طرح آنکھیں نکال نکال کر ماں درگا کا کرودھت روپ نہیں دھاریں گی. بلکہ اپنی ڈگری نہایت متانت سے آپ کے سامنے رکھ دیں گی، کیوں کہ ڈگری ان کے پاس ہے اور اوریجنل ہے. عجیب باتیں کرنے کا مطلب یہ نہیں کہ میں انھیں پسند نہیں کرتا.. میں تو ان کا مداح اس وقت سے ہوں جب وہ اپوزیشن میں رہ کر بڑے بڑے گھاگھ دگجوں کو ہلکا کردیتی تھیں.. بی جے پی کے ترجمان کی حیثیت سے ڈیبیٹس میں سامنے والے کی بات پوری توجہ اور یکسوئی سے سنتیں، پیچ وتاب کھاتیں، پہلو بدلتیں لیکن اپنی باری پر نہایت جارحانہ، پراعتماد، مدلل اور ترتیت وار جواب دیا کرتی تھیں.. بہترین انگریزی کے ساتھ ساتھ اچھی ہندی بھی بول لیتی ہیں… ساری خوبیوں کے ساتھ باتیں اٹپٹی سی کرجاتی ہیں.. وجہ نہیں معلوم.. شاید اس لئے بھی وہ اپنے مائنڈ سیٹ کے بالکل برعکس ماحول میں تعلیم حاصل کرتی رہیں اور مزاج ایک متضاد اور مخالف ماحول کی وجہ سے احتجاجی اور ری ایکشنری ہوگیا ہے.. وہ آر ایس ایس کی ذہنیت رکھتی ہیں اور ماسٹر ڈگری مارکسی ماحول کی دانش گاہ جے این یو سے لی ہے..
ان کی دو عجیب باتیں واقعی عجیب تھیں،، پارلیمنٹ میں پیاز کی بڑھی چڑھی قیمت کے بارے میں کہا گیا تو انھوں نے کہا : کہ مجھے نہیں پتہ کیوں کہ میں پیاز نہیں کھاتی… پرسوں جی اس ٹی کے جائزہ اجلاس میں کووڈ کی وجہ سے معاشی ابتری کو “کار پروردگار” کہہ کر اپنی ذمہ داریوں سے فرار کی کوشش کی.. ان کی دونوں باتیں، اپنی جگہ واقعہ ہوسکتی ہیں.. لیکن ان کی حیثیت اور منصب سے ہم آہنگ نہیں.. ایک وزیر فینانس کو ڈاٹا پر مبنی گفتگو کرنی چاہیے.. اور مرحلہ وار متحرک عوامل کو پیش کرنا چاہئے.. ساتھ ساتھ صورت حال کے تدارک کا مکمل منصوبہ، اور تجاویز کی فعالیت پر بات کرنا چاہئے..
کار سرکار بھگوان بھروسے نہیں ہوتا..
سیتا رمن جی! برننگ ایشوز کو” ایشوریتا” کی چادر اوڑھا دینے سے آپ کا منصبی فریضہ ادا نہیں ہوجاتا.. اس طرح تو سنسار میں گھٹنے والی ہر گھٹنا “ایشوریتا” کی چادر اوڑھ لے گی.. کیا راون کے ہاتھوں سیتا میا کا اپہرن بھی ایشور کی “ایشوریتا” تھی..